ریاست میں جعلی بی پی ایل کارڈوالے امیروں کو حکومت کی طرف سے ایک اور موقع : اب تک 51037بی پی ایل کارڈ رد

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 6th November 2019, 7:23 PM | ساحلی خبریں | ریاستی خبریں |

بنگلورو:06؍نومبر(ایس اؤ نیوز)جعلی دستاویزات دے کر بی پی ایل اور انتوئیدیا  کارڈ حاصل کرنےو الوں امیروں کو اپنی غلطی سدھارنے کے لئے محکمہ تغذیہ اور شہری سپلائی نے اور ایک موقع فراہم کرنےکا فیصلہ لیا ہے۔

مرکزی حکومت کے ایل پی جی سبسڈی گئیو اِٹ ایپ کی مانند رضاکارانہ طورپر راشن کارڈ لوٹانے کا موقع دینے پر محکمہ غور کررہا ہے۔ متعلقہ کام انجام دینے کے لئے محکمہ کی جانب سے ایک موبائیل ایپ یا ویب سائٹ پر علاحیدہ ایک لنک تشکیل دینے کی تیاریاں کی جارہی ہیں۔

51037بی پی ایل کارڈ واپس:راشن کارڈ سے آدھارکارڈ لنک کرنے کے بعد ریاست بھر میں 50لاکھ سے زائد جعلی راشن کارڈکا پتہ چلاہے۔ اس کے بعد 6ماہ پہلے قومی غذائی تحفظ قانون (این ایف ایس اے ) اور عدالت عظمیٰ کے حکم پر عمل کرتےہوئے راشن کارڈ سے آدھا رکارڈ لنک کرنے (ای۔کے وائی سی ) کا اصول نافذ کیاگیا ۔ جس میں ابھی تک 40فی صد کارڈ کی تصدیق ہوگئی ہے۔ جعلی دستاویزات دے کر کارڈ حاصل کرنےو الوں سے کہاگیا ہے کہ وہ اپنے متعلقہ تعلقہ جات کے تعلقہ دفتر پہنچ کر اپنا کارڈ واپس کریں، اگر انہوں نے نہیں لوٹایا تو خود حکومت اس کا پتہ لگائے گی۔ راشن لینے والے دن سے ابھی تک کتنے کلو گرام چاول حاصل کئے ہیں اس کا حساب لگا کر فی کلو گرام 35روپئے کے مطابق جرمانہ وصول کرکے کریمنل مقدمہ درج کیا جانے کے متعلق محکمہ تغذیہ کے کمشنر شائمہ اقبال نے اگست میں سرکلر جاری کیا تھا۔ حکم نامے سے خوف کھا کر ابھی تک 51037لوگوں نے اپنے کارڈ واپس کئے جانے کے متعلق محکمہ نے جانکاری دی ہے۔

بی پی ایل کیسے لوٹائیں ؟:بی پی ایل راشن کارڈ واپس دینے کےلئے محکمہ تغذیہ نے دو حق انتخاب (آپشن) دئیے ہیں۔ محکمہ کے ویب سائٹ میں ایک الگ سے لنک کی تشکیل کرنا پہلا انتخاب ہے۔ جس کے تحت بی پی ایل کارڈوالے اپنے آدھارکارڈ نمبر درج کرتےہوئے لاگن ہونا ہے۔ کارڈ واپس کرنے  کواپنی رضامندی ظاہر کرنے کے لئے اپنا موبائیل نمبر درج کرکے منظوری حاصل کرنی ہوگی۔ اس کے بعد ان کے درج کردہ موبائیل نمبر پر او ٹی پی نمبر کا مسیج آئے گا۔ اس کو درج کرتے ہوئے قبولیت کی سند لینی ہے۔ خود کارڈ والا ہی لاگن ہوا ہے یا کوئی جعلی فرد ہے اس کی جانکاری کےلئے آدھار کارڈ نمبر درج کرنا ہوگا۔ اسی طرح موبائیل میں مرکزی حکومت کے ایل پی جی والے  گئیو اٹ ایپ میں ہی سہولت مہیا کئے جانے کے متعلق غور کیاجارہاہے۔ جس کے لئے الگ سے ایک موبائیل ایپ تشکیل دینا ہے۔ اس کے بعد گوگل پلے اسٹور سے ایپ ڈاؤن لوڈ کرکے اس میں آدھار کارڈ نمبر درج کرتے ہوئے اپنا بی پی ایل کارڈ لوٹا سکتے ہیں۔ این آئی سی سے گفتگو کرنے کے بعد ان دوانتخابات میں سے ایک نمونے کو جاری کئے جانےکے متعلق محکمہ کی طرف سے جانکاری دی گئی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

اُڈپی میں کوویڈ کے بڑھتے معاملات پر بھٹکل کے عوام میں تشویش؛ پڑوسی علاقہ سے بھٹکل داخل ہونے والوں پر سخت نگرانی رکھنے ضلعی انتظامیہ سے مطالبہ

بھٹکل کورونا فری ہونے کے بعد اب پڑوسی ضلع اُڈپی میں روزانہ پچاس اور سو کورونا معاملات کے ساتھ  پوری ریاست میں اُڈپی میں سب سے  زیادہ کورونا کے معاملات سامنے آنے پر بھٹکل میں بھی تشویش کی لہر دوڑ گئی ہے۔ عوام اس بات کو لے کر پریشان ہیں کہ اُڈپی سے کوئی بھی شخص آسانی کے ساتھ ...

نیسرگا‘طوفان کے دوران طوفانی ہوا اور بارش سے ہیسکام کو کاروار میں ایک ہی دن 8لاکھ اور بھٹکل میں 1 لاکھ سے زائد کا نقصان

مہاراشٹرامیں تباہی مچانے والا ’نیسرگا‘ طوفان ویسے تو کرناٹکا کے ساحلی علاقے کو چھوتا ہوانکل گیا، مگر جاتے جاتے بھٹکل سمیت  کاروار شہر اوراطراف میں اپنے اثرات ضرور چھوڑ گیا۔

مینگلور: آئندہ صرف کورونا سے متاثر افراد کے گھروں کو ’سیل ڈاؤن‘ کیا جائے گا۔ علاقے کو’کٹینمنٹ زون‘ نہیں بنایا جائے گا؛ میڈیکل ایجوکیشن منسٹر کا بیان

سرکاری سطح پرکووِڈ 19کی وباء پر قابو پانے کے لئے ابتدا میں جوسخت اقدامات کیے جارہے تھے، اب بدلتے ہوئے حالات کے ساتھ ان میں نرمی لانے کا کام مسلسل ہورہا ہے۔

کرناٹکا میں آج پھر 257 کی رپورٹ کورونا پوزیٹو؛ اُڈپی میں پھر ایک بار سب سے زیادہ 92 معاملات؛ تقریباً سبھی لوگ مہاراشٹرا سے لوٹے تھے

سرکاری ہیلتھ بلٹین میں پھر ایک بار  کرناٹک میں آج 257 لوگوں میں کورونا  کی تصدیق ہوئی ہے جس میں سب سے زیادہ معاملات پھر ایک بار ساحلی کرناٹک کے ضلع اُڈپی سے سامنے آئے ہیں۔ بلٹین کے مطابق آج  اُڈپی سے 92 معاملات سامنے آئے ہیں اور یہ تمام لوگ مہاراشٹرا سے لوٹ کر اُڈپی پہنچے تھے۔

کرناٹکا میں آج پھر 257 کی رپورٹ کورونا پوزیٹو؛ اُڈپی میں پھر ایک بار سب سے زیادہ 92 معاملات؛ تقریباً سبھی لوگ مہاراشٹرا سے لوٹے تھے

سرکاری ہیلتھ بلٹین میں پھر ایک بار  کرناٹک میں آج 257 لوگوں میں کورونا  کی تصدیق ہوئی ہے جس میں سب سے زیادہ معاملات پھر ایک بار ساحلی کرناٹک کے ضلع اُڈپی سے سامنے آئے ہیں۔ بلٹین کے مطابق آج  اُڈپی سے 92 معاملات سامنے آئے ہیں اور یہ تمام لوگ مہاراشٹرا سے لوٹ کر اُڈپی پہنچے تھے۔

یڈیورپا کا اعلیٰ عہدیداروں کے ساتھ جائزہ اجلاس؛ بعض سرکاری دفاتر کو اندرون ایک ماہ بیلگاوی کے سورونا ودھان سودھا منتقل کرنے وزیر اعلیٰ کی ہدایت

وزیر اعلیٰ بی ایس یڈی یورپا نے حکام کو اندرون ماہ ریاست کے بعض سرکاری دفاتر کی نشاندہی اور ان کی بیلگاوی کے سورونا و دھان سودھا منتقلی کی ہدایت دی جس کا مقصد علاقائی توازن قائم کرنا ہے۔

اُڈپی میں کورونا وائرس کے معاملات کو لے کر ریاستی وزیر اور محکمہ صحت کے اعداد و شمار میں نمایاں فرق؛ کہیں رپورٹ کو چھپایا تو نہیں جارہا ہے ؟

اُڈپی ضلع میں کورونا وائرس کے معاملات کی تعداد کو لے کر ریاستی وزیر برائے محصولات آر اشوک اور محکمہ صحت کی جانب سے جاری اطلاع میں فرق کی وجہ سے اُڈپی ضلع کے عوام تذبذب کا شکار ہوگئے ہیں۔

کوویڈ۔ 19 : کمس اسپتال ہبلی میں ریاست کا پہلا پلازمہ تھیراپی تجربہ کامیاب ؛ بنگلور میں تجربہ ناکام ہونے کے بعد ہبلی ڈاکٹروں کو ملی زبردست کامیابی

ورونا وائرس وبا کی وجہ سے اس وقت پوری دنیا جوجھ رہی ہے۔ اس کے معاملات میں دن بہ دن اضافہ ہی ہوتا جا رہا ہے۔ ہر کوئی چاہتے  یا  نا چاہتے ہوئے بھی اس خطرے کے ساتھ زندگی بسر کرنے پر مجبور ہے۔ کیونکہ پوری دنیا بھر کے ممالک بھی اس کا ٹیکہ دریافت کرنے سے اب تک قاصر رہے ہیں۔