ریاستی بی جے پی حکومت بدعنوانیوں میں ڈوبی ہوئی ہے:سدارامیا

Source: S.O. News Service | Published on 22nd August 2022, 11:02 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو، 22؍اگست(ایس او نیوز)ریاستی حکومت بدعنوانیوں میں ڈوبی ہوئی ہے،لوٹ مار کرنے کیلئے اقتدار پر آئی ہے۔یہ بات سابق وزیر اعلیٰ واپوزیشن لیڈر سدارامیانے کہی۔

انہوں نے یہاں رکن اسمبلی ٹی ڈی راجے گوڈا کی رہائش گاہ پر گزشتہ روز اخباری نمائندوں سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ 40فیصد کمیشن حاصل کرنے والی حکومت آج تک ریاست کی تاریخ میں نہیں دیکھی گئی تھی،کمیشن طلب کرنے کا الزام خود ٹھیکہ داروں کی انجمن کے صدر کیمپنا نے لگایاہے،یہ کسی اپوزیشن لیڈر کی طرف سے نہیں لگایاگیاہے، بہت ہی گھٹیا،بدعنوان اور فرقہ پرست حکومت ریاست میں قائم ہے،ریاست میں دلتوں، اقلیتوں،مزدوروں کو سکو ن کی زندگی گزارنے کا موقع نہیں دیاجارہاہے۔ہر طرف کوئی نہ کوئی تنازعہ کھڑاکر کے دہشت وخوف کا ماحول قائم کیاجارہاہے۔ وزیراعلیٰ کی طرف سے بھی امتیاز برتاجارہاہے،دکشن کنڑا میں قتل ہوئے ہندو کے اہل خانہ سے ملاقات کر کے اسے معاوضہ دیاگیاہے،جبکہ مسلمان کو کوئی امداد فراہم نہیں کی گئی ہے، ہندو نوجوان پراوین کو دی گئی رقم وزیراعلیٰ کے گھر کی نہیں ہے،حکومت کی طرف سے دی گئی ہے۔سیلاب متاثرین کو بھی تاحال معاوضہ نہیں دیاگیاہے،سیلاب سے ہوئی تباہی کا جائزہ لینے اور معاوضہ دلانے کیلئے اسمبلی اجلاس میں مطالبہ کرنے کیلئے یہ دورہ کیاجارہاہے اور تفصیل اکٹھاکی جارہی ہے۔

سدارامیانے کہاکہ اس مرتبہ ریاست کے 18 اضلاع میں حسب معمول ہونے والی بارش سے زیادہ بارش ہوئی ہے اور اس مرتبہ 5.23لاکھ ایکڑ علاقے میں فصلوں کی تباہی ہوئی ہے،ملناڈ علاقے میں کافی اور سپاری کی فصل کو نقصان ہواہے، اس سے قبل ریاست میں سپاری کے کاشتکاروں کو فی ایکڑ 12ہزار روپئے کا معاوضہ دیاگیاتھا۔مگر افسوس کہ موجودہ حکومت نے اب تک کوئی معاوضہ نہیں دیاہے، جبکہ وزیراعلیٰ خود اعلان کررہے ہیں کہ کاشتکاروں کیلئے معاوضے کی رقم جاری کر دی گئی ہے۔کورگ میں فصلوں کی تباہی سے نقصان اٹھارہے کسانوں میں معاوضے کے چیکس تقسیم کئے گئے ہیں،مگر اب تک وہ کیش نہیں ہوسکے ہیں۔ہر جگہ تعمیر ی کام گھٹیاکئے گئے ہیں،کورگ کے ڈپٹی کمشنر کے دفتر کے قریب 7.5کروڑ روپئے کی لاگت سے دیوار تعمیر کی گئی ہے،جو گرنے کے قریب ہے، میرے یہاں آنے کی خبر سن کر آر ایس ایس کارکنوں کو تیار کرکے ان کے خلاف نعرے لگانے کا موقع فراہم کیاگیاہے۔ کانگریس پارٹی کی مقبولیت سے بی جے پی لیڈرپریشان ہیں،پچھلے 15تا20سالوں سے کورگ ضلع میں بی جے پی کا راج ہے،اس مرتبہ دونوں حلقوں میں کانگریس پارٹی کے امیدواروں کی جیت یقینی ہے۔مٹھی بھر لوگوں کو جمع کرکے کالی پٹیاں باندھ کراحتجاج کرانے سے کوئی نہیں ڈرے گااور کانگریس کی مقبولیت پر کوئی اثر نہیں پڑے گا۔ کسانوں کا حال دریافت کرنے یہاں آنے پر ”گوبیک سدارامیا“کے نعرے لگائے گئے،کیا ریاست آر ایس ایس اور بی جے پی والوں کی جائیداد ہے؟اگریہ رویہ بی جے پی والوں کا ہے تو آئندہ دنوں کانگریس کارکن بھی گو بیک بسوراج بومئی کے نعرے ضرور لگائیں گے۔

سدارامیانے کہاکہ وہ اس ریاست کے اپوزیشن لیڈرہیں اور سابق وزیراعلیٰ بھی،انہیں سکیورٹی فراہم کرناحکومت کی ذمہ داری ہے،مگر ریاست میں نظم وضبط کا کوئی نظام باقی نہیں ہے،ریاست میں حکومت اور انتظامیہ نہ کے برابرہے،حکومت نہیں چل رہی ہے کوئی شخص اپنی انگلیوں کے اشاروں پرحکومت چلارہاہے۔کورگ میں جاری احتجاج پر قابوپانا پولیس سے ممکن نہیں ہورہاہے۔

ایک نظر اس پر بھی

منگلورو:کانگریس لیڈر رماناتھ رائے نے کہا؛ سی ٹی روی کے بیان نے بی جےپی کو ننگا کردیا ہے

بی جے پی میں راؤڈی شیٹر وں کی شمولیت کی حمایت میں سی ٹی روی نے جو بیان دیا ہے، اُس بیان نے بی جے پی کو ننگاکردیا ہے۔ ان خیالات کا اظہار  سابق وزیر  اور کے پی سی سی کے نائب صدر بی ، رماناتھ رائی  نے کیا۔

مہاراشٹر-کرناٹک سرحد تنازعہ میں شدت، بیلگاوی میں مہاراشٹر کے ٹرکوں پر پتھراؤ، حالات کشیدہ

کرناٹک اور مہاراشٹر کے درمیان جاری سرحد تنازعہ نے بیلگاوی علاقہ میں حالات کو کشیدہ کر دیا ہے۔ سرحدی علاقہ بیلگاوی میں تشدد کے واقعات پیش آ رہے ہیں اور منگل کے روز تو بیلگاوی کے باگیواڑی میں شدید احتجاجی مظاہرہ دیکھنے کو ملا۔ اس دوران کرناٹک رکشن ویدیکے سے جڑے کارکنان نے ...

’مہاراشٹر کے وزراء نے بیلگاوی میں قدم رکھا تو ہوگی قانونی کارروائی‘، کرناٹک کے وزیر اعلیٰ بسوراج بومئی نے کیا متنبہ

مہاراشٹر اور کرناٹک کے درمیان سرحدی تنازعہ کو لے کر بیان بازی لگاتار بڑھتی جا رہی ہے۔ تازہ بیان کرناٹک کے وزیر اعلیٰ بسوراج بومئی کا سامنے آیا ہے جس میں انھوں نے مہاراشٹر حکومت کو متنبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگر ان کے وزراء نے کرناٹک کے بیلگاوی میں قدم رکھنے کی کوشش کی تو ان کے ...

منڈیا : مالا دھاری بھکتوں نے لگائے سری رنگا پٹن جامع مسجد کو ہنومان مندر بنانے کے نعرے - مسجد میں گھسنے کی کوشش پولیس نے کر دی ناکام  

زعفرانی جھنڈے اٹھائے ہوئے ہزاروں  مالا دھاری ہنومان بھکتوں کا جلوس 'سیکیرتھنا یاترا' کی شکل میں ہنومان مندر کی طرف جاتے ہوئے جب تاریخی سری رنگا پٹن جامع مسجد کے سامنے پہنچا تو نوجوان بھکتوں نے اچانک اشتعال انگیزی شروع کر دی اور جامع مسجد کو ہنومان مندر میں بدلنے کے نعرے لگانے ...

مرکزی حکومت کی طرف سے دلت، پسماندہ اور اقلیتی طلباء کا اسکالرشپ ختم کیا جانا انہیں تعلیمی حقوق سے بتدریج محروم کرنے کی حکمت عملی ہے: ایس ڈ ی پی آئی

سوشیل ڈیموکریٹک پارٹی آف انڈیا کرناٹک کے ریاستی صدر عبدالمجید نے اپنے جاری کردہ اخباری بیان میں کہا ہے کہ مرکزی حکومت کی طرف سے تعلیمی سال 23۔2022سے ایس سی، ایس ٹی، پسماندہ طبقات، اور اقلیتی برادریوں سے تعلق رکھنے والے پہلی سے آٹھویں جماعت کے تمام طلباء کو کوئی اسکالرشپ ختم ...