سری لنکا میں عوام کی حالت انتہائی خستہ، ہری مرچ 700 روپے اور آلو 200 روپے کلو

Source: S.O. News Service | Published on 11th January 2022, 11:04 PM | عالمی خبریں |

کولمبو،11؍جنوری (ایس او نیوز؍ایجنسی) سری لنکا میں عوام مہنگائی سے بری طرح پریشان ہیں۔ سری لنکا معاشی طور پر بحران کا سامنا کر رہا ہے اور اس درمیان وہاں سبزیوں اور دوسرے سامانوں کی قیمتوں میں لگاتار اضافہ ہو رہا ہے۔ سری لنکا کے ایڈووکاٹا انسٹی ٹیوٹ نے مہنگائی کو لے کر ایک اعداد و شمار جاری کی ہے جس میں بتایا گیا ہے کہ خوردنی اشیاء کی قیمتوں میں ایک مہینے کے اندر 15 فیصد کا اضافہ ہوا ہے۔ اس اضافے کی سب سے بڑی وجہ سبزیوں کی قیمت میں بے تحاشہ اضافہ بتائی جا رہی ہے۔

ایڈووکاٹا انسٹی ٹیوٹ کا ’باتھ کری انڈیکیٹر‘ (بی سی آئی) سری لنکا میں خوردہ اشیاء کی مہنگائی کو لے کر اعداد و شمار جاری کرتا ہے۔ بی سی آئی نے بتایا ہے کہ نومبر 2021 سے دسمبر 2021 کے درمیان خوردنی اشیاء کی قیمتوں کی مہنگائی 15 فیصد بڑھی ہے۔ اس کی سب سے بڑی وجہ سبزیوں کی قیمتوں میں اضافہ ہے۔ سری لنکا میں 100 گرام ہری مرچ کی قیمت جہاں 18 روپے تھی، وہیں اب یہ بڑھ کر 71 روپے ہو گئی ہے۔ یعنی ایک کلو ہری مرچ کی قیمت 710 روپے ہو گئی ہے۔ ایک ہی مہینے میں مرچ کی قیمت میں 287 فیصد کا اضافہ ہوا ہے۔ اسی طرح بینگن کی قیمت میں 51 فیصد، لال پیاز کی قیمت میں 40 فیصد اور بینس و ٹماٹر کی قیمتوں میں 10 فیصد کا اضافہ ہوا ہے۔ لوگوں کو ایک کلو آلو کے لیے 200 روپے کی ادائیگی کرنی پڑ رہی ہے۔ سری لنکا میں درآمد نہ ہو پانے کی وجہ سے دودھ پاؤڈر کی بھی کمی ہو گئی ہے۔

مجموعی طور پر دیکھا جائے تو 2019 کے بعد سے قیمتیں تقریباً دوگنی ہو گئی ہیں اور دسمبر 2020 کے مقابلے میں قیمتوں میں 37 فیصد کا اضافہ ہوا ہے۔ اس کا مطلب یہ ہے کہ چار لوگوں کی اوسط فیملی، جنھوں نے دسمبر 2020 میں خوردنی اشیاء پر ہفتہ میں 1165 روپے خرچ کیے تھے، انھیں اب اتنے ہی سامان کے لیے 1593 روپے کی ادائیگی کرنی پڑ رہی ہے۔

بڑھتی مہنگائی کے سبب عوام بے حد پریشان ہے اور لوگوں کو بھر پیٹ کھانا تک نصیب نہیں ہو رہا ہے۔ ایک ٹیکسی ڈرائیور انورُدّا پرانگما نے برطانوی اخبار ’دی گارڈین‘ سے بتایا کہ ان کی فیملی اب تین کی جگہ دو وقت کا کھانا ہی کھا پا رہی ہے۔ انھوں نے بتایا کہ ’’میرے یے گاڑی کا قرض ادا کرنا بہت مشکل ہے۔ بجلی، پانی اور کھانے پینے کے خرچ کے بعد کچھ بچتا نہیں ہے کہ گاڑی کا قرض ادا کر سکوں۔ میری فیملی تین بار کی جگہ دو بار ہی کھانا کھا پا رہی ہے۔‘‘

خوردنی اشیاء کی بڑھتی قیمتوں کے مدنظر سری لنکائی صدر گوٹابایا راجپکشے نے ملک میں معاشی ایمرجنسی نافذ کرنے کا اعلان کر دیا ہے۔ اس کے تحت فوج کو اختیار دیا گیا ہے کہ وہ یہ یقینی کرے کہ کھانے پینے کی چیزیں عام لوگوں کو اسی قیمت پر ملے جو حکومت نے طے کیے ہیں۔ سری لنکا کی بدحالی کے کئی اسباب ہیں جن میں کووڈ وبا، بڑھتا سرکاری خرچ اور ٹیکس میں جاری تخفیف شامل ہے۔ کووڈ نے سری لنکا کے سیاحتی کاروبار کو تقریباً تباہ کر دیا ہے۔ سرکاری خزانہ خالی ہے اور سری لنکا پر غیر ملکی قرضوں کا بوجھ بھی بڑھتا جا رہا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

’تائیوان پر بڑے حملہ کی تیاری کر رہا چین‘، تائپے کے وزیر خارجہ کا دعویٰ

تائیوان کے وزیر خارجہ جوسیف وو نے منگل کے روز دعویٰ کیا کہ چین خود مختار جزیرہ پر زوردار حملہ کرنے کی تیاری میں ہے اور اسی کے لیے اس کے آس پاس بڑے پیمانے پر فوجی تربیت کر رہا ہے۔ آر ٹی کے مطابق جوسیف وو نے کہا کہ ’’چین نے تائیوان پر حملہ کی تیاری کے لیے تربیت اور اپنی فوجی پلے ...

بلوچستان میں سیلاب متاثرین کی ایک بڑی تعداد امدادکی منتظر، ہزاروں بے یارو مددگار

پاکستان کے بلوچستان صوبہ میں سیلاب متاثرین کو اب تک امداد نہیں مل سکی ہے۔ اس دوران سیلاب سے زراعت کا شعبہ سب سے زیادہ متاثر ہوا ہے۔  ہزاروں ایکڑ رقبہ پرمشتمل تیار فصلیں سیلابی ریلوں میں بہہ گئی ہیں جس سے دھنیا، ٹماٹر، کپاس  اور دیگر فصلیں بری طرح متاثر ہوئی ہیں۔ کوئٹہ کے علاقے ...

روہنگیا مسلمانوں کی میانمار واپسی، چین مدد کرے گا

بنگلہ دیش کے وزیر خارجہ اے کے عبدالمومن نے اپنے چینی ہم منصب وانگ وائی کے ساتھ اتوار کے روز ڈھاکہ میں تبادلہ خیال کیا۔ بدھ مت اکثریتی ملک میانمار میں ظلم و جبر سے بچنے کے لیے دس لاکھ سے زائد روہنگیا مسلمان وہاں سے بھاگ کر بنگلہ دیش آگئے تھے۔ ان میں سے بیشتر روہنگیا سن 2017 میں آئے ...

کیوبا میں فیول اسٹوریج میں آتشزدگی، ایک افراد ہلاک، کم از کم 122 زخمی

کیوبا کے ماتنجاس بندرگاہ میں ایک ایندھن ذخیرہ سسٹم میں زبردست آگ لگنے سے ایک شخص کی موت ہو گئی ہے اور کم از کم 122 افراد کے زخمی ہونے کی اطلاع ہے۔ یہ واقعہ آسمانی بجلی گرنے کے بعد پلانٹ میں ایک خام تیل کے ٹینک میں زبردست آگ لگنے سے پیش آیا۔ اس حادثہ کے بعد ملک پر زبردست بجلی ...

اسرائیل کا 41 فلسطینیوں کی شہادت اور جنگ بندی کے بعد زیادہ بڑے حملے کا انتباہ

اسرائیلی قابض فوج نے غزہ میں اتوار کے رات ساڑھے آٹھ بجے سے ہونے والی جنگ بندی کے بعد خبردار کیا ہے کہ اسرائیل فوج غزہ زیادہ بڑا حملہ کرنے والی ہے۔ اسرائیلی فوج نے اپنے اس امکانی بڑے حملے کو وسیع دائرے میں غزہ کے عسکریت پسندوں پر حملے کا نام دیا ہے۔