سابق وزیراعلیٰ سدرامیا نے کولار میں بارش کی تباہ کاری کا جائزہ لیا

Source: S.O. News Service | Published on 25th November 2021, 12:18 PM | ریاستی خبریں |

کولار، 25؍ نومبر(ایس او نیوز) سابق ریاستی وزیراعلیٰ سدرامیا نے آج بنگارپیٹ کا دورہ کیا۔ گزشتہ کئی دنوں سے موسلادھار بارش کی وجہ سے کسانوں کو نقصان پہنچا ہے۔ یہاں سے قریب واقع اے گلہلی دیہات میں بارش کی وجہ سے نقصان پہنچی فصل کا معائنہ کرنے کے بعد نامہ نگاروں سے سدارامیا نے کہاکہ بارش کی وجہ سے راگی کی فصل کو 60فیصد نقصان ہوا ہے۔ اب صرف 30تا40فیصد فصل ہاتھ آئے گی۔ راگی کی فصل کیلئے تقریباً 7لاکھ روپئے خرچ کئے۔ اگر موسلادھار بارش نہ ہوتی تو انہیں 7لاکھ روپئے سے زیادہ حاصل ہوتے۔ یہاں تک کہ ٹماٹر، آلو، پھول اور دیگر فصلوں کو بھی نقصان پہنچا ہے۔ انہوں نے اس موقع پرحکومت سے مانگ کی کہ کسانوں کو جلد معاوضہ دیا جائے۔ حکومت کی طرف سے اب تک سروے نہیں کیاگیا۔ حکومت صرف انتخابات اور انتخابی ضابطہ اخلاق کے نام سے وقت ضائع کررہی ہے۔انتخابی ضابطہ اخلاق کا نقصانات کی بھرپائی سے کوئی تعلق نہیں ہے۔ حکومت کو اب تک سروے کردینا چاہئے۔ ضلع کولار میں موسلادھار بارش کی وجہ سے کسانوں کی50 ہزار ایکڑ فصلوں کو نقصان ہواہے اور ریاست بھر میں 5سے 6لاکھ ایکڑ فصلوں کو نقصان ہوا ہے۔ اس کے علاوہ کولارمیں موسلادھار بارش کی وجہ سے کئی جانوروں کی موت ہوئی ہے۔ انہوں نے ریاستی حکومت سے مانگ کی کہ جلد سے جلد سروے کیا جائے اورکسانوں کو معاوضہ دیا جائے۔ اس موقع پر بنگارپیٹ کے رکن اسمبلی ایس ایس نارائن سوامی، سرینواس پور کے رکن اسمبلی رمیش کمار، مالار کے رکن اسمبلی ننجے گوڈا، کولارکے رکن اسمبلی بنگارپیٹ، ٹاؤن منسپل کونسل کے صدر فرزانہ سہیل کے علاوہ ضلع کولار کانگریس کے لیڈرس موجود تھے۔

ایک نظر اس پر بھی

جے ڈی ایس امیدواروں کی جیت کے ذریعے پارٹی کارکن اپنی طاقت کا مظاہرہ کریں: انیتاکمارسوامی

بنگلورو دیہی لوکل باڈیز حلقے سے ریاستی قانون ساز کونسل کیلئے ہورہے انتخابات کو جے ڈی ایس پارٹی نے سنجیدگی سے لیاہے اور اس انتخابات میں پارٹی امیدواروں کوکامیاب کرکے پارٹی کارکنوں کو اپنی طاقت کا مظاہرہ کرناہوگا۔یہ بات رکن اسمبلی انیتاکمار سوامی نے کہی۔

منگلورو : طلبہ کے درمیان گروہی تصادم - کئی طلبہ ہوئے زخمی -  پولیس نے مارا ہاسٹل پر چھاپہ - 6 طالب علم گرفتار ۔ مقامی لوگوں کا احتجاج ۔ ہاسٹل خالی کروانے کا مطالبہ  

شہر کے ایک ڈگری کالج میں زیر تعلیم اور گوجرکیرے علاقے میں واقع ہاسٹل میں قیام پزیر طلبہ کے دو گروہ آپس میں لڑ پڑے جس کے نتیجے میں بعض طلبہ زخمی بھی ہوگئے ۔ مار پیٹ اور تصادم کی اطلاع ملنے پر پولیس نے دیر رات ہاسٹل پر چھاپہ مار کر کئی طالب علموں کو گرفتار کر لیا ۔

چامنڈی پہاڑ پر زمین کھسکنے کے واقعات: نندی مجسمے کے راستے کو پیدل چلنے والے راستہ میں تبدیل کرنے اپیل

گزشتہ چند دنوں سے میسورو ضلع میں مسلسل بارشوں کی وجہ سے میسور کے قریب واقع چامنڈی پہاڑ پر زمین کھسکنے کے واقعات پیش آرہے ہیں جس کی وجہ سے پہاڑ پر واقع چامنڈیشوری دیوی کے درشن کو پہنچنے والے زائرین کو کافی پریشانیوں کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔