سدرامیا پھر کبھی وزیراعلیٰ نہیں بنیں گے: ایشورپا

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 14th May 2019, 12:53 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،14؍مئی(ایس او نیوز) سابق نائب وزیراعلیٰ اور سینئر بی جے پی لیڈرکے ایس ایشورپانے کہا ہے کہ راہل گاندھی ملک کے وزیر اعظم اور سدرامیا کرناٹک کے وزیر اعلیٰ کبھی نہیں بنیں گے۔ اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ ملک اور ریاست کے عوام نے کانگریس کو مستردکردیاہے اس کے باوجود بھی کانگریس کا غرورنہیں ٹوٹا ہے۔ چند چاپلوس اراکین اسمبلی کی خوشامد نے سدرامیا کو اندھا کردیا ہے، اسی لئے وہ وزیراعلیٰ بننے کے خواب دیکھنے لگے ہیں۔انہوں نے کہاکہ جس طرح سدرامیا کو بغاوت کے سبب جے ڈی ایس سے نکالا گیاتھابہت جلد کانگریس سے بھی نکال دیاجائے گا۔ ایشورپا نے کہاکہ سدرامیا اور کے پی سی سی صدر دنیش گنڈو راؤ کے درمیان اختلافات اپنے عروج پر ہیں، اسی طرح ملیکارجن کھرگے اور ڈاکٹر جی پرمیشور بھی دنیش گنڈوراؤ کے ساتھ ہوگئے ہیں ، جبکہ سدرامیا بائرتی بسوراج، بائرتی سریش وغیرہ ایک الگ گروپ منقسم ہوگئے ہیں ۔ سدرامیا کے چیلے ہی یہ بات عام کررہے ہیں کہ سدرامیا کو دوبارہ وزیر اعلیٰ بنایا جائے گا۔ یہ دعویٰ کرتے ہوئے کہ ریاستی عوام نے لوک سبھا انتخابات میں بی جے پی کا کھل کر ساتھ دیا ہے، ایشورپا نے کہاکہ 23 مئی کے بعد سدرامیا کاکوئی پرسان حال نہیں رہے گا۔ وزیر اعظم مودی اور ریاستی بی جے پی صدر یڈیورپا کو سدرامیا کی طرف سے صیغۂ واحد میں مخاطب کئے جانے پر تبصرہ کرتے ہوئے کہاکہ اس سے سدرامیا کا غرور ظاہر ہوتاہے۔ ایشورپا نے کہاکہ گزشتہ ایک سال سے کمار سوامی کانگریس کی ہراسانیوں کو برداشت کررہے ہیں اور بعض اوقات تنگ آکر برسر عام روپڑتے ہیں۔ فی الوقت کانگریس کے خلاف رمیش جارکی ہولی نے زبان کھولی ہے، آنے والے دنوں میں اور بھی بہت سارے اراکین اسمبلی کانگریس کے خلاف بغاوت کردیں گے۔ 

ایک نظر اس پر بھی

بنگلورو میں موسلادھار بارش سے ٹرافک جام موٹر گاڑیوں پر 25سے زائد درخت گرنے سے شدید نقصان

ہفتہ کی رات تیز ہواؤں کے ساتھ ہوئی موسلادھار بارش سے 25سے زائد درخت کئی گاڑیوں پر گرنے سے کافی نقصان پہنچاہے- ہفتہ کی شام 5بجے شروع ہوئی بارش 6:30بجے شہر کے اہم علاقوں میں کافی تیز ہواؤں کے ساتھ جاری رہی-

بنگلورو سنٹرل حلقہ: بی جے پی امیدوار پی سی موہن کو گاندھی نگر میں اکثریت

کانگریس کمیٹی کے صدر دنیش گنڈو راؤ کے اپنے حلقہ گاندھی نگر میں کانگریس کو اکثریت حاصل ہونے کی بجائے یہاں بی جے پی کو اکثریت ملی ہے- اس حلقہ میں بی جے پی امیدوار پی سی موہن کو 24,723 ووٹوں کی اکثریت حاصل ہوئی ہے-

خواب وخیال میں بھی نہیں تھا کہ لوک سبھا انتخابات کے نتائج کانگریس کے حق میں اتنے مایوس کن ہوں گے:دنیش گنڈو راؤ

لوک سبھا انتخابات میں کانگریس پارٹی کی شکست کی ذمہ داری میں اپنے سر لیتا ہوں۔ میرے خواب و خیال میں بھی نہیں تھا کہ ہم ریاست میں صرف ایک سیٹ پرکامیابی حاصل کریں گے۔