سدرامیا کاموازنہ دیوراج اُرس سے نہیں کیاجانا چاہئے:گووند کرجول

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 16th May 2019, 2:06 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،16مئی(ایس او نیوز/یواین آئی) بی جے پی کے سینئر لیڈر و سابق وزیر گووند کرجول نے الزام لگایا ہے کہ سابق وزیراعلی سدارامیا جو جے ڈی ایس۔کانگریس زیرقیادت کوارڈی نیشن کمیٹی کے صدرنشین بھی ہیں،ریاست میں لینڈمافیا کی حوصلہ افزائی کر رہے ہیں۔میڈیا سے بات کرتے ہوئے بی جے پی لیڈر نے الزام لگایا کہ سدارامیا خود کو او بی سی لیڈر قرار دے رہے ہیں تاہم وہ بنگلورو کے اطراف اراضیات پر قبضے کرنے والوں کی حمایت کر رہے ہیں اور ان کا موازنہ سابق وزیراعلی ڈی دیوراج اُرس سے نہیں کیاجانا چاہئے جو کرناٹک میں پسماندہ طبقات کے ایک سرکردہ لیڈر تھے۔یہ الزام لگاتے ہوئے کہ سدارمیا جو ایک مرتبہ پھرریاست کے سابق وزیراعلی بننے کا جذبہ رکھتے ہیں،اپنے حامیوں کے ذریعہ اپنی امیدواری کی تشہیر کر رہے ہیں۔کانگریس میں تقریبا نصف درجن ایسے لیڈر ہیں جو ر ریاست کے وزیراعلی بننے کے خواہش مند ہیں۔ وزیراعلی کے عہدہ کی دوڑ میں کرناٹک میں کانگریس آئندہ دنوں پارٹی میں پھوٹ کی وجہ سے ٹکڑے ٹکڑے ہوجائے گی۔انہوں نے سابق وزیراعلی ایچ ڈی کماراسوامی پر بھی نکتہ چینی کی اور کہا کہ وہ سیاست میں ملوث نہ ہوں بلکہ عوام کے مسائل کی سمت توجہ دیں جو ریاست کے بیشتر حصوں میں پینے کے پانی کے شدید بحران کا سامنا کر رہے ہیں۔سابق وزیر و بی جے پی رکن اسمبلی رینوکاچاریہ بھی اس موقع پر موجود تھے۔

ایک نظر اس پر بھی

بنگلورو میں موسلادھار بارش سے ٹرافک جام موٹر گاڑیوں پر 25سے زائد درخت گرنے سے شدید نقصان

ہفتہ کی رات تیز ہواؤں کے ساتھ ہوئی موسلادھار بارش سے 25سے زائد درخت کئی گاڑیوں پر گرنے سے کافی نقصان پہنچاہے- ہفتہ کی شام 5بجے شروع ہوئی بارش 6:30بجے شہر کے اہم علاقوں میں کافی تیز ہواؤں کے ساتھ جاری رہی-

بنگلورو سنٹرل حلقہ: بی جے پی امیدوار پی سی موہن کو گاندھی نگر میں اکثریت

کانگریس کمیٹی کے صدر دنیش گنڈو راؤ کے اپنے حلقہ گاندھی نگر میں کانگریس کو اکثریت حاصل ہونے کی بجائے یہاں بی جے پی کو اکثریت ملی ہے- اس حلقہ میں بی جے پی امیدوار پی سی موہن کو 24,723 ووٹوں کی اکثریت حاصل ہوئی ہے-

خواب وخیال میں بھی نہیں تھا کہ لوک سبھا انتخابات کے نتائج کانگریس کے حق میں اتنے مایوس کن ہوں گے:دنیش گنڈو راؤ

لوک سبھا انتخابات میں کانگریس پارٹی کی شکست کی ذمہ داری میں اپنے سر لیتا ہوں۔ میرے خواب و خیال میں بھی نہیں تھا کہ ہم ریاست میں صرف ایک سیٹ پرکامیابی حاصل کریں گے۔