استعفیٰ واپس لینے سدارامیا پر پارٹی لجس لیٹرس کا دباؤ

Source: S.O. News Service | Published on 12th December 2019, 12:52 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،12/دسمبر (ایس او نیوز) ریاست میں ہوئے ضمنی انتخابات میں کانگریس کے کمزور مظاہرہ کے لئے اپنی اخلاقی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے سی ایل پی لیڈر سدارامیا نے منصب سے استعفیٰ دے دیا ہے۔ اس ضمن میں سدارامیا پر اپنا استعفیٰ واپس لینے کانگریس کے اکثر لجس لیرٹس دباؤ ڈال رہے ہیں حالانکہ سی ایل پی لیڈر شپ سے استعفیٰ دینے کے بعد اپنے چند ساتھی اراکین اسمبلی سے بات کرتے ہوئے سدارامیا نے واضح کردیا ہے کہ سی ایل پی لیڈرشپ کو دیاگیا استعفیٰ واپس لینے کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا کیونکہ ضمنی انتخابات میں پارٹی کے کمزور مظاہرہ کی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے میں نے یہ استعفیٰ دیا ہے۔ اس پرتبصرہ کرتے ہوئے کانگریس کے چند اراکین اسمبلی نے کہا ہے کہ ضمنی انتخابات میں برسر اقتدار پارٹی کی جیت یقینی تھی کیونکہ حکمران پارٹی نے ان انتخابات میں سرکاری مشنری کا استعمال کیا تھا اس لئے سدارامیا کو اپنے عہدہ سے استعفیٰ دینے کی ضرورت نہیں۔ انہوں نے یہ بھی کہاکہ بی جے پی نے اس چناؤ کے لئے دولت پانی کی طرح بہائی ہے۔ بی جے پی کی یہ جیت رقم لٹانے کے سبب ہوئی ہے۔ ان کانگریسیوں نے یہ بھی کہاکہ سب سے اہم یہ ہے کہ غیر اصولی اور غیر دستوری طریقہ سے اقتدار حاصل کرنے والی بی جے پی کو کرارا جواب دینے کے لئے آپ کا سی ایل پی لیڈر رہنا بہت ضروری ہے۔ آپ کے پاس بی جے پی کو منھ توڑ جواب دینے کی طاقت ہے اور حوصلہ بھی جو کانگریس کے دیگر لیڈروں میں نہیں۔ ضمنی انتخابات میں کانگریس نے صرف دوسیٹوں پرکامیابی حاصل کی ہے جب کہ سدارامیا کم از کم 7/سیٹوں پر کامیابی کا دعویٰ کررہے تھے۔ پارٹی لیڈروں کے دباؤ پر سدارامیا کیا اپنا استعفیٰ واپس لے لیں گے؟

ایک نظر اس پر بھی

مرکز اقتدار اور ودھان سودھا اور اراکین اسمبلی اپنا وقار کھونے لگے ہیں،اسمبلی کو جائے احتجاج کی بجائے مسائل پر سنجیدہ بحث کا مرکز بنانا ضروری: سدارامیا

سابق وزیراعلیٰ سدارامیا نے اس بات پر تشویش ظاہر کی ہے کہ ریاستی اسمبلی اور مرکزی اقتدار ودھان سودھا سے ٹیکس کی شکل میں کروڑوں روپئے ادا کرنے والے عوام عام سہولتوں کی فراہمی اور اسمبلی میں ان کے مسائل کے حل کی امید کرتے ہیں -

بنگلورو: فاسٹ ٹیگ نہ رکھنے والی سواریوں سے دوگنا ٹول فیس وصول پرائیویٹ بس ڈرائیوراور ٹول اہلکاروں کے درمیان جھگڑا

ومی شاہراہوں کے ٹول پلازاسے گزرنے والی سواریوں کو فاسٹ ٹیگ لازمی کئے جانے پر صرف ابھی تین دن ہوئے ہیں،ٹول فیس ڈبل وصول کئے جانے کے معاملے میں ٹول اہلکاروں اورڈرائیورس کے درمیان ہردن جھگڑے ہورہے ہیں

بنگلورومیں چناسوامی اسٹیڈیم ڈے نائٹ کرکٹ میچ، ٹرافک نظام میں تبدیلی

بروز اتوار آج بنگلورمیں چناسوامی کرکٹ اسٹڈیم میں کھیلے جارہے ہند آسٹریلیا ڈے اینڈ نائٹ کرکٹ میچ کے پیش نظر کرکٹ اسٹڈیم کے اطراف پارکنگ نظام میں پولس نے چند تبدیلیاں کی ہیں اور میچ کے لئے آنے والوں کی گاڑیوں کی پارکنگ کے لئے مختلف مقامات پر پارکنگ کی سہولت فراہم کی-

سی اے اے اور این آر سی کے خلاف چل رہی تحریک سے توجہ ہٹانے ایس ڈی پی آئی کو بدنام کیا جارہا ہے:عبدالحنان

سوشیل ڈیموکریٹک پارٹی آف انڈیا (SDPI) کرناٹک کے ریاستی جنرل سکریٹری عبدالحنان نے ایک اخباری بیان میں کہا ہے کہ سارے ملک میں CAA,NRCاور NPRکے خلاف جو کامیاب احتجاجی مظاہرے چل رہے ہیں اس سے فسطائی طاقتیں اور میڈیا خوفزدہ اور بوکھلائی ہوئی ہیں۔

ہبلی میں وزیر داخلہ امیت شاہ کی سی اے اے حمایت ریلی : سی اے اے کے مخالفین دلت مخالف ہیں

شہریت ترمیمی قانون کے متعلق بیداری پیدا کرنے ہبلی پہنچے وزیر داخلہ امیت شاہ نے سی اے اے کے متعلق جانکاری دینے سے زیادہ  حزب  مخالف کانگریس، راہول گاندھی ، کیجریوال ، ممتابنرجی کی کڑی تنقید کرتےہوئے انہیں دلت مخالف قرار دیا۔