یتیمی کی زندگی میں پلا بڑھا شخص کئی بے سہاروں کا بن گیا سرپرست ، کہا؛ بزرگوں اور اپاہجوں کی پرورش میں سکون و اطمینا ن ملتا ہے

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 3rd March 2020, 7:19 PM | ساحلی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے | اسپیشل رپورٹس |

بھٹکل :3؍ مارچ(ایس اؤ نیوز) یتیمی کی زندگی میں پلا بڑھا شخص  آج کئی بے سہاروں کا  سرپرست بن گیا ہے ، جس نے  دنیا میں آنکھ کھولتے ہی اپنی ماں کو کھو دیا تھا اور ماں کی  موت کی وجہ سے جو شخص یتیم بن گیا تھا  آج وہی شخص کئی بےسہاروں اور لاچاروں کا آسرا بنا ہواہے۔ بے چارگی اور لاچاری میں سڑک کنارے بیٹھے بوڑھے ، اپاہجوں کی سرپرستی کرتے ہوئے انسانیت کی مثال بنا ہواہے۔  واقعہ  ضلع اُترکنڑا کے سداپور تعلقہ کے مگدور کا ہے، جہاں  آشرم دھام کے نام سے ایک یتیم خانہ بناکر  ناگراج نائک 50سے زائد بے سہاروں کی سرپرستی کررہے ہیں۔

ذرائع سے ملی اطلاع کے مطابق ناگراج نائک دراصل  انکولہ تعلقہ ہٹی کیری کیندگی کے رہنے والے ہیں۔ بتایا گیا ہے کہناگراج پیدا ہوکر صرف 14دن گزرے تھے کہ  ماں انتقال کرگئی ۔  کچھ برسوں کے لئے ایک  ہوٹل میں کام کیا۔ پھر ناگراج کے ذہن میں  خیال پیدا ہوا کہ میں نے جس طرح کی یتیمی کی زندگی گذاری ہے اور  جن مشکلات کا میں نے سامنا کیا ہے ،ایسی مشکلات دوسروں کو پیش نہ آئیں، اسی خیال سے انہوں نے ایک یتیم خانہ کی شروعات کی۔ کچھ دنوں تک سرسی کے ہلگیری میں یتیم خانہ چلانے کے بعد اب فی الحال سداپور تعلقہ مگدور میں ’پرچلیت پبلک چارٹیبل ٹرسٹ‘ کے ذریعے یتیم خانہ قائم کرتےہوئے لاچاروں کے لئے سہارا بنے ہوئے ہیں۔

عطیہ ہی سب کچھ :ناگراج نائک کا ذاتی گھر نہیں ہے، انہوں نے  کرایہ کے ایک  گھر میں یتیم خانہ قائم کیا ہے، سرسی کی  سبزی مارکیٹ والے انہیں مفت میں ترکاریاں دیتے ہیں۔ اور کچھ لوگ انہیں  جو چاول، دال  دیتے ہیں اسی کے سہارے ان بے سہاروں کا انتظام کرتے ہیں۔ ناگراج کے اس مثالی کام میں ممتانائک نامی عورت نے بھی  تعاون کیا جو   یتیم خانے کی نگران کار کے طورپر خدمات انجام دیتی ہیں۔

فالج زدہ  اور  ذیابطیس کی وجہ سے زخم  نہ بھرنےسے مصیبت میں مبتلا افراد ، جب سڑک کنارے ادھر ادھر گھو متے  نظر آتےہی ناگراج خو د وہاں پہنچ جاتے ہیں اور انہیں کرایہ کی سواری میں ڈال کر   اپنے یتیم خانہ لے آتے ہیں ، جن کو چھونےسے بھی کراہت محسوس ہوتی ہو، ایسی گندگی میں ملوث افراد کوبھی وہ خود نہلا دھلاکر  اور  اُن کے بال کاٹ کر دوائی  کا انتظام کرتےہیں۔ بعض دفعہ انہیں خود نہلا د ھلا کر اسپتال بھی لےجاتے  ہیں۔ ان کی کہانی سنتے ہوئے بڑے پیار سے انہیں کھانا کھلاتے ہیں، کبھی کبھار ان کے کاموں میں پولس بھی تعاون کرتی رہتی ہے۔ یتیم خانےمیں فی الحال سرسی ، سداپور، انکولہ ، راجستھان ، تلنگانہ سے تعلق رکھنے والی 8عورتیں، 5مرد سمیت کل 13بے سہارا لوگ قیام پذیر ہیں۔

یتیم خانے کے صدر ناگراج نائک کا کہنا ہےکہ یتیم خانے کے انتظامات کے لئے حکومت سے ایک روپیہ نہیں ملتا، عطیہ کنندگان کے تعاون سے ہی سب کچھ چل رہاہے، ناگراج کا اب ارادہ ہے کہ وہ خود کا گھر تعمیر کریں اور  یتیم خانے کو چلائیں۔انہوں نے بتایا کہ  میرے اس کام میں خاص کر سداپور تعلقہ سرکاری اسپتال کے ڈاکٹرس اور  پولس محکمہ کے افسران اور دیگر  عملہ تعاون کرتا ہے۔

یتیم خانے میں قیام کرنے والوں کے رشتہ دارانہیں لینے آتے ہیں تو انہیں پولس کی حاضری میں بھیج دیا جاتاہے۔ اس سلسلےمیں جو کوئی ناگراج نائک کا تعاون کرنا چاہتےہوں  وہ 9481389187 پر رابطہ کرسکتےہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل میں پایا گیا کورونا پوزیٹیو کا ایک اور مریض؛چھوٹے بھائی کے بعدآج بڑے بھائی کی بھی رپورٹ آئی پوزیٹو؛ کئی لوگوں کو کیا گیا انجمن کورنٹائن سینٹر منتقل

چھوٹے بھائی کی رپورٹ کورونا پوزیٹیو موصول ہونے کے بعد آج اسی کے بڑے  بھائی کی رپورٹ بھی پوزیٹیو موصول ہوئی جس کے ساتھ ہی بھٹکل یا اُترکنڑا میں کورونا سے متاثرہ لوگوں کی تعداد بڑھ کر آٹھ ہوگئی ہے۔

کورونا معاملات کو لے کر بھٹکل لاک ڈاون کی صورتحال کا جائزہ لینے کاروار ایس پی کا بھٹکل دورہ؛ تعلقہ اسپتال پہنچ کر بھی لیا جائزہ؛ کل کریں گے مشتبہ مریضوں کو انجمن ہوسٹل میں منتقل

بھٹکل میں کورونا متاثرین کی سنگین صورتحال کے بعد لاک ڈاون کا جائزہ لینے اور حفاظتی انتطامات  کے تعلق سے جانکاری حاصل کرنے ضلع اُترکنڑا کے ایس پی شیوپرکاش دیوراج نے آج پیر کو بھٹکل کا دورہ کیا ، پولس کو ضروری ہدایات دینے اور اخباری نمائندوں سے بھی بات چیت کرنے اور یہاں کے ...

بھٹکل: کوروناوائرس کی روک تھام اور لاک ڈاون میں مزید سختی برتنے اب اُڑائے جائیں گے ڈرون کیمرے؛ گلی کوچوں میں آوارہ گردی کرنے والے ہوشیار

صرف کرناٹک ہی نہیں بلکہ ملک بھر میں بھٹکل کو لے کر تشویش پائی جارہی ہے کیونکہ  اتنے چھوٹے سے علاقہ میں  کورونا وائرس سے متاثرہ لوگوں کی تعداد  بڑھتی جارہی ہے۔چونکہ یہاں کے اکثر لوگ بیرون ممالک میں رہتے ہیں، اس لئے یہ وائرس دوسرے ملکوں سے یہاں آرہی ہے۔  ہمیں دہلی سے فون بھی ...

بھٹکل لاک ڈاؤن: کسی کے بیمارہونے پر ہیلپ لائن کو فون کریں، ڈاکٹر خود گھر پر پہنچ جائیں گے۔ضلع انتظامیہ کی یقین دہانی

کورونا وائرس وباء کی وجہ سے جو لاک ڈاؤن کیا گیا ہے اس میں بہت سارے مسائل پیش آ رہے ہیں، جس میں ایک اہم مسئلہ لوگوں کے بیمار ہونے کی صورت میں اسپتال یا ڈاکٹر کے پاس مریض کو لے جانے کا ہے۔

کرناٹک میں کورونا کے متاثرین کی تعداد بڑھ کر 88 ہوگئی؛ متاثرین کی تعداد میں روزبروز اضافہ سے معاملہ سنگین

کرناٹک میں کورونا وائرس کے متاثرین کی تعداد میں اضافہ مسلسل جاری ہے۔ ہفتہ کے روز جہاں ایک ہی دن میں 18نئے معاملات سامنے آئے اتوار کے روز مزید 7نئے معاملوں کے انکشاف نے اس صورتحال کی سنگینی کی طرف واضح اشارہ کیا ہے۔ 

متحدہ عرب امارات: مدت ختم ہو جانے والے اقاموں میں 3 ماہ کی توسیع کا فیصلہ

متحدہ عرب امارات میں کابینہ نے متعدد نئے فیصلوں کی منظوری دی ہے۔ یہ فیصلے ملک میں مختلف سیکٹروں کو کرونا وائرس کے منفی اثرات سے بچانے کے لیے حکومتی اقدامات کا حصہ ہیں۔ اس کا مقصد شہریوں ، غیر ملکی مقیمین اور امارات کا دورہ کرنے والوں کی صحت اور سلامتی کو یقینی بنانا ہے۔

پوری دنیا ایک نادیدہ دشمن سے مصروف جنگ ہے؛ پوری دنیا بیک وقت ایک ہی قسم کے عذاب میں مبتلا .... سہیل انجم

اس وقت پوری دنیا ایک ایسے دشمن سے مصروف جنگ ہے جو دکھائی نہیں دیتا، جو اندھیرے کا تیر ہے، جو کبھی بھی کسی کو بھی آکے لگ سکتا ہے اور اس کی زندگی کی شمع گل کر سکتا ہے۔ایشیا ہو یا افریقہ، امریکہ ہو یا یوروپ، خطہ خلیج ہو یا کسی اور علاقے کا کوئی ملک سب اس کی زد پر ہیں اور سبھی تباہی و ...

کورونا وائرس کی سنگینی کو سمجھنے کی اشد ضرورت ہے؛ بازاروں میں غیر ضروری گھومنے سے پرہیز اور سرکاری ہدایات پر سختی سے عمل کریں

ہندوستان میں کورونا وائرس تیزی سے پھیل رہا ہے، اس وقت اس خطرناک وائرس سے متاثر لوگوں کی تعداد کے حساب سے مہاراشٹرا نمبر ایک کیرالہ نمبر2 جبکہ کرناٹک نمبر 3 پر ہے۔

کرونا وائرس سے متاثرہ بھٹکل کے تینوں لوگوں کے دبئی کے دوست احباب کی رپورٹ نگیٹیو؛ کیا دبئی میں بھی بھٹکلی شخص کورونا میں ایڈمٹ ہے ؟

کرونا وائرس سے متاثرہ تینوں افراد کے  دبئی میں مقیم دوست احباب نے دبئی اسپتال پہنچ کر اپنی جانچ کرائی ہے اور سبھوں  کی رپورٹ نیگیٹو موصول ہوئی ہے۔ دبئی کے سماجی کارکن جناب جیلانی محتشم نے بتایا کہ  انہوں نے تینوں لوگوں کے دوست احباب اور رشتہ داروں سے رابط  کیاتھاجنہوں نے ...

کورونا =این پی آر !!! ...... از: مدثر احمد

طوفان نوح سے قبل حضرت نو ح علیہ السلام نے کئی دعائیں اللہ رب العزت کے حضور میں مانگیں ، اس دوران جب وہ کشتی بنارہے تھے انکی قوم نے ان سے سوال کیا کہ اے نوح آخر کیا بات ہے کہ آپ خشکی پر کشتی بنارہے ہیں جبکہ پانی میں کشتی بنائی جاتی تھی ۔