شیو سینا میں بغاوت کے بعد مہاراشٹرا میں اُدھو حکومت خطرے میں ؛ این سی پی اور کانگریس بھی الرٹ ، بی جے پی کے خیمے میں بھی سرگرمیاں تیز

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 22nd June 2022, 12:59 PM | ملکی خبریں |

ممبئی 22 جون (ایس او نیوز)  گزشتہ روز قانون ساز کونسل کے اراکین کےانتخابات کے نتائج کے اعلان کے بعد شیو سینا میں بغاوت پھوٹ پڑی  اور شیو سینا کے سینئر لیڈر اور ریاست کے شہری ترقیات کے وزیر ایکناتھ شندے ۲۱؍ اراکین اسمبلی  کے ساتھ اچانک غائب  ہوگئے اور رابطہ سے باہر ہو گئے   ۔ کچھ دیر  بعد  معلوم ہوا کہ  یہ اراکین اسمبلی سورت(گجرات) کے ہوٹل میں خیمہ زن ہیں لیکن شیو سینا کی جانب سے ایکناتھ شندے سے بات چیت کرنے ملند نارویکر جب سورت کے میریڈین ہوٹل پہنچے تو شندے وہاں نہیں ملے ۔ان لیڈروں کے اچانک غائب ہو جانے سے تین پارٹیوں (شیو سینا ، کانگریس اور این سی پی)   کے اتحاد سے بنی مہا وکاس اگھاڑی  حکومت گرنے  کاخطرہ منڈلانے لگا ہے۔

ممبئی  کے  معروف اُردو روزنامہ انقلاب کی رپورٹ کے مطابق  این سی پی کے سربراہ شرد پوار نے دہلی میں پریس کانفرنس کرکے اس مسئلہ کو شیو سینا کا  اندرونی  معاملہ قرار دیا   ہے لیکن یہ واضح کردیا  ہےکہ وہ پوری طرح سے شیو سینا سربراہ ادھو ٹھاکرے  کے ساتھ ہیں اور یہ حکومت نہیں گرے گی بلکہ اپنی مدت پوری کرے گی۔  

شندے کیوں غائب ہوئے ؟
  شیوسینا کےلیڈروں  کے شندے کی قیادت میں اچانک غائب ہو جانے کی ۲؍تا ۳؍ وجوہات  بتائی جارہی ہیں۔  ایک تو یہ کہ ایکناتھ شندےنئی پارٹی کا اعلان کر سکتے ، دوسری وجہ  ایکناتھ شندے اینڈ ٹیم کی وزیر اعلیٰ سے ناراضگی اور تیسری وجہ بی جےپی کی جانب سےلالچ یا ڈرایا جانا   بتایا جارہا ہے ۔

 شیو سینا کی اہم میٹنگ 
   دوسری  جانب وزیر اعلیٰ کی سرکاری رہائش گاہ ورشا بنگلے پر شیو سینا کے لیڈروں کی میٹنگ کے بعد ایکناتھ شندے کو ودھان بھون میں شیو سینا کے گروپ لیڈر کے عہدے سے برطرف کرنے کا فیصلہ کیاگیا ہے جس سے یہ واضح اشارہ ملا ہے کہ شیو سینا ایکناتھ شندے کی اس حرکت سے نہ صرف  ناراض بلکہ اب وہ ان سے کوئی نرمی نہیں برتے گی۔  دریں اثناء معلوم ہوا ہے کہ ایکناتھ شندے کو گروپ لیڈر کے عہدے سے برطرف کرنے کے بعد ان کی جگہ اجے چودھری کو گروپ لیڈر مقرر کیا گیا ہے۔ اس لئے یہ کہا جا رہا ہے کہ شیوسینا نے واضح پیغام دیا ہے کہ ایکناتھ شندے سے کوئی ہمدردی نہیں دکھائی جائے گی۔ دوسری طرف ملند نارویکر  وزیر اعلیٰ کی چٹھی لے کر سورت روانہ ہو گئے تھےلیکن ان کی ملاقات نہیں ہو سکی ۔ 

ایکناتھ شندے کا ٹویٹ 
  اس دوران ایکناتھ شندے نے بھی شیو سینا کے اس اقدام کے بعد ٹویٹ کرکے ردعمل ظاہر کیا ۔شندے نے اپنے ٹویٹ میں کہاکہ ’’ہم بالا صاحب کے ماننے والے کٹر شیوسینک ہیں۔ بالا صاحب نے ہمیں ہندوتوا سکھایا ہے۔ ہم نے بالاصاحب کی عقیدت  اور دھرم ویر آنند دیگھے کی سکھائی گئی سیاست کی وجہ سےاقتدار کے لئےکبھی دھوکہ نہیں دیا ہے اور نہ کبھی کریں گے۔‘‘  شندے اور شیوسینا قیادت سے ناراض ایم ایل اے اس وقت سورت میں جمع ہیں۔ مختلف ذرائع سے ملی معلومات کے مطابق اس گروپ کے تقریباً ۳۲؍ایم ایل اے سورت میں موجود ہیں۔ کچھ اطلاعات کے مطابق شیوسینا کے ناراض اراکین اسمبلی کی تعداد ۳۵؍ تک پہنچ گئی ہے۔

اعداد و شمارکس کے حق میں؟
 مہاراشٹر میں حکمراں مہاراشٹر وکاس اگھاڑی کے اراکین کی تعداد فی الحال ۱۶۹؍ہے جس میں شیوسینا کے ۵۶؍ ایم ایل اے، این سی پی کے ۵۳؍اور کانگریس کے ۴۴؍ایم ایل اے شامل ہیں۔ اگر شیو سینا کے ۳۵؍ اراکین اسمبلی الگ ہوجاتے ہیں تو اس اتحاد کے اراکین کی تعداد کم ہوکر ۱۳۴؍رہ جائے گی جبکہ انہیں اکثریت کے لئے ۱۴۵؍ اراکین کی حمایت درکا رہو گی۔ دوسری طرف بی جے پی کے پاس ۱۰۶؍ اراکین اسمبلی ہیں اور اسے حکومت بنانے کے لئے مز ید ۴۰؍ اراکین  اسمبلی کی حمایت درکار ہو گی جو موجودہ حالات میں مشکل لگ رہا ہے۔  

کمل ناتھ کو کانگریس پارٹی کا مبصر مقرر کیا گیا 
 ایکناتھ شندے اورشیو سینا کے اراکین اسمبلی کے غائب ہوجانے کےبعد یہ افواہ گشت کررہی تھی کہ کانگریس کے بھی متعدد لیڈر لاپتہ  ہو گئے ہیں لیکن اس سلسلے میں کانگریس کی جانب سے اس خبر کو افواہ قرار دیاگیا۔ کانگریس کی جانب سے یہ بتایاگیاہے کہ پارٹی  کے سبھی اراکین اسمبلی ریاستی صدر نانا پٹولے اور وزیر محصول بالا صاحب تھورات کے رابطہ میں ہیں، کوئی لاپتہ نہیں ہواہے۔ ا سی پیش رفت کے درمیان کانگریس نے مدھیہ پردیش کے سابق وزیر اعلیٰ کمل ناتھ کو مہاراشٹر کے  لئے پارٹی مبصر کے طور پر مقرر کیا ہے۔ان کی ذمہ داری ہو گی کہ وہ پارٹی کو متحدد رکھیں اور موجودہ حالات میں سرکار کو برقرار رکھنے میں ہر ممکن مدد کریں۔

سنجے رائوت بھی سرگرم 
 شیوسینا کے ایم پی اورترجمان سنجے رائوت اپنی پارٹی کو اس بحران سے نکالنے کے لئے سرگرم ہو گئے ہیں۔ انہوں نے  بہر حال  اس بحران کو حکومت کے لئے خطرہ نہیں قرار دیا  بلکہ کہا کہ اس طرح کے بحران سے ہم ابھرنے کا ہنر جانتے ہیں۔ انہوں نے بی جے پی پر واضح طور پر الزام لگایا کہ بھگو ا پارٹی ریاستی حکومت گرانے کی سازش رچ رہی ہےلیکن شیو سینا اسے کامیاب نہیں ہونے دے گی۔

شرد پوار نے بھی میٹنگ بلائی 
 شیوسینا کے کچھ ممبران اسمبلی کی ناراضگی کے بعد گجرات کے سورت پہنچنے کی خبروں کے دوران   نیشنلسٹ کانگریس پارٹی کے صدر شرد پوار نے ممبئی میں اپنی پارٹی کے لیڈروں کی ہنگامی میٹنگ بلائی ہے۔پوار نے منگل کو دہلی میں پریس کانفرنس میں بتایا کہ گزشتہ ڈھائی سال میں مہاراشٹر حکومت کو گرانے کی یہ تیسری کوشش ہے لیکن ہم اسے بھی ناکام بنادیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے اتحاد کا ایک امیدوار قانون ساز کونسل کا الیکشن ہار گیا ہے۔ ماضی میں بھی اس قسم کے انتخابات میں کراس ووٹنگ ہوئی ہے، یہ پہلی بار نہیں ہوا  لیکن یہ حقیقت ہے کہ  این سی پی میں کوئی بغاوت نہیں ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

اُدھو ٹھاکرے سرگرم، شیو سینا کو مضبوط بنانے کاعزم، ضلع صدور سے مسلسل رابطے میں۔ سنجے رائوت کا دعویٰ :اگر ابھی انتخاب ہوئے تو شیو سینا کو آسانی سے 100سیٹیں مل جائیں گی

مہاراشٹرکی سیاست میں دائو پیچ کے معاملے میں فی الحال پیچھے رہ گئے شیو سینا سربراہ ادھو ٹھاکرے بھلے ہی اپنوں کی بغاوت کی وجہ سے دلی طور پر رنجیدہ ہیں لیکن انہوں نے پارٹی کو مضبوط بنانے کاعزم کر رکھا ہے جس کی وجہ سے اب وہ پارٹی امور کے سلسلے میں نہ صرف سرگرم ہو گئے ہیں بلکہ انہوں ...

نپور شرما کیس : سپریم کورٹ کے ججوں کے تبصرہ پر چیف جسٹس کو خط، سابق جج جسٹس رویندرن کے خط پر 15 ریٹائرڈ ججوں ، 77 سابق نوکر شاہوں اور 25 سابق فوجی افسران نے دستخط کئے

  نپور شرما  کے خلاف گزشتہ دنوںسپریم کورٹ کے ذریعہ کئے گئے سخت ترین تبصرے پر سابق ججوں نے تنقید کی ہے اور ملک کے چیف جسٹس رامنا کو خط لکھ کر اس کی شکایت کی ہے۔ کیرالا ہائی کورٹ کے سابق جج جسٹس رویندرن نے اس تعلق سے خط لکھا  ہے جس پر  ۱۵؍ ریٹائرڈ ججوں، ۷۷؍ریٹائرڈ نوکرشاہوں  اور ...

گھریلو ایل پی جی سلنڈر کے داموں میں 50 روپے کا اضافہ

عوام کو اس وقت مہنگائی کا بڑا جھٹکا لگا جب ایل پی جی سلنڈر کے داموں میں اضافہ ہو گیا۔ گھریلو ایل پی جی سلنڈر کی قیمت میں بدھ کے روز 50 روپے فی سلنڈر اضافہ ہوا ہے۔ بڑھتی ہوئی قیمتوں کا اطلاق آج سے ہو گیا ہے۔ اس اضافے کے بعد دہلی میں ایل پی جی سلنڈر 1053 روپے فی سلنڈر کے حساب سے دستیاب ...

2024 کے لوک سبھا انتخابات سے قبل سی اے اے نافذ ہو جائے گا، بنگال بی جے پی صدر

 مغربی بنگال بی جے پی کے صدر سوکانت مجمدار نے منگل کے روز کہا کہ شہریت (ترمیمی) قانون یعنی سی اے اے کو 2024 کے لوک سبھا انتخابات سے قبل نافذ کر دیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی کا اپنے وعدوں کو نبھانے کا ٹریک ریکارڈ رہا ہے۔

مدھیہ پردیش میں ہلاک آر ٹی آئی کارکن کو ملی تھی کئی دھمکیاں، مزید کئی انکشافات

مدھیہ پردیش کے ودیشا ضلع میں ایک سرکاری دفتر میں 42 سالہ آر ٹی آئی کارکن رنجیت سونی کا گولی مار کر قتل کیے جانے کے ایک ماہ بعد ایک فیکٹ فائنڈنگ ٹیم نے اس قتل سے متعلق جو رپورٹ جاری کی ہے اس سے کئی انکشافات ہوئے ہیں۔