شیو سینا راجیہ سبھا میں شہریت ترمیمی بل کی مخالفت کرے گی یا نہیں! تذبذب برقرار

Source: S.O. News Service | Published on 11th December 2019, 8:21 PM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

نئی دہلی،11/دسمبر (ایس او نیوز/ایجنسی) مہاراشٹر میں کانگریس اور این سی پی کی حمایت سے اقتدار حاصل کرنے والی شیو سینا نے لوک سبھا میں شہریت ترمیمی بل کی حمایت کی تھی اور اس کے بعد سے سوال اٹھ رہے تھے کہ آخر سیکولر اقدار کی بنیاد پر قائم ’مہا وکاس اگھاڑی‘ مخلوط حکومت کی اتحادی جماعت شیو سینا نے ایسا کیوں کیا۔ لیکن اب راجیہ سبھا کے حوالہ سے شیو سینا کا کہنا ہے کہ اس کا موقف لوک سبھا سے مختلف بھی ہو سکتا ہے۔ یہی وجہ ہے کہ شیو سینا راجیہ سبھا میں اس بل کے حوالہ سے کیا موقف اختیار کرے گی اسے لے تذبذب برقرار ہے۔

مہاراشٹر کے وزیر اعلیٰ اور شیو سینا کے سربراہ یہ واضح کر چکے ہیں کہ خواہ ان کی پارٹی نے لوک سبھا میں بل کی حمایت کی ہو لیکن چونکہ کئی سوالات ایسے ہیں جن کا جواب مرکز کی برسراقتدار جماعت نے نہیں دیا ہے لہذا وہ راجیہ سبھا میں بل کی حمایت نہیں کریں گے۔

ادھر، کانگریس کے سینئر لیڈر اور سابق وزیر نسیم خان نے کہا ہے کہ شیو سینا نے کم از کم مشترکہ پروگرام کی خلاف ورزی نہیں کی ہے، لیکن اس نے شہریت ترمیمی بل کی لوک سبھا میں حمایت کر کے بالواسطہ طور سے بھارتیہ جنتا پارٹی کی حمایت کی ہے۔

نسیم خان نے منگل کے روز کہا کہ آئین کی نوعیت کے خلاف شہریت ترمیمی بل جمہوریت پر براہ راست حملہ ہے۔ انہوں نے شیو سینا پر الزام لگایا کہ اس نے لوک سبھا میں بل کی حمایت میں آنے سے پہلے کانگریس كو اعتماد میں نہیں لیا تھا۔ سابق وزیر نے اس معاملہ پر شیو سینا سے اپنا موقف واضح کرنے کو کہا۔

مہاراشٹر میں اسمبلی انتخابات کے تقریبا ایک ماہ تک چلے سیاسی ڈرامے کے بعد کانگریس، نیشنلسٹ کانگریس پارٹیوں اور شیو سینا اتحاد کی مہا وکاس اگھاڑي اتحاد کی حکومت بنی ہے۔ مہاراشٹر اور مرکز میں بی جے پی سے الگ ہونے والی شیوسینا نے لچکیلے رویے اور ’مودی حکومت کی ہندو-مسلمانوں کے درمیان پوشیدہ تقسیم کی کوشش جیسے کئی الزام لگانے کے بعد آخر میں ووٹنگ کے دوران اپنی حمایت دے دی۔

’راجیہ سبھا میں شیوسینا کا موقف مختلف ہو سکتا ہے‘: شیوسینا رکن پارلیمنٹ سنجے راؤت نے شہریت ترمیمی بل 2019 سے متعلق بڑا بیان دیا ہے۔ انھوں نے کہا ہے کہ ہمارے اندر اس بل کو لے کر کچھ اندیشے ہیں اور اس کا جواب راجیہ سبھا میں ہم چاہیں گے۔ اگر ہمیں امید کے مطابق جواب نہیں ملتا ہے تو راجیہ سبھا میں شیوسینا کا اسٹینڈ لوک سبھا سے الگ ہو سکتا ہے۔ اس بیان کے بعد بی جے پی میں ہلچل پیدا ہو گئی ہے اور اس بات کا اندیشہ ظاہر کیا جانے لگا ہے کہ راجیہ سبھا میں کوئی الٹ پھیر ہو سکتا ہے۔

لوک سبھا اور راجیہ سبھا میں شیو سینا کا موقف مختلف کیوں ہے؟ اس سوال کے جواب میں راؤت نے کہا، ’’یہ ٹھیک ہے کہ ہم نے لوک سبھا میں بل کی حمایت کی لیکن راجیہ سبھا میں ہمارا موقف مختلف ہے۔ ہماری پارٹی اپنے نظریہ پر قائم ہے لیکن ہم کسی بھی طرح کی ووٹ بینک کی سیاست نہیں ہونے دیں گے۔‘‘

راؤت نے سوال کیا کہ ہندوستان میں ایک بار پھر ہندوؤں اور مسلمانوں کے مابین تقسیم کی کوششیں کیوں کی جا رہی ہیں! انہوں نے زور دے کر کہا کہ اس مسئلے کو سیاسی مقاصد کے لئے استعمال نہیں کیا جانا چاہئے۔ انہوں نے کہا، ’’یہ انسانیت کا معاملہ ہے اور اسے صرف مذہب تک محدود نہیں رکھا جانا چاہئے۔ ہم اپنا موقف واضح رکھیں گے۔‘‘

انہوں نے کہا کہ ان کی پارٹی کے رہنما ادھو ٹھاکرے نے بھی کہا ہے کہ اگر راجیہ سبھا میں انھیں مثبت جواب نہیں ملا تو پارٹی کا موقف لوک سبھا سے مختلف ہوگا۔ راؤت نے یہ بھی کہا کہ انہیں حب الوطنی پر کسی سے تبلیغ کی ضرورت نہیں ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

متھرا : کرشن مندر کے لئے مسجد کے انہدام کا اعلان کرنے والے دیو مراری کے خلاف ایف آئی آر

 ایودھیا میں بابری مسجد کو شہید کرنے کے بعد فیصلہ مندر کے حق میں آنے کے بعد سے ایک طبقہ کے حوصلہ بلند نظر آ رہے ہیں اور اب ان کی نظریں ملک کی دیگر ان مساجد پر مرکوز ہیں جہاں تنازعہ کھڑا ہوتا رہا ہے۔

یوپی میں نظم و نسق کی حالت کافی خراب: مایاوتی

بہوجن سماج پارٹی (بی ایس پی) سپریمو مایاوتی نے اترپردیش میں نظم ونسق پر سوالیہ نشان کھڑے کرتے ہوئے کہا کہ ریاست میں جرائم پر کنٹرول اور نظم ونسق کے معاملے میں سابقہ سماج وادی پارٹی(ایس پی) اور برسراقتدار بی جے پی میں اب کوئی فرق نہیں رہ گیا ہے۔

دبئی میں ایک سواری نے ایک شخص کو رونڈ ڈالا؛ مہلوک ایشیائی شخص کی شناخت ہنوز نہیں ہوپائی؛ پولس نے عوام سے کی تعاون کی اپیل

یہاں ایک سواری کی ٹکر میں ایک شخص ہلاک ہوگیا مگر اُس شخص کی شناخت ابھی تک معمہ بنی ہوئی ہے اور یہ کون ہے، کس ملک یا کس  شہر سے ہے کچھ پتہ نہیں چل پایا ہے۔ پولس کا کہنا ہے کہ یہ ایشیاء کے  کسی ملک سے تعلق رکھتا ہے۔

بھٹکل کا نوجوان اُدیاور میں ہوئے سڑک حادثہ میں شدید زخمی؛ علاج کے لئے مالی تعاون کی اپیل

بھٹکل مخدوم کالونی کا ایک نوجوان اُڈپی کے اُدیاور میں سڑک حادثہ میں شدید زخمی ہوا ہے اور اسے منی پال کستوربا اسپتال شفٹ کیا گیا ہے، نوجوان کی مالی حالت کمزور ہونے  کی وجہ سے علاج کے لئے  قریب تین لاکھ  روپیوں کی فوری ضرورت ہے۔ نوجوان کی شناخت سمیرسوکیری (34) کی حیثیت سے کی گئی ...

بھٹکل میں الحاج محی الدین مُنیری کے نام سے موسوم ہائی ٹیک ایمبولنس کا خوبصورت افتتاح

   یہاں نوائط کالونی میں  دبئی کے معروف تاجر جناب عتیق الرحمن  مُنیری کی طرف سے ان کے والد مرحوم الحاج محی الدین مُنیری کے نام سے منسوب ایک ہائی ٹیک ایمبولنس کا خوبصورت افتتاح عمل میں آیا جس میں بھٹکل کی سرکردہ شخصیات سمیت علماء و عمائدین   موجود تھے۔

بنگلورو فساد: مسلمانوں نے پیش کی ہم آہنگی کی مثال، انسانی زنجیر بناکر مندر کی حفاظت

کرناٹک کی راجدھانی بنگلورو میں سوشل میڈیا کی ایک قابل اعتراض پوسٹ کے بعد بھڑکنے والے فرقہ وارانہ فساد کے درمیان مسلم نوجوانوں نے مذہبی ہم آہنگی کی مثال پیش کرتے ہوئے ایک مندر کی حفاظت کی اور ہندوستان کی اس خوبصورت تصویر کو نمایاں کیا جس پر ہر ہندوستانی کو فخر ہونا چاہیے۔

 بھٹکل جالی پٹن پنچایت کی نئی عمارت کی تعمیرروک دی جائے۔ پنچایت اراکین نے کیا اسسٹنٹ کمشنر سے مطالبہ 

بھٹکل جالی پٹن پنچایت کے اراکین نے اسسٹنٹ کمشنرکو میمورنڈم دیتے ہوئے مطالبہ کیا ہے کہ ایڈمنسٹریٹر کی حیثیت سے تحصیلدار نے جالی پٹن پنچایت کی نئی عمارت تعمیر کرنے کا جو کام شروع کیا ہے