شیوسینا راجیہ سبھا میں شہری ترمیمی بل کی مخالفت کرے گی: ادھو ٹھاکرے

Source: S.O. News Service | Published on 10th December 2019, 8:58 PM | ملکی خبریں |

ممبئی،10/دسمبر (ایس او نیوز/یو این آئی) شیوسینا کے سربراہ ادھو ٹھاکرے نے منگل کے روز واضح طور پر کہا ہے کہ ان کی پارٹی راجیہ سبھا میں شہری ترمیمی بل (سی اے بی) کی اس وقت تک مخالفت کرے گی جب تک اس مسئلہ پر پیدا ہوئے سوالات کے جواب نہیں مل جاتے۔ واضح رہے کہ گزشتہ روز لوک سبھا نے اس متنازع بل کو منظور کیا جس کے تحت پاکستان، بنگلہ دیش اور افغانستان کے غیر مسلم باشندوں کو ہندوستان کی شہریت دی جائے گی جبکہ مسلمانوں کو اس سے مستثنیٰ رکھا گیا ہے۔

لوک سبھا میں پاس ہونے کے بعد راجیہ سبھا میں اس بل پر بحث ہوگی ،اس کی مخالفت ملک بھر میں جاری ہے جبکہ شمال مشرق میں گیارہ گھنٹے بند کااعلان کیا گیا ہے۔ انہوں نے کہاکہ شیوسینا نے لوک سبھا میں کئی سوالات اٹھائے تھے ،لیکن ان کا جواب نہیں ملا ہے،
لوک سبھا میں اس کی حمایت کامقصد یہ ہے کہ ایوان میں بی جے پی کی اکثریت ہے اور راجیہ سبھا میں بل کی مخالفت کی جائے گی۔

انہوں نے کہا، دراصل ہمیں جاننا ہے کہ بی جے پی شہریت ترمیمی بل کے ذریعہ خود کو محب وطن کے طور پر پیش کررہی ہے اور یہ بتانے کی۔کوشش کی۔ جارہی ہے کہ جو مخالفت کریں گے، وہ ملک دشمن ہیں ،اس سوچ کو بدلنا ہوگا۔ شیوسینا نے راجیہ سبھا میں الگ موقف ظاہر کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

شیوسیناکے ترجمان سنجے راوت نے کہا کہ ہم راجیہ سبھا الگ انداز میں اس بل پر پیش ہوں گے،کیونکہ بل کے متعلق سوالات کے حکومت کو واضح جوابات دینے ہوں گے۔شیوڈینا کے تین ممبر ہیں اور ان کی مخالفت سرکار کوبھاری پڑ سکتی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

ملک میں کورونا سے 95542 افراد ہلاک، متاثرین کی تعداد 60.74 لاکھ

 ملک میں گزشتہ 24 گھنٹے کے دوران متاثرہ افراد کے 82 ہزار سے زیادہ نئے معاملے سامنے آنے سے متاثرین کی تعداد 60.74 لاکھ سے تجاوز کر چکی ہے جبکہ کورونا کے انفیکشن سے 74 ہزار سے زائد افراد صحت مند ہوچکے ہیں جس کے نتیجے میں صحت مند افراد کی تعداد 50.16 لاکھ ہوگئی ہے۔

بہار اسمبلی انتخابات میں ٹکٹ کے لئے بی جے پی کے دفتر میں ہنگامہ

بہار اسمبلی انتخابات کی تاریخوں کے اعلان کے بعد سے ٹکٹ کے دعویداروں کی سرگرمیاں اس قدر بڑھ گئی ہیں کہ ان کے حامی کارکنان ہنگامہ آرائی اور ہاتھاپائی کرنے تک آمادہ ہیں اور کل ایسا ہی نظارہ بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے ریاستی دفتر میں دیکھا گیا۔

بالاسبرامنیم اس ملک کے موسیقی اورلسانی ثقافت کی ایک عمدہ مثال تھے: سونیا گاندھی

کانگریس  کی  چیئرپرسن سونیا گاندھی نے موسیقی کی دنیا کی ایک عظیم ہستی بالاسبرامنیم کے انتقال پراپنے گہرے رنج  وغم  کا اظہار کرتےہوئے کہا ہے کہ وہ ملک کی  موسیقی اور لسانی  ثقافت کے عمدہ مثال تھے اور ان کے نہیں رہنے  سے آرٹ اور کلچرل کی دنیا پھیکی پڑگئی ہے۔