کانگریس کے سینئرلیڈرشکیل احمدنے مدھوبنی سیٹ سے پرچہ نامزدگی داخل کرنے کا اعلان کیا

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 15th April 2019, 11:37 PM | ملکی خبریں |

پٹنہ ، 15 اپریل(ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا) مدھوبنی لوک سبھا سیٹ پر مہاگٹھ بندھن کی مشکلیں بڑھاتے ہوئے کانگریس کے سینئر لیڈر اور سابق مرکزی وزیر شکیل احمد نے اس سیٹ سے پرچہ نامزدگی داخل کرنے کا اعلان کیا ہے۔مدھوبنی سیٹ تقسیم کے تحت وکاس شیل انسان پارٹی (وی آئی پی) کو ملی ہے۔اس سے پہلے آر جے ڈی کا ٹکٹ نہ ملنے سے ناراض سابق مرکزی وزیر محمد علی اشرف فاطمی مدھوبنی لوک سبھا سیٹ سے مہاگٹھ بندھن امیدوار کے خلاف آزاد امیدوار کے طور پر الیکشن لڑنے کا اعلان کر چکے ہیں۔شکیل احمد نے پیر کوبتایاکہ میں نے پارٹی کانگریس کے نشان کے لیے زور دیا ہے،میری راہل جی سے بات چیت ہوئی ہے۔کانگریس کے ریاستی انچارج شکتی سنگھ گوہل جی سے میری کل بھی بات چیت ہوئی ہے۔ انہوں نے کہاکہ میں نے زور دیا ہے کہ جس طرح سے چترا میں ہمارے امیدوار کے خلاف آر جے ڈی نے دوستانہ مقابلے کے طور پر اپنا امیدوار کھڑا کیا ہے۔اسی طرح مدھوبنی میں مجھے پارٹی کا نشان( کانگریس) دے کر دوستانہ مقابلے میں اترنے کی اجازت دی جائے۔کانگریس کے سینئر لیڈر نے کہا کہ دوسری سپول کی بھی مثال ہے جہاں کانگریس امیدوار رنجیت رنجن کے خلاف آر جے ڈی نے ایک آزاد امیدوار کی حمایت کی ہے، اسی طرح سے مجھے آزاد امیدوار کے طور پر پارٹی( کانگریس) حمایت دے سکتی ہے۔انہوں نے کہاکہ یا تو چترا کی طرح، یا سپول کی طرح جو مناسب ہو، پارٹی تعاون کرے،میں مدھوبنی سیٹ سے پارٹی کی طرف سے نامزدگی داخل کروں گا اور پارٹی کے نشان کے لیے زور دیا ہے۔ غور طلب ہے کہ اس بار مہاگٹھ بندھن کے اتحادیوں میں سے ایک وکاس شیل انسان پارٹی (وی آئی پی) کو مدھوبنی سیٹ ملی ہے۔وی آئی پی نے بدری پربے کو مدھوبنی سے اپنا امیدوار بنایا ہے۔پوروے کا مقابلہ بی جے پی نے سینئرلیڈرمدیو نارائن یادو کے بیٹے اشوک یادو سے ہے۔شکیل احمد 1998 اور 2004 میں میں مدھوبنی سیٹ سے لوک سبھا رکن رہے تھے،وہ 1985، 1990 اور 2000 میں رکن اسمبلی منتخب ہوئے تھے۔شکیل نے رابڑی دیوی کی قیادت والی بہار حکومت میں وزیر صحت کے طور پر کام کیا اور 2004 میں مرکز میں حکمراں رہے منموہن سنگھ کی حکومت میں مواصلات، آئی ٹی اور وزارت داخلہ میں وزیر مملکت رہے تھے۔

ایک نظر اس پر بھی

پاکستان جب تک دہشت گردی کے خلاف مؤثرکاروائی نہیں کرتا، ایئر اسٹرائک جیسے قدم اٹھاتے رہیں گے: وزارت دفاع

وزارت دفاع نے دو ٹوک کہا ہے کہ جب تک پاکستان دہشت گرد گروپوں کے خلاف قابل اعتماد کارروائی نہیں کرتا، تب تک ہندوستان اپنی قومی سلامتی کو یقینی بنانے کے لئے سخت اقدامات اٹھاتا رہے گا۔