کیا آپ جانتے ہیں ضلع شمالی کینرامیں ضبط شدہ ممنوعہ پانچ ٹن پلاسٹک کہاں بھیجا گیا ؟

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 7th November 2019, 7:45 PM | ساحلی خبریں |

کاروار7/نومبر(ایس او نیوز)ضلع شمالی کینرا کے مختلف علاقوں میں دکانوں سے ضبط کی گئی ممنوعہ پلاسٹک کی تھیلیاں اور دیگر اشیاء کے بارے میں اکثر لوگ یہ سوال کررہے تھے کہ آخر یہ ضبط شدہ پلاسٹک کہاں جاتا ہے۔ اب اس سوال کا جواب سامنے آگیا  ہے اور معلوم ہوا ہے کہ ضبط شدہ پلاسٹک  کو سیمنٹ فیکٹری میں ایندھن کے طور پر استعمال کے لئے روانہ کیا جارہا ہے۔

 بعض ذرائع سے ملی معلومات کے مطابق ضلع شمالی کینرا سے اب تک 5ٹن ممنوعہ پلاسٹک کا سامان بیلگاوی میں موجودڈالمیا سیمنٹ فیکٹری کے لئے بھیجا جاچکا ہے۔جو گزشتہ پندرہ دن قبل کاروار، انکولہ، بھٹکل، یلاپور اور سرسی کے بلدیاتی اداروں کی جانب سے چھاپہ ماری کرکے دکانوں سے ضبط کیا گیا تھا۔

  کاروار میونسپالٹی کے کمشنر یوگیشور نے بتایا کہ نیشنل گرین ٹریبیونل کی ہدایت کے مطابق مختلف علاقوں میں چھاپہ ماری کرنے پر ضبط کیا گیا پلاسٹک سامان پندرہ دن قبل ڈالمیا سیمنٹ فیکٹری کو بھیجا گیا تھا۔آئندہ پندرہ دنوں میں مزید ایک اور لوڈ پلاسٹک اس فیکٹری کے لئے بھیجا جائے گا۔یہ سیمنٹ فیکٹری کاروار سے 240کلو میٹر دوری پر واقع ہے۔فیکٹری کے ساتھ جو قرار داد طے پائی  ہے اس کے مطابق فیکٹری کے لئے پلاسٹک مفت دیا جائے گا جبکہ اسے رفت کرنے کے لئے200کلو میٹر تک کے فاصلے کا خرچ فیکٹری برداشت کرے گی۔ یہ ایک تجرباتی طور پر کیا گیا قرارنامہ  ہے۔ آئندہ دو ایک مہینوں بعدجائزہ لینے کے بعد اس پر نظر ثانی کی جائے گی۔

 معلوم ہوا ہے کہ نیشنل گرین ٹریبیونل نے بلدیاتی اداروں کو ہدایت جاری کررکھی ہے کہ مقامی طور پر جمع کیاگیاگیلا کچرا گیس بنانے کے لئے استعمال کرنے کا انتظام کریں اور سوکھا کچرا نکاسی کے لئے سیمنٹ فیکٹریوں کو روانہ کریں، تاکہ اس کا استعمال ایندھن کے طور پر کیا جاسکے۔ تاحال سوکھا کچرا تو روانہ کرنے کا سلسلہ شروع نہیں ہوا ہے، البتہ ضبط شدہ پلاسٹک کو ٹھکانے لگانے کے لئے تجرباتی مرحلے میں اس مہم کا آغاز کیا گیا ہے۔خبر ملی ہے کہ کاروار شہر میں جمع کیا گیا سوکھا کچرا نکاسی کے لئے فی الحال ٹینڈر طلب کرکے دوسری ایجنسی کے حوالے کیا جارہا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

کرناٹک کے مختلف شہروں میں یا دوسری ریاست میں پھنسے بھٹکلی افراد اب آسکتے ہیں واپس بھٹکل؛ تنظیم کی طرف سےجاری کی گئیں ہدایات

بھٹکل میں اب چونکہ لاک ڈاون میں ڈھیل دی گئی ہے اور یکم جون سے بھٹکل میں تمام دکانوں اور کاروباری اداروں کو صبح آٹھ سے دوپہر دو بجئے تک کھولنے کی اجازت دی گئی ہے، اس بنا پر ریاست کرناٹک کے مختلف شہروں یا ملک کی دیگر ریاستوں میں پھنسے ہوئے بھٹکلی افراد کے لئے اب بھٹکل واپس آنے کی ...