نوئیڈا میں 31 جنوری تک دفعہ 144 نافذ، بغیر اجازت احتجاج کرنے پر 188 کے تحت ہوگا مقدمہ

Source: S.O. News Service | Published on 24th January 2021, 12:46 PM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

لکھنؤ ،24؍جنوری (ایس او نیوز؍ایجنسی) یوم جمہوریہ کے موقع پر ملک کے دارالحکومت دہلی سمیت آس پاس کے تمام علاقوں کی سیکورٹی سخت کی جارہی ہے۔ این سی آر میں سکیورٹی کے سخت انتظامات کی تیاریاں بھی تیز ہیں۔

اترپردیش کے گوتم بدھ نگر میں پولیس نے 31 جنوری تک سی آر پی سی کے تحت دفعہ 144 نافذ کردی ہے۔ جس کے بعد اب بغیر اجازت کے احتجاجی مظاہرہ نہیں کیا جاسکتا ہے اور نہ ہی نجی ڈرون اڑائے جاسکیں گے۔ دفعہ 144 کی خلاف ورزی کرنے والے شخص کے خلاف دفعہ 188 کے تحت مقدمہ چلایا جائے گا ۔

ایڈیشنل ڈی سی پی ، لاء اینڈ آرڈر آشوتوش درویدی نے کہا کہ یوم جمہوریہ کے پیش نظر نظم ونسق برقرار رکھنے کے لئے نوئیڈا میں دفعہ 144 نافذ کردی گئی ہے۔ لوگوں کو اجازت کے بغیر کوئی جلوس نکالنے یا احتجاج کرنے کی اجازت نہیں ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

ہماچل: نابالغ کے ٹرانسپورٹ ضابطہ توڑنے پر گاڑی مالک کو ہوگی 3 سال کی جیل

 ہماچل پردیش میں اب نابالغ کی جانب سے ٹرانسپورٹ ضابطے کی خلاف ورزی پر گارجین یا گاڑی مالک کو مجرم مانا جائے گا اور انھیں 25 ہزار روپیے کے جرمانے کے ساتھ تین سال کی سزا ہو سکتی ہے۔ نابالغ پر زیبونائل جسٹس ایکٹ کے تحت مقدمہ ہوگا اور متعلقہ گاڑی کا رجسٹریشن بھی مسترد ہوگا۔

مودی حکومت کی کھرب پتیوں کے لیے بیٹنگ، عوام کمر توڑ مہنگائی سے دو چار، پرینکا گاندھی کا کرکٹ کی زبان میں حملہ

 گجرات میں واقع موٹیرا کرکٹ گراؤنڈ کا نام نریندر مودی اسٹیڈیم رکھے جانے کے ایک دن بعد گھریلو گیس سلنڈر کے داموں میں اضافہ ہونے پر کانگریس کی جنرل سکریٹری پرینکا گاندھی نے مودی حکومت پر کرکٹ کی زبان میں حملہ بولا ہے۔

بی جے پی سرکار ٹیکس پر ٹیکس لگا کر لوگوں کو خوف زدہ کر رہی ہے: غلام احمد میر

جموں و کشمیر پردیش کانگریس کمیٹی کے صدر غلام احمد میر کا الزام ہے کہ بی جے پی سرکار ٹیکس پر ٹیکس لگا کر لوگوں کو خوف زدہ کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت لوگوں کو بنیادی سہولیات فراہم کرنے کے بجائے غریبوں کے جیب کاٹ کر امبانی اور اڈانی کے جیب گرم کر رہی ہے۔

ہوناور کے ٹونکا میں تجارتی بندرگاہ کی تعمیر کے خلاف ماہی گیروں کا بڑے پیمانے پر احتجاج

تجارتی بندرگاہ کی تعمیری منصوبے کے خلاف ہوناور کے ٹونکا میں ماہی گیروں نے بہت بڑےپیمانےپر احتجاج کیا۔اترکنڑا، اُڈپی اور منگلورو میں ماہی گیروں نے مچھلی شکار کے لئے سمندر میں نہ اترتےہوئے ٹونکا کے ماہی گیروں کی طرف سے اعلان کئے گئے بند کی حمایت کی۔