لیبیا میں نئی حکومت کی تشکیل کے لیے رائے شماری پر سعودی عرب کا خیر مقدم

Source: S.O. News Service | Published on 6th February 2021, 6:26 PM | خلیجی خبریں | عالمی خبریں |

ریاض،6/فروری (آئی این ایس انڈیا)مملکت سعودی عرب نے لیبیا میں نئی ایگزیکٹو اتھارٹی کی تشکیل کے حوالے سے رائے شماری کے نتائج کا خیر مقدم کیا ہے۔ یہ رائے شماری گذشتہ روز جنیوا میں اقوام متحدہ کی سرپرستی میں منعقد ہونے والے "لیبیئن پولیٹیکل ڈائیلاگ فورم" میں ہوئی۔

جمعے کے روز جاری بیان میں سعودی وزارت خارجہ نے اس امید کا اظہار کیا کہ یہ کامیابی لیبیا کی خود مختاری اور وحدت کو برقرار رکھے گی۔ علاوہ ازیں اس کے نتیجے میں تمام غیر ملکی جنگجو اور اجرتی قاتل لیبیا سے نکال دیے جائیں گے ،،، اور ایک ایسا مستقل حل سامنے آئے گا جو غیر ملکی مداخلت کو روک دے گا۔ اس مداخلت کے سبب علاقائی اور عرب دنیا کا امن خطرے سے دوچار ہو گیا ہے۔

وزارت خارجہ نے کہا کہ مملکت اس بات کی خواہاں ہے کہ یہ اقدام لیبیا میں امن و استحکام کو یقینی بنائے گا۔ اس سلسلے میں اقوام متحدہ کی بار آور کوششوں کو بھی سراہا گیا۔

جنیوا میں لیبیئن پولیٹیکل ڈائیلاگ فورم کے شرکاء نے صدارتی کونسل کے سربراہ کے لیے محمد المنفی اور نئی حکومت کے سربراہ (وزیر اعظم) کے لیے عبدالحمید الدبیبہ کے حق میں ووٹ دیا۔ ان دونوں کی فہرست نے 39 ووٹ حاصل کیے۔ اس کے مقابلے میں پارلیمنٹ کے اسپیکر عقیلہ صالح (بطور سربراہ صدارتی کونسل) اور وفاق حکومت کے وزیر داخلہ فتحی باشاغا (بطور وزیر اعظم) 34 ووٹ حاصل کر پائے۔

علاوہ ازیں موسی الکونی اور عبداللہ اللافی کو محمد المنفی کے نائبوں کے طور پر چن لیا گیا۔

لیبیا کے لیے اقوام متحدہ کی قائم مقام ایلچی اسٹیفنی ولیمز نے اسے تاریخی موقع قرار دیا۔ انہوں نے لیبیا میں تمام فریقوں کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ " آپ لوگوں نے طویل سفر طے کیا اور اپنے ملک و قوم کے واسطے باہمی اختلافات کو ختم کر دیا ... نئی منتخب ایگزیکٹو اتھارٹی کو چاہیے کہ اپنی سرکاری پاسداری کو پورا کرے"۔

ایک نظر اس پر بھی

مسجد الحرام اور مسجد نبوی میں سماجی فاصلے کی پابندی ختم

سعودی عرب نے ڈیڑھ سال سے زائد عرصے بعدمسجد الحرام اور مسجد نبوی کو 17 اکتوبر یعنی اتوار  سے معمول کے مطابق بغیر کسی پابندی کے کھولنے کا اعلان کردیا۔ کورونا وائرس کی ویکسین کی دونوں خوراک لگوانے والے افراد کو 17 اکتوبر سے مسجدالحرام اور مسجدنبوی میں داخلے کی اجازت ہوگی اور مکمل ...

بھٹکل کمیونٹی جدہ کے نئے عہدیداران کا انتخاب؛ عبدالسلام دامدا ابوپھر ایک بار صدر منتخب، عبدالمعیز جوکاکوبنے جنرل سکریٹری

بھٹکل کمیونٹی جدہ  کی  مجلس انتظامیہ نے آئندہ میعاد کے لئے عبدالسلام دامدا ابو کو پھر ایک بار صدر منتخب کیا ہے جبکہ  عبدالمعیز جوکاکو کو جنرل سکریٹری کے طورپر منتخب کیاہے۔

بھٹکل مسلم اسوسی ایشن ریاض کے لئے عہدیداران کا انتخاب؛ عمار قاضیا صدر اور ذُھیب پیشمام جنرل سکریٹری منتخب

بھٹکل مسلم اسوسی ایشن ریاض (سعودی عربیہ )  کے  لئے  عمار قاضیا صدر اور ذُھیب پیشمام جنرل سکریٹری  کے عہدہ پر منتخب ہوگئے، جبکہ  عقبہ لنکا نائب صدر، ارشاد احمد شیخ  نائب سکریٹری، سید فہد لنکا محاسب و خازن اور  نصیف ائیکری  کو جماعت کے  ترجمان کے طور پر منتخب کیا گیا۔ عہدیداران ...

محفوظ عمرہ ماڈل کے نفاذ کے بعد 1 کروڑ افراد عمرہ ادا کر چکے ہیں : وزارت حج وعمرہ

سعودی وزارت حج و عمرہ کے اعلان کے مطابق محفوظ عمرہ ماڈل کے نفاذ اور عمرہ، نماز اور زیارت کی بتدریج واپسی کے بعد سے اب تک 1 کروڑ افراد کے لیے عمرے کی ادائیگی کو ممکن بنایا گیا۔ سال 1443 ہجری کے عمرہ سیزن کے آغاز کے ساتھ ہی مختلف ممالک کے لیے جاری عمرہ ویزوں کی تعداد 12 ہزار سے تجاوز کر ...

اقوام متحدہ جنرل اسمبلی سے وزیراعظم مودی کا خطاب، دہشت گردی پوری انسانیت کیلئے خطرہ

وزیر اعظم مودی نے اقوام متحدہ جنرل اسمبلی سے خطاب کرتے ہوئے پاکستان اور چین کا نام لئے بغیر جم کر نشانہ سادھا۔ وزیر اعظم نے پاکستان کا نام لئے بغیر کہا کہ جو ملک دہشت گردی کو سیاسی آلے کے طور پر استعمال کررہے ہیں، انہیں یہ سمجھنا ہوگا کہ دہشت گردی ان کیلئے بھی اتنا ہی بڑا خطرہ ...

صنعتی ممالک پر ماحولیاتی تحفظ کی زیادہ ذمہ داری عائد ہوتی ہے: گوٹیرش

اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیو گوٹیرش نے ایک مرتبہ پھر عالمی برادری پر زور دیا ہے کہ وہ ماحول کو بچانے کے لیے اپنا کردار ادا کریں۔ نیو یارک میں سربراہان حکومت اور مملکت کے ساتھ ملاقات کے دوران گوٹیرش نے کہا کہ کرہ ارض کے خلاف جنگ‘ ختم ہونی چاہیے اور ماحولیاتی تبدیلیوں کے ...

امریکہ نومبر سے غیر ملکی مسافروں کے لیے پابندیاں نرم کر رہا ہے

امریکہ نے پیر کے روز کہا ہے کہ نومبر کے اوائل سے ملک میں آنے والے غیر ملکی مسافروں کے لیے وہ اپنی کرونا وائرس کی پابندیوں میں نرمی کر دے گا۔18 ماہ قبل کرونا وائرس کی وبا کے آغاز کے بعد امریکہ نے بیرونی ملکوں سے آنے والے مسافروں پر بڑی حد تک پابندی لگا دی تھی۔