سبریمالہ مندر ایشو پر سپریم کورٹ میں سماعت تین ہفتے کے لیے ملتوی!

Source: S.O. News Service | Published on 14th January 2020, 11:46 AM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

نئی دہلی،14/جنوری (ایس او نیوز/یو این آئی)  سپریم کورٹ کی نو رکنی آئینی بنچ نے پیر کو واضح کیا ہے کہ وہ صرف سبریمالا مندر میں سبھی عمر کی خواتین کے داخلے کے مسئلہ پر ہی نہیں بلکہ مسلم اور پارسی خواتین کے مذہبی حقوق پر بھی غوروفکر کرے گی۔ چیف جسٹس شرد اروند بوبڈے کی صدارت والی 9 رکنی آئینی بنچ نے کہا ہے وہ انہیں مسئلوں پر سماعت طے کرے جو 14 نومبر 2019 کو پانچ رکنی بنچ نے اسے سپرد کیا تھا۔ ان میں خواتین کا مندر اور مسجد،پارسی خواتین کو اگیاری میں داخلے اور داؤدی بوہرہ میں خواتین کے ختنہ جیسے مسائل شامل ہیں۔

مختلف مذاہب کے مذہبی رسم ورواجوں پر خواتین کے ساتھ ہورہی تفریق کے معاملے میں عدالت دخل دے سکتی ہے یا نہیں، اس پر بھی غوروفکر کیا جائے گا۔ معاملے کی اگلی سماعت 3 ہفتہ بعد ہوگی۔ چیف جسٹس نےکہا ہے کہ ’’ہم نہیں چاہتے ہیں کہ اس معاملے کی سماعت میں زیادہ وقت برباد ہو، اس لئے معاملے میں ٹائم لائن طے کرنا چاہتے ہیں۔ سبھی وکلاء آپس میں طے کرکے بتائیں کہ جرح اور دلیلوں میں کتنا وقت لگے گا۔‘‘

جسٹس بوبڈے نے کہا ہے کہ اس معاملے پر مزید سماعت کن سوالات پر ہوگی، کون وکیل کس مسئلہ پر بحث کرے گا، اس لئے عدالت کے جنرل سکریٹری ٍ17 جنوری کو سبھی وکیلوں سے میٹنگ کرکے ایک وقت طے کریں گے۔ میٹنگ میں طے کیا جائے گا کہ اس مسئلہ پر کون وکیل دلیل دے گا۔ آئینی بنچ میں جسٹس آر بھانومتی، جسٹس اشوک بھوشن، جسٹس ایل ناگیشور راؤ، جسٹس ایم ایم شانتن گوڈر، جسٹس ایس اے نذیر، جسٹس آر سبھاش ریڈی، جسٹس بی آر گوئی اور جسٹس سوریہ کانت شامل ہیں۔

واضح رہے کہ 28 ستمبر 2018 کو ایک آئینی بنچ نے 10 سے 50 سال کی عمر کی خواتین کو سبریمالا میں واقع بھگوان ایپا مندر میں داخل نہ ہونے کو غیر قانونی قرار دیتے ہوئے سبھی عمر کی خواتین کے لئے مندر کے دروازے کھول دیئے تھے۔ اس کے بعد 60نظرثانی کی عرضیاں اس فیصلے کے خلاف داخل کی گئی تھیں جنہیں گزشتہ 14 نومبر کو بڑی بنچ کو سونپ دی گئی تھیں۔

ایک نظر اس پر بھی

عیدالاضحیٰ کے موقع پر مسلمانوں کو قربانی کا اہم فریضہ ادا کرنے کی اجازت دی جائے جمعیۃ علماء نے وزیر اعلی سمیت دیگر وزراء کو کیا مکتوب روانہ

مسلمانوں کا اہم مذہبی تہوار عیدالاضحیٰ کو شرعی طور پر ادا کرنے کی اجازت دیئے جانے کے تعلق سے جمعیۃ علماء مہاراشٹر (ارشد مدنی) نے چیف منسٹر آف مہاراشٹرادھو ٹھاکرے، ہوم منسٹر انیل دیشمکھ، وزیر اقلیتی بہبود نواب ملک اور کمشنر آف ممبئی میونسپل کارپوریشن کو خطوط روانہ کئے ہیں۔

ملک میں کورونا انفیکشن نے پھر بنایا ریکارڈ، 24 گھنٹوں میں ملے 22,771 نئے کیس، 442 لوگوں کی موت

ملک میں کورونا وائرس روز بروز شدید شکل اختیار کرتا جارہا ہے اور گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک میں کورونا وائرس کے ریکارڈ 22،771 نئے کیسز سامنے آئے ہیں ، جس سے متاثرین کی مجموعی تعداد بڑھ کر 6.48 لاکھ ہوچکی ہے۔

ممبئی میں موسلا دھار بارش، 38 مقامات پر پانی بھرگیا، ٹریفک جام سے عوام کو پریشانی

گزشتہ روز صبح ممبئی میں تین گھنٹوں تک جاری رہنے والی شدید بارش کے بعد کم سے کم 38 مقامات پر پانی بھرگیا، جس سے اندھیری اور سائن میں تین مقامات پر بڑے پیمانے پر ٹریفک جام ہوگیا اور ٹریفک کا رخ موڑنا پڑا۔

دہلی میں کورونا کے معاملات 94000سے زیادہ، 2900سے زیادہ لوگو ں کی موت

کورونا وائرس (کووڈ۔19) کا قہر رکنے کا نام نہیں لے رہا ہے اور راجدھانی میں کل 2520نئے معاملے سامنے آنے کے بعد متاثرین کی تعداد جمعہ کو بڑھ کر 94000سے زیادہ ہوگئی ہے اور 59مزید لوگوں کی موت کے ساتھ مرنے والوں کی تعداد 2923ہوگئی ہے۔

آج 16 پوزیٹیو آنے والوں میں تین دبئی سے اور آٹھ وجے واڑہ سے لوٹے لوگ شامل

بھٹکل کے آج جن 16 لوگوں کی رپورٹ کورونا  پوزیٹیو آئی ہے، اُن میں سے تین لوگ دبئی سے آئے ہوئے لوگ ہیں، آٹھ لوگ وجئے واڑہ ،  تین لوگ  اُترپردیش  اور مہاراشٹرا سے لوٹا ہوا ایک شخص بھی آج کی لسٹ میں شامل ہیں۔

کورونا اَپ ڈیٹ:جنوبی کینرامیں آج صبح سے اب تک ہوئی 2افراد کی موت۔ضلع میں ہلاک ہونے والوں کی تعداد ہوئی 22

جنوبی کینرا میں کورونا وباء کے اثرات بہت زیادہ سنگین صورت اختیار کرتے جارہے ہیں۔ آج صبح سے اب تک کووِڈ کے 2 مریض موت کا شکار ہوگئے ہیں جس کے بعد ضلع میں وباء کی وجہ سے ہلاک ہونے والوں کی تعداد 22ہوگئی ہے۔

بھٹکل میں نجی اسپتال کی نرس کو لگ گیا کورونا کا مرض۔ایس ایس ایل سی کی طالبہ نرس کی بیٹی کو کیا گیا ہوم کوارنٹین

ایک نجی اسپتال میں خدمات انجام دینے والی نرس کو کووِڈ کا مرض لاحق ہونے کے بعدایس ایس ایل سی کا امتحان دے رہی اس کی بیٹی کو امتحان سے باز رکھتے ہوئے ہوم کوارنٹین کیا گیا ہے۔