کمٹہ میں ریوینیو منسٹر آر اشوک کے ہاتھوں رکھاگیا مِنی ودھان سودھا کا سنگ بنیاد۔ طلبہ کودیا حکومت کی طرف سے لیپ ٹاپ کا تحفہ

Source: S.O. News Service | By INS India | Published on 23rd January 2020, 4:33 PM | ریاستی خبریں | ساحلی خبریں |

کمٹہ 23/جنوری (ایس او نیوز) محکمہ ریوینیو کے وزیر آر اشوک کے ہاتھوں کمٹہ میں مِنی ودھان سودھا کا سنگ بنیا درکھا گیا۔اس کے علاوہ قدرتی آفات سے متاثرہ افراد کی باز آبادکاری کے ایک مرکز کا بھی افتتاح کیا۔ اس تعلق سے منعقدہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا سیلاب زدگان کے لئے مکانات کی تعمیر کے مقصدسے فی کس پانچ لاکھ روپے امدادی فنڈ جاری کرنے کا جو اعلان کیا گیا تھاریاستی حکومت اس سے پیچھے نہیں ہٹے گی۔ فی الحال مرکزی حکومت کی طر ف سے 1,800کروڑ روپے کا فنڈ جاری ہوا ہے۔مزید جتنی رقم کی ضرورت ہے وہ قرضہ لے کرہی سہی، حکومت متاثرہ افراد کی امداد کرے گی۔

    انہوں نے کہا کہ اس وقت حکومت کے پاس فنڈ کی کمی نہیں ہے۔ جو وعدہ کیا گیا تھا اس کے مطابق پہلی قسط کے طور پر ایک لاکھ روپے فی کس اداکیے جاچکے ہیں۔دوسری قسط جلد ہی جاری کی جائے گی۔اس سے پہلے ضلع کمشنروں کو اپنے پاس رقم نہ ہونے کا حوالہ دے کر سرکار کو درخواست دینا پڑتا تھا۔ اب حالات بدل گئے ہیں۔ حکومت کی طرف سے ہر حال میں ہر ڈپٹی کمشنر کے اکاؤنٹ میں 5کروڑ روپے لازمی طور پر جمع رکھنے کا انتظام کیا گیا ہے۔ضلع شمالی کینرا کے ڈی سی کے اکاؤنٹ میں اس وقت 50کروڑ روپے سے زیادہ کی رقم موجود ہے۔سیلاب سے متاثرہ افرادکو جلد سے جلد اپنے مکانات تعمیر کرنے کی کارروائی شروع کرنی چاہیے۔

    وزیر موصوف نے بتایا کہ ضلع شمالی کینرا میں سیلاب سے جن چار افراد کی موت ہوئی تھی ان کے وارثوں کو 20لاکھ روپے معاوضہ ادا کیا گیا ہے۔اس کے علاوہ 14367ہیکٹر زرعی زمین کو نقصان پہنچا تھا اس ضمن میں 13.80کروڑ روپے معاوضہ کسانوں کے کھاتوں میں جمع کیا گیا ہے۔546کلو میٹر سڑکوں کو نقصان پہنچاتھا اس کی مرمت اور تعمیر کے لئے 8.81کروڑ روپے منظور کیے گئے ہیں۔88لاکھ روپے خرچ کرکے سیلاب سے متاثرہ افراد کے لئے پینے کے پانی کو عبوری انتظام کیا گیا ہے۔1 6 8کشتیوں کو نقصان پہنچا تھا جس کے لئے 41.52لاکھ روپے کا معاضہ ادا کیاگیا۔ماہی گیری کے 460جال برباد ہوگئے تھے اس کے لئے 57.17لاکھ روپے معاوضہ دیا گیا۔

    اس موقع پر رکن اسمبلی دینکر شیٹی نے وزیر موصوف سے درخواست کی کہ حکومت کی طرف سے ای۔پراپرٹی کا جو قانون بنایا گیا ہے اس سے ضلع کے لوگوں کو بڑی پریشانیوں کاسامنا کرنا پڑ رہا ہے۔اس لئے وزیر موصوف اس مسئلے پر سنجیدگی سے غور فرمائیں اور عوام کو راحت دلائیں۔

    ڈگری کالج میں زیر تعلیم مستحق طلبہ کو تحفے کے طور پر لیپ ٹاپ دینے کی جو اسکیم جاری کی گئی ہے اس کے تحت وزیر آر اشوک نے کچھ طلبہ کو اپنے ہاتھوں سے یہ تحفہ دیا۔

    کمٹہ دورے کے موقع پراخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے ریوینیو وزیر آر اشوک نے کانگریسی لیڈر ڈی کے شیو کمار، سابق وزیر اعلیٰ سدارامیا اور جنتادل لیڈر اور سابق وزیراعلیٰ کمارا سوامی پر بھی نشانہ سادھا۔ ڈی کے شیو کمار نے شہریت ترمیمی قانو ن کی مخالفت کرنے اور اپنے کاغذات نہ دکھانے کا جو اعلان کیا ہے اس پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے آر اشوک نے طنزیہ انداز میں کہا کہ ان کی طرف سے کاغذات نہ دکھا نا ہی بہتر ہے۔ ان کو ووٹر لسٹ سے بھی اپنا نام خارج کرلینا چاہیے۔ اگر وہ ایساکریں گے تو ہم ان کی تہنیت کریں گے۔انہوں نے کہا کہ سدارامیا اس ملک کو بنگلہ دیش اور پاکستان میں بدلنے پر تُلے ہوئے ہیں۔منگلورو ایئر پورٹ پر بر آمد ہونے والے بم کے تعلق سے شکوک و شبہات کا اظہار کرنے پر کمارا سوامی کو بھی لتاڑا اور کہا کہ اس طرح کے بیانات سے پولیس کے حوصلے پست ہوجاتے ہیں۔انہوں نے کہا بم دھماکے کرنے والے چاہے جس مذہب سے تعلق رکھتے ہوں وہ دہشت گرد ہی ہوتے ہیں۔اقلیتوں کے ووٹ حاصل کرنے کے لئے کماراسوامی جیسے لوگوں کا اس طرح بیان بازی کرنا درست نہیں ہے۔ یہ ایک ناقابل معافی جرم ہے۔ آنے والے دنوں میں عوام ان کی پارٹی کو اس کے لئے ضرور سبق سکھائیں گے۔

ایک نظر اس پر بھی

زرعی بل کی مخالفت میں کسان تنظیموں کا ملک بھر میں احتجاج؛ کیا اس بل کے خلاف جمعہ کو کرناٹکا بند ہوگا ؟

ملک بھر میں تنازعہ  کھڑا کرنے والے زرعی بل کی سخت مخالفت کرتے ہوئے ایک طرف ملک کی مختلف ریاستوں میں احتجاج کئے جارہے ہیں وہیں   ریاست کرناٹک کے کسانوں کی طرف سے  جمعہ 25 ستمبرکو ریاست گیر سطح پر کرناٹک بند کرنے کے تعلق سے سوچا جارہا ہے۔زرعی بل کو کسانوں کے لئے موت کے منہ میں ...

شموگہ میں زبردست بارش کے نتیجے میں ہوناور کے شراوتی ندی کے اطراف رہنے والوں کے لئے بج گئی خطرہ کی گھنٹی؛ ڈیم سے کسی بھی وقت پانی چھوڑے جانے کی وارننگ

پڑوسی ضلع شموگہ میں زبردست بارش  کے بعد  لنگن مکّی ڈیم میں پانی کی سطح کافی حد تک بڑھ گئی ہے جس کو دیکھتے ہوئے کرناٹکا پاور کارپوریشن (کے پی سی ایل) کی طرف سے  ہوناور تعلقہ کے شراوتی ندی کے اطراف بسنے والوں کے لئے خطرے کا الارم بجا دیا گیا ہے اور ندی کے اطراف بسنے والے دیہات کے ...

سرسی: اسمبلی اسپیکر کے دفتر کے سامنے  دھرنا۔شمالی کینر ا کو تقسیم کرکے سرسی کو علیحدہ ضلع تشکیل دینے کا مطالبہ

عوامی مفادات اور انتظامی سہولیات کے پیش نظر ضلع شمالی کینرا کو تقسیم کرکے الگ سے سرسی ضلع تشکیل دینے اور بنواسی کو تعلقہ کا درجہ دینے کا مطالبہ کرتے ہوئے کل 21ستمبر کوسرسی ضلع ہوراٹا سمیتی نے احتجاجی ریالی  نکالی اوراسمبلی اسپیکروشویشور ہیگڈے کاگیری کے دفتر کے باہر  دھرنا ...

کاروار: سابق وزیر آنند اسنوٹیکر کے سامان میں پستول۔ بنگلورو ایئر پورٹ پر تفتیش کے بعد جانے کی دی گئی اجازت

بنگلورو سے بذریعہ ہوائی جہاز گوا ہوتے ہوئے کاروار کے لئے نکلے سابق وزیر اور جنتا دل لیڈر آنند اسنوٹیکر کو سنٹرل انڈسٹریل سیکیوریٹی فورس  نے سنیچر کو  بنگلورو ایئر پورٹ پراپنی تحویل میں لیا گیا تھا  کیونکہ ان کے سامان میں پستول  موجود تھا جسے ساتھ لے جانے کی اجازت انہوں نے ...

بھٹکل میں لنگر انداز 2کشتیاں پانی کے تیز بہاؤ کی وجہ سے ٹکرا گئیں;کشتیوں کو نقصان

موسلادھار بارش کے ساتھ تیز ہواؤں کی وجہ سے سمندر میں اونچی لہریں اٹھ رہی ہیں جس کا اثر بندگاہوں پر لنگر انداز کشتیوں پر بھی دیکھنے کو مل رہا ہے۔  ایسا ہی ایک واقعہ بھٹکل بندرگاہ پر بھی سامنے آیا جس میں ساحل سے ٹکرانے والی تیز سمندری لہروں اور شرابی ندی میں سیلاب آجانےسے پانی کا ...

شموگہ میں زبردست بارش کے نتیجے میں ہوناور کے شراوتی ندی کے اطراف رہنے والوں کے لئے بج گئی خطرہ کی گھنٹی؛ ڈیم سے کسی بھی وقت پانی چھوڑے جانے کی وارننگ

پڑوسی ضلع شموگہ میں زبردست بارش  کے بعد  لنگن مکّی ڈیم میں پانی کی سطح کافی حد تک بڑھ گئی ہے جس کو دیکھتے ہوئے کرناٹکا پاور کارپوریشن (کے پی سی ایل) کی طرف سے  ہوناور تعلقہ کے شراوتی ندی کے اطراف بسنے والوں کے لئے خطرے کا الارم بجا دیا گیا ہے اور ندی کے اطراف بسنے والے دیہات کے ...

بھٹکل: شمالی کینرا میں طوفانی بارش کا سلسلہ جاری۔کئی دیہات تالاب میں تبدیل، ندی کنارے بسنے والوں کے لئے چوکنا رہنے کی ہدایت

ضلع شمالی کینرا کے تقریباً تمام تعلقہ جات میں موسلا دھار بارش اور تیز ہواؤں کا سلسلہ جاری ہے جس کے نتیجے میں کئی دیہاتوں میں زرعی زمین ، ناریل کے باغات اور راستے وغیرہ تالاب میں تبدیل ہوگئے ہیں،  مسلسل ہورہی بارش کی وجہ سے عام زندگی بھی ٹھپ ہوگئی ہے جبکہ ندیوں کے کنارے بسنے ...

سرسی: اسمبلی اسپیکر کے دفتر کے سامنے  دھرنا۔شمالی کینر ا کو تقسیم کرکے سرسی کو علیحدہ ضلع تشکیل دینے کا مطالبہ

عوامی مفادات اور انتظامی سہولیات کے پیش نظر ضلع شمالی کینرا کو تقسیم کرکے الگ سے سرسی ضلع تشکیل دینے اور بنواسی کو تعلقہ کا درجہ دینے کا مطالبہ کرتے ہوئے کل 21ستمبر کوسرسی ضلع ہوراٹا سمیتی نے احتجاجی ریالی  نکالی اوراسمبلی اسپیکروشویشور ہیگڈے کاگیری کے دفتر کے باہر  دھرنا ...