کمٹہ میں ریوینیو منسٹر آر اشوک کے ہاتھوں رکھاگیا مِنی ودھان سودھا کا سنگ بنیاد۔ طلبہ کودیا حکومت کی طرف سے لیپ ٹاپ کا تحفہ

Source: S.O. News Service | By INS India | Published on 23rd January 2020, 4:33 PM | ریاستی خبریں | ساحلی خبریں |

کمٹہ 23/جنوری (ایس او نیوز) محکمہ ریوینیو کے وزیر آر اشوک کے ہاتھوں کمٹہ میں مِنی ودھان سودھا کا سنگ بنیا درکھا گیا۔اس کے علاوہ قدرتی آفات سے متاثرہ افراد کی باز آبادکاری کے ایک مرکز کا بھی افتتاح کیا۔ اس تعلق سے منعقدہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا سیلاب زدگان کے لئے مکانات کی تعمیر کے مقصدسے فی کس پانچ لاکھ روپے امدادی فنڈ جاری کرنے کا جو اعلان کیا گیا تھاریاستی حکومت اس سے پیچھے نہیں ہٹے گی۔ فی الحال مرکزی حکومت کی طر ف سے 1,800کروڑ روپے کا فنڈ جاری ہوا ہے۔مزید جتنی رقم کی ضرورت ہے وہ قرضہ لے کرہی سہی، حکومت متاثرہ افراد کی امداد کرے گی۔

    انہوں نے کہا کہ اس وقت حکومت کے پاس فنڈ کی کمی نہیں ہے۔ جو وعدہ کیا گیا تھا اس کے مطابق پہلی قسط کے طور پر ایک لاکھ روپے فی کس اداکیے جاچکے ہیں۔دوسری قسط جلد ہی جاری کی جائے گی۔اس سے پہلے ضلع کمشنروں کو اپنے پاس رقم نہ ہونے کا حوالہ دے کر سرکار کو درخواست دینا پڑتا تھا۔ اب حالات بدل گئے ہیں۔ حکومت کی طرف سے ہر حال میں ہر ڈپٹی کمشنر کے اکاؤنٹ میں 5کروڑ روپے لازمی طور پر جمع رکھنے کا انتظام کیا گیا ہے۔ضلع شمالی کینرا کے ڈی سی کے اکاؤنٹ میں اس وقت 50کروڑ روپے سے زیادہ کی رقم موجود ہے۔سیلاب سے متاثرہ افرادکو جلد سے جلد اپنے مکانات تعمیر کرنے کی کارروائی شروع کرنی چاہیے۔

    وزیر موصوف نے بتایا کہ ضلع شمالی کینرا میں سیلاب سے جن چار افراد کی موت ہوئی تھی ان کے وارثوں کو 20لاکھ روپے معاوضہ ادا کیا گیا ہے۔اس کے علاوہ 14367ہیکٹر زرعی زمین کو نقصان پہنچا تھا اس ضمن میں 13.80کروڑ روپے معاوضہ کسانوں کے کھاتوں میں جمع کیا گیا ہے۔546کلو میٹر سڑکوں کو نقصان پہنچاتھا اس کی مرمت اور تعمیر کے لئے 8.81کروڑ روپے منظور کیے گئے ہیں۔88لاکھ روپے خرچ کرکے سیلاب سے متاثرہ افراد کے لئے پینے کے پانی کو عبوری انتظام کیا گیا ہے۔1 6 8کشتیوں کو نقصان پہنچا تھا جس کے لئے 41.52لاکھ روپے کا معاضہ ادا کیاگیا۔ماہی گیری کے 460جال برباد ہوگئے تھے اس کے لئے 57.17لاکھ روپے معاوضہ دیا گیا۔

    اس موقع پر رکن اسمبلی دینکر شیٹی نے وزیر موصوف سے درخواست کی کہ حکومت کی طرف سے ای۔پراپرٹی کا جو قانون بنایا گیا ہے اس سے ضلع کے لوگوں کو بڑی پریشانیوں کاسامنا کرنا پڑ رہا ہے۔اس لئے وزیر موصوف اس مسئلے پر سنجیدگی سے غور فرمائیں اور عوام کو راحت دلائیں۔

    ڈگری کالج میں زیر تعلیم مستحق طلبہ کو تحفے کے طور پر لیپ ٹاپ دینے کی جو اسکیم جاری کی گئی ہے اس کے تحت وزیر آر اشوک نے کچھ طلبہ کو اپنے ہاتھوں سے یہ تحفہ دیا۔

    کمٹہ دورے کے موقع پراخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے ریوینیو وزیر آر اشوک نے کانگریسی لیڈر ڈی کے شیو کمار، سابق وزیر اعلیٰ سدارامیا اور جنتادل لیڈر اور سابق وزیراعلیٰ کمارا سوامی پر بھی نشانہ سادھا۔ ڈی کے شیو کمار نے شہریت ترمیمی قانو ن کی مخالفت کرنے اور اپنے کاغذات نہ دکھانے کا جو اعلان کیا ہے اس پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے آر اشوک نے طنزیہ انداز میں کہا کہ ان کی طرف سے کاغذات نہ دکھا نا ہی بہتر ہے۔ ان کو ووٹر لسٹ سے بھی اپنا نام خارج کرلینا چاہیے۔ اگر وہ ایساکریں گے تو ہم ان کی تہنیت کریں گے۔انہوں نے کہا کہ سدارامیا اس ملک کو بنگلہ دیش اور پاکستان میں بدلنے پر تُلے ہوئے ہیں۔منگلورو ایئر پورٹ پر بر آمد ہونے والے بم کے تعلق سے شکوک و شبہات کا اظہار کرنے پر کمارا سوامی کو بھی لتاڑا اور کہا کہ اس طرح کے بیانات سے پولیس کے حوصلے پست ہوجاتے ہیں۔انہوں نے کہا بم دھماکے کرنے والے چاہے جس مذہب سے تعلق رکھتے ہوں وہ دہشت گرد ہی ہوتے ہیں۔اقلیتوں کے ووٹ حاصل کرنے کے لئے کماراسوامی جیسے لوگوں کا اس طرح بیان بازی کرنا درست نہیں ہے۔ یہ ایک ناقابل معافی جرم ہے۔ آنے والے دنوں میں عوام ان کی پارٹی کو اس کے لئے ضرور سبق سکھائیں گے۔

ایک نظر اس پر بھی

بنگلورو کےپروگرام میں ’پاکستان زندہ باد‘ کا نعرہ ؛ امولیا کو سی اے اے مخالف احتجاجیوں نے کردیا باہر ؛ کیا تھا امولیا کا منشاء ؟

شہریت قانون کی مخالفت میں ٹیپو سلطان فرنٹ کے زیراہتمام بنگلور کے فریڈم پارک میں منعقدہ احتجاجی جلسہ میں اچانک  امولیا نامی خاتون مقرر نے پاکستان زندہ باد کے نعرے لگانے شروع کردیے  جس پر منتظمین اور اسٹیج پر تشریف فرما حیدر آباد کے رکن پارلیمان اسد الدین اویسی  حیرت میں پڑ ...

منگلورو: شہریت ترمیمی قانون مخالف احتجاج کے دوران ہوئے لاٹھی چارج اور فائرنگ معاملے میں ایف آئی آر درج ہونا چاہیے؛ ہائی کورٹ کا تیکھاتبصرہ

منگلورو میں شہریت ترمیمی قانون کے خلاف19دسمبر2019 کو ہوئے پرتشدد احتجاج کے دوران پولیس کی طرف سے کیے گئے لاٹھی چارج اور فائرنگ کے سلسلے میں کرناٹکا ہائی کورٹ کی ڈیویزن بنیچ کے رکن جسٹس جان مائیکل نے تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ پولیس کوا س معاملے میں ایف آئی درج کرنا چاہیے۔

بنگلور وسٹی پولیس وائٹ فیلڈ کو محفوظ بنانے کیلئے سی سی ٹی وی کی نگرانی

اگر آپ وائٹ فیلڈکے علاقہ میں رہتے ہیں تو جلد ہی آپ بنگلور سٹی پولیس کی نگرانی میں ہوں گے، دراصل ٹیکنالوجی کے مرکز اور علاقہ کو جرائم سے محفوظ بنانے، شرارتوں کو ختم کرنے، عوامی اعلانات کو ممکن بنانے اور مجرموں کو پکڑنے کی کارروائی کو آسان بنانے کے لئے پولیس نے اب خانگی اداروں کا ...

بنگلورو سلک بورڈ جنکشن راہگیروں کے لئے خطرناک

الیکٹرانک سٹی اور شرجاپور میں واقع اپنے دفاتر کو جانے کے لئے بسوں کو پکڑنے کے لئے فٹ پاتھوں پر پیدل چلنے اور سلک بورڈ جنکشن کا استعمال کرنے والے ٹیکیوں کا کہنا ہے کہ، یہاں کی سڑکوں پر سے پیدل چل کر جانا ایک خطر ناک معاملہ ہوتا ہے۔

این آرسی بد عنوانیوں میں اضافہ کا سبب بنے گا

شہر بنگلور میں مزدوروں تنظیموں کے رضاکاروں نے تنبیہ کی ہے کہ مرکزی حکومت کی طرف سے قومی رجسٹر برائے شہریت کے نفاذ کی کوئی بھی کوشش بد عنوانیوں کو ہوا دے سکتی ہے اور ملک بھر میں رشوت ستانی کا ماحول پیدا ہو جائے گا جبکہ غیرب لوگوں کو اپنے دستاویزات بنانے یا انہیں درست کرانے کے لئے ...

بی بی ایم پی صفائی کرمچاریوں کیلئے رہائشی اسکیم بی ڈی اے سے تعمیر شدہ فلیٹ کے حق پترا تقسیم

بروہت بنگلور مہانگر پالیکے (بی بی ایم پی) کے صفائی کرمچاریوں کو رہائش کی سہولت فراہم کرنے بنگلور ڈیولپمنٹ اتھارٹی (جی ڈی اے) کی طرف سے فلیٹ تعمیر کئے جارہے ہیں، ان میں سے چند فلیٹ کے حق پترا آج منتخب صفائی کرمچاریوں میں تقسیم کئے گئے۔

بنگلورو کےپروگرام میں ’پاکستان زندہ باد‘ کا نعرہ ؛ امولیا کو سی اے اے مخالف احتجاجیوں نے کردیا باہر ؛ کیا تھا امولیا کا منشاء ؟

شہریت قانون کی مخالفت میں ٹیپو سلطان فرنٹ کے زیراہتمام بنگلور کے فریڈم پارک میں منعقدہ احتجاجی جلسہ میں اچانک  امولیا نامی خاتون مقرر نے پاکستان زندہ باد کے نعرے لگانے شروع کردیے  جس پر منتظمین اور اسٹیج پر تشریف فرما حیدر آباد کے رکن پارلیمان اسد الدین اویسی  حیرت میں پڑ ...

بھٹکل: شرالی گرام پنچایت دفتر کے روبرو خواتین ماہی گیروں کا پھر ایک بار مچھلیاں بیچ کر احتجاج

شرالی گرام پنچایت کی مچھلی مارکیٹ کے باہری علاقےمیں قانون کی خلاف ورزی کرتےہوئے مچھلیاں  فروخت کئے جانے پر گرام پنچایت کی جانب سے کسی بھی طرح کی کوئی  کارروائی نہ کرنے کا الزام عائد کرتے ہوئے مچھلیاں بیچنے والی خواتین نے گرام پنچایت آفس  کے باہر ہی پھر ایک بار  مچھلیاں  لے ...

بھٹکل سرکاری اسپتال کی جانب سے معروف تاجر یونس قاضیا کی تہنیت

بھٹکل کی سرکاری اسپتال کی عمارت کو پینٹنگ کے تمام اخراجات ادا کرنے اور اسپتال کو خوبصورتی بخشنے پر   بھٹکل کے مشہورو معروف تاجر اور بھٹکل مسلم خلیج کونسل کے جنرل سکریٹری جناب محمد یونس قاضیا کے خدمات کی سراہنا کرتے ہوئے  بھٹکل سرکاری اسپتال کی جانب سے شال پوشی کرتے ہوئے ...

بھٹکل کے پتھر کان کنی اور تعمیراتی مزدوروں کو سرکاری معاشی امداد اور سہولیات فراہم کرنے کامطالبہ لے کر ریاستی وزیر کے نام میمورنڈم

گزشتہ چاربرسوں سے تعلقہ کے پتھر کان کنی اور تعمیراتی مزدوروں کو سرکاری طور پر جو معاشی امداداور سہولیات فراہم ہوا کرتی تھیں اس کو روک دیا گیا ہے، اس سلسلے میں ریاستی وزیر برائے مزدور توجہ دے کر مزدوروں کے مسائل حل کرنےکا مطالبہ لے کر کرناٹکا تعمیراتی اور پتھر کان کنی مزدور ...

بھٹکل اتی کرم داروں کی تکرار عرضی پر جالی پنچایت ممبران کو اعتراض : تحصیلدار سے ملاقات

بھٹکل کرکٹ اکیڈمی میدان میں اتی کرم ہوراٹ گارر ویدیکے کی قیاد ت میں سونپی گئیں ہزاروں عرضیوں کے متعلق بھٹکل جالی پٹن پنچایت کو کسی بھی طرح کی کو ئی اطلاع دئیے بغیر تھصیلدار کی معرفت ڈپٹی کمشنر کو عرضیاں روانہ کرنے پر پنچایت ممبران نے سخت اعتراض جتایا ہے اور بھٹکل تحصیلدار ...