حکومت کی غلط پالیسیوں کی وجہ سے ملک میں کساد بازاری: سیتا رام یچوری

Source: S.O. News Service | Published on 17th October 2019, 11:53 AM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،17؍اکتوبر (ایس او نیوز؍یو این آئی) کمیونسٹ پارٹی آف انڈیا مارکسسٹ (سی پی آئی ایم) کے جنرل سکریٹری سیتا رام یچوری نے بدھ کے روز کہا کہ نوٹ بندی اور’ اشیاء اور خدمات ٹیکس‘ (جی ایس ٹی) جیسی غلط پالیسیوں کی وجہ سے ہی آج ملک میں اقتصادی مندی کادور آیا ہے اور بڑھتی مہنگائی سے عوام پریشان ہیں۔

انہوں نےاور بائیں بازو کی جماعتوں نے اقتصادی مندی کے زور پکڑنے اور عوام کی بڑھتی مشکلات کے خلاف پورے ملک میں 10 اکتوبر سے شروع ہونے والی مہم کے اختتام پر یہاں مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہندوستان کی معیشت پہلے سے بڑھتی بے روزگاری، مہنگائی، کٹوتی اور زندگی بسر کرنے کے مسائل سے بے حال تھی۔ مودی حکومت بڑھتی بے روزگاری، ٹھیکیداری، کم آمدنی اور بڑھتی زرعی مشکلات کے مسائل سے بےخبر بنی ہوئی ہے۔ اس سے ملک کی کام کرنےو الی آبادی کے بڑے حصے کو بے تحاشہ تکالیف کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔

یچوری نے کہاکہ حکومت نے ریزرو بینک آف انڈیا(آربی آئی)سے جو 1.76لاکھ کروڑ روپیے لیے تھے ان کا استعمال عوامی سرمایہ کاری کرکے نوکریوں میں اضافہ کرنے اور گھریلو مانگ کے بجائے مودی حکومت اس رقم سے 170000 کروڑکےمحصولات کے نقصان کو پورا کرنا چاہتی ہے جو گذشتہ سال کی نوٹ بندی اور جی ایس ٹی کی وجہ سے ہواہے۔ معاشی کساد بازاری کو دور کرنے کے نام پر کارپوریٹ گھرانوں کو فائدہ پہنچایا جارہا ہے۔ مودی حکومت عوام کی توجہ ہٹانے کے لیے نام نہاد قوم پرستی کا جنون بڑھا رہی ہے اورپولرائیزیشن کی سیاست کر رہی ہے۔

سات دنوں تک چلنے والی اس مہم کے اختتام پر مودی حکومت کی اڈانی۔امبانی جیسے کارپوریٹ گھرانوں کے حق اورکسان۔مزدور مخالف پالیسیوں کے خلاف بائیں بازو کی جماعتوں نے جنتر منتر پر مشترکہ طورپر مظاہرہ کیا۔ مظاہرے کی قیادت سی پی آئی ایم، سی پی آئی،سی پی آئی (ایم ایل)، پی آئی (ایم ۔ایل)، ریوولیوشنری سوشلسٹ پارٹی (آر ایس پی) اور سی جی پی آئی کے قومی رہنماؤں نے کی جن میں مسٹر یچوری کے علاوہ سی پی آئی کے جنرل سکریٹری ڈی راجہ، آر ایس پی سے آر ایس ڈاگر، سی پی آئی (ایم ایل) سے کویتا کرشنن اور سی جی پی آئی سے سنتوش شامل ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

کرناٹکا اسمبلی کے سابق باغی اراکین کی نااہلیت برقرار۔ لیکن انتخاب لڑ نے پر نہیں ہوگی پابندی۔ سپریم کورٹ کا فیصلہ

سابقہ اسمبلی میں جن 17 کانگریس اور جے ڈی ایس اراکین نے بغاوت کی تھی، انہیں سپریم کورٹ سے تھوڑی سے راحت ملی ہے جس کا اثر ریاستی بی جے پی حکومت پر بھی پڑنے والا ہے۔

ایودھیا معاملہ سے منسلک وہ شخصیات، جن کےکام کی وفاداری مذہب پربھاری ثابت ہوئی

سپریم کورٹ کے فیصلےکے بعد ایودھیا معاملے(مندر- مسجد تنازعہ) کا خاتمہ ہوگیا ہے۔ 135 سال پہلے1885 میں شروع ہوئےایودھیا تنازعہ کی قانونی لڑائی میں کچھ کردارایسے رہے ہیں، جنہیں ان کی ڈیوٹی کے فرائض کولےکرہمیشہ یاد رکھا جائےگا،

مہاراشٹر: کانگریس - این سی پی نےصدر راج کوغیرضروری بتایا، مودی حکومت پرعائد کیا بڑا الزام

  کا نگریس اور این سی پی نے آج یہاں ایک مشترکہ پریس کانفرنس کے دوران مرکزی حکومت پر بڑا الزام عائد کرتے ہوئے مہاراشٹرمیں صدرراج کوغیرضروری قرار دیتے ہوئےاسے جلد بازی میں لیا گیا فیصلہ قراردیاہے۔ دونوں جماعتوں نے یہ بھی کہا کہ  شیوسینا کے ساتھ سمجھوتہ پرابھی غورنہیں ...

اسدالدین اویسی نےکہا- بابری مسجد کے لئے پانچ ایکڑ زمین کے حق میں نہیں ہے مجلس اتحاد المسلمین

آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین کے صدراوررکن پارلیمنٹ اسد الدین اویسی نے منگل کو کہا کہ ان کی پارٹی ایودھیا معاملے پرسپریم کورٹ کے فیصلے کے تحت ایک مسجد کی تعمیر کے لئے دی جانے والی پانچ ایکڑ کی اراضی کے حق میں نہیں ہے

نمونیا ایک ایسا مرض، جس کا علاج موجود، پھر بھی مہلک ترین مرض؛ ایک سال میں آٹھ لاکھ بچے جاں بحق

عالمی ادارہ صحت نے ایک رپورٹ جاری کی ہے، جس کے مطابق نمونیا کے مرض میں مبتلا ہو کر گزشتہ برس آٹھ لاکھ شیر خوار اور کم عمر بچے ہلاک ہوئے۔ پاکستان، نائجیریا، بھارت، جمہوریہ کانگو اور ایتھوپیا کا شمار ان ممالک میں ہوتا ہے، جہاں نمونیا کے باعث ہلاک ہونے بچوں کی تعداد تقریباً چار ...