کاروار میں پیش آیا چھ سالہ بچی کے ساتھ عصمت دری کا وحشیانہ معاملہ؛ پوکسو ایکٹ کے تحت وحشی ملزم گرفتار

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 23rd July 2019, 10:00 PM | ساحلی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

کاروار 23/جولائی (ایس او نیوز) کاروار کے کوڈی باغ میں ایک 6سالہ بچی کے ساتھ آبروریزی کا وحشیانہ معاملہ سامنے آیا ہے۔معلوم ہوا ہے کہ بچی کے ساتھ زبردستی منہ کالا کرنے والے نوجوان کا نام ونودبابنی نائک(36سال) ہے۔

 موصولہ رپورٹ کے مطابق ملزم ایک تعمیراتی مزدور ہے اور وہ بچی کے والدین کے ساتھ تعمیراتی کام کے لئے آتاتھا۔بچی کو اس کے والدین کام پر اپنے ساتھ لے گئے تھے ا۔بچی جب کھیل کودمیں مصروف تھی تو اسے مٹن کا سالن کھلانے کا لالچ دے کر ونود اپنے ساتھ گھر لے گیااوروہاں پر اس کے ساتھ جنسی فعل انجام دیا۔پھر جب شام تک بچی گھر واپس نہیں لوٹی تو اس کی ماں ونود کے گھر پہنچی۔ اس وقت بچی گھر کے ایک کونے میں خاموش کھڑی ہوئی تھی اورونود کے گھر والے کونکنی زبان میں ونود کو برابھلا کہہ رہے تھے۔بچی کی ماں نے سوچا کہ شاید ونود کے گھر والے اسے شراب نوشی کرنے پر ڈانٹ رہے ہونگے۔ اور وہ اپنی بچی کو اپنے گھر واپس لے گئی۔ 

 رات کے وقت جب بچی درد سے تڑپنے لگی تو ماں نے اس سے تفتیش کی۔ اس پر لڑکی نے ونود کے ذریعے کی گئی جنسی ہراسانی کی بات بتائی۔ بچی کی ماں نے فوری طور پر شہری پولیس تھانے میں شکایت درج کروائی اور بچی کو علاج کے لئے ضلع اسپتال میں داخل کیاگیا۔ پولیس نے شکایت درج کرنے کے بعد ونود کو پوکسو ایکٹ کے تحت گرفتار کرلیا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

شیرور کے کلسٹرل لیول پرتیبھا کارنجی مقابلہ جات میں  توحید پبلک اسکول کے طلبا کا بہترین مظاہرہ

گورنمنٹ ماڈل ہائر پرائمری اسکول شیرور اور محکمہ تعلیمات عامہ بیندور کے اشتراک سے منعقدہ کلسٹر لیول پرتیبھا کارنجی ثقافتی مقابلہ جات  میں توحید پبلک اسکول شیرور کے طلبا نے بہترین مظاہرہ پیش کرتےہوئے 7مقابلہ جات میں اول ، 6میں دوم اور دو مساہموں نے تیسرامقام حاصل کرتےہوئے ...

منگلورو میں کولشیکر کے قریب ریلوے پٹری پر زمین کھسک گئی؛ مینگلور سے گوا اورممبئی جانے والی ٹرین سروس متاثر؛ کئی ٹرینیں رد

تعلقہ کے کُولشیکر کے قریب پہاڑی  زمین کھسکنے  سے ریلوے ٹریک پر بہت ہی زیادہ مٹی اور کیچڑ کا ڈھیر لگ گیا  جس  کے نتیجے میں منگلورو اور اس روٹ پر آگے کی طرف جانے اور منگلورو کی طرف سے گوا اور ممبئی کی طرف چلنے والی ٹرین سروس متاثر ہوگئی۔  واردات جمعہ کو پیش آئی ہے۔

بھٹکل : کالج سے گھر لوٹ رہی طالبہ بس سے اترنےکے دوران بس پر سے گرگئی؛ شدید زخمی

تعلقہ کے ماروکیری پنچایت حدود کے سبَّتی کراس پر ایک طالبہ بس کے ذریعے کالج سے گھر لوٹنے کے دوران بس سے گر کر  شدید زخمی ہو گئی جسے بھٹکل سرکاری اسپتال میں ابتدائی طبی امداد کے بعد  اُڈپی پرائیویٹ اسپتال لے جایا گیا ہے۔ حادثہ آج جمعہ دوپہر کےوقت پیش آیا۔

بھٹکل: شرالی نیشنل ہائی وے پر لاری ہوئی بے قابو؛ کھائی میں جاتے ہوئے دیوار سے جا ٹکرائی : کوئی جانی نقصان نہیں

یہاں شرالی کے وینکٹاپور بریج کے قریب ایک لاری بے قابو ہوکر کھائی میں اُترتے ہوئے سیدھے ایک گھر کے کمپاونڈ کی دیوار سے ٹکرانے کے ساتھ ایک بجلی کے کھمبے سے بھی ٹکراگئی جس کے نتیجے میں دیوار گرگئی  اور الیکٹرک کھمبا ٹوٹنے کے ساتھ تمام وائرس بھی  ٹوٹ  کر بکھر گئے،  ٹکر میں  لاری کو ...

منگلورو میں کولشیکر کے قریب ریلوے پٹری پر زمین کھسک گئی؛ مینگلور سے گوا اورممبئی جانے والی ٹرین سروس متاثر؛ کئی ٹرینیں رد

تعلقہ کے کُولشیکر کے قریب پہاڑی  زمین کھسکنے  سے ریلوے ٹریک پر بہت ہی زیادہ مٹی اور کیچڑ کا ڈھیر لگ گیا  جس  کے نتیجے میں منگلورو اور اس روٹ پر آگے کی طرف جانے اور منگلورو کی طرف سے گوا اور ممبئی کی طرف چلنے والی ٹرین سروس متاثر ہوگئی۔  واردات جمعہ کو پیش آئی ہے۔

بھٹکل کا ایک ماہی گیر سمندر میں ڈوب کر ہوگیا فوت

چھوٹی سی کشتی پر سمندر میں ماہی گیری کے لئے جانے والا ایک شخص توازن کھو جانے کے بعد سمندر میں گر کر فوت ہوگیا ہے۔ مہلوک ماہی گیر کا نام دُرگپّا ماستی موگیر (65سال) بتایا جاتا ہے جو کہ بھٹکل میں بیلنی علاقے کا رہنے والا تھا۔

بھٹکل: مرڈیشور میں راہ چلتی خاتون کو اغوا کرنے کی کوشش ہوگئی ناکام؛ علاقہ میں تشویش کی لہر

تعلقہ کے مرڈیشور میں ایک خاتون کو اغوا کرنے کی کوشش اُس وقت  ناکام ہوگئی جب اُس نے ہاتھ پکڑ کھینچتے وقت چلانا اور مدد کے لئے پکارنا شروع کردیا،  وارات  منگل کی شب قریب نو بجے مرڈیشور کے نیشنل کالونی میں پیش آئی۔واقعے کے بعد بعد نہ صرف مرڈیشور بلکہ بھٹکل میں بھی تشویش کی لہر ...

بھٹکل: ہیومن ویلفئیر ٹرسٹ مرڈیشور کی جانب سے معاشی طور پر کمزور خواتین میں تقسیم کی گئیں سلائی مشین

تعلقہ کے مرڈیشور میں ہومن ویلفیر ٹرسٹ کی جانب سے  غریب خاندانوں کو  خود روزگار پیدا کرکے اپنا  گھر چلانے کے مقصدسے  سلائی مشینیں تقسیم کی گئیں۔ اس تعلق سے   ایک پروگرام منعقد کیا گیا تھا جس میں  مرڈیشور اور بھٹکل کے  کئی ایک ذمہ داران موجود تھے۔