رام نگرم سیلاب متاثرین کیلئے نئے کپڑوں کی اشد ضرورت

Source: S.O. News Service | Published on 3rd September 2022, 11:36 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،3؍ستمبر (ایس او نیوز) رام نگرم میں حالیہ شدید بارش اور سیلاب کی وجہ سے تقریباً5ہزار مکانات متاثر ہوئے ہیں، جن میں 150کچے مکانات زمین بوس ہوگئے ہیں۔ اس علاقہ میں جمعیت علماء کرناٹک شاخ رام نگرم ضلع کی نگرانی میں راحتی کاموں کاسلسلہ جاری ہے۔

جمعیت علماء ہند، کرناٹک کے جنرل سکریٹری مفتی شمس الدین بجلی صاحب نے نمائندو ں کو بتایا کہ رام نگرم میں متاثرین کی حالت بہت خراب ہے۔ فی الحال متاثرہ مکانات سے کیچڑ صاف کرنے کاکام جمعیت علماء کرناٹک کی نگرانی اور مفتی طاہر قریشی صاحب صدر جمعیت علماء کرناٹک شاخ رام نگرم کی سرپرستی میں جاری ہے۔ متاثرین میں کھانا اور راشن کٹس تقسیم کئے جارہے ہیں۔انہوں نے بتایا کہ متاثرین کے لئے کپڑوں کی سخت ضرورت ہے۔کیونکہ متاثرین اپنے مکانات سے بدن پر پہنے ہوئے کپڑوں سے باہر نکلے تھے۔ جب کپڑوں کیلئے اپیل کی جاتی ہے تو لوگ پرانے کپڑے لا کر دیتے ہیں۔ ان پرانے کپڑوں کو لینے کیلئے متاثرین تیار نہیں، اس لئے نئے کپڑوں کا عطیہ دینا بہتر ہے۔

مفتی شمس الدین بجلی صاحب نے بتایا کہ کل جمعیت علماء کرناٹک کے صدر مفتی افتخار احمد صاحب قاسمی کی قیادت میں انہوں نے مولانا محمد زین العابدین اور دیگر ذمہ داروں کے ساتھ رام نگرم کا دورہ کیا۔رام نگرم کے درمیان بہنے والا ایک نالہ ابل کر اس کا پانی گھروں میں گھس گیا تھا۔ گھروں اور اس علاقہ میں اتنا کیچڑ ہے کہ کوئی گاڑی جا نہیں سکتی۔ہمارا وفد بھی پیدل متاثرہ گھروں تک پہنچا۔مفتی شمس الدین نے بتایا کہ جمعیت کے ساتھیوں نے متاثرین کیلئے نہایت ضروری سامان کی فہرست تیار کی ہے۔انہیں فوری کچن کا سامان چاہئے، کپڑے عورتوں، مردوں اور بچوں کے لئے، حصیریں، نہالیوں اور کمبلوں کی بھی زیادہ ضرورت ہے۔متاثرہ مکانات کے بجلی کے کنکشن بھی کٹ ہوگئے ہیں۔انہوں نے بتایا کہ حالانکہ مقامی حضرات بھی متاثرین کی مدد کررہے ہیں لیکن یہ کافی نہیں۔اس لئے جمعیت علماء کرناٹک نے متاثرین کی مدد کیلئے ریاست کے تمام مخیر حضرات سے اپیل کی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

بجٹ 2023: ’کوئی امید نہیں، بجٹ ایک بار پھر ادھورے وعدوں سے بھرا ہوگا‘، سدارمیا کا اظہارِ خیال

یکم فروری کو مرکز کی مودی حکومت رواں مدت کار کا آخری مکمل بجٹ پیش کرنے والی ہے۔ مرکزی وزیر مالیات نرملا سیتارمن کے ذریعہ بجٹ پیش کیے جانے سے قبل بجٹ 2023 کو لے کر کانگریس کے کچھ لیڈران نے اپنے خیالات ظاہر کیے ہیں۔

کرناٹک ہائی کورٹ کی وارننگ، کہا: چیف سکریٹری دو ہفتوں میں لاگو کرائیں حکم

کرناٹک ہائی کورٹ نے منگل کو انتباہ دیا کہ اگر ریاستی حکومت دو ہفتوں کے اندر سبھی گاؤں اور قصبوں میں قبرستان کے لئے زمین فراہم کرانے کے اس کے حکم پر عمل درآمد کرنے میں ناکام رہتی ہے تو وہ چیف سکریٹری کے خلاف توہین عدالت کی کارروائی شروع کرنے پر مجبور ہوجائے گا ۔

منگلورو: محمد فاضل قتل میں ہندوتوا عناصر ملوث ہونے کا دعویٰ - اپوزیشن پارٹیوں نےکیا کیس کی دوبارہ جانچ کامطالبہ 

بی جے پی یووا مورچہ لیڈر پروین نیٹارو قتل کے بدلے میں عناصر کی طرف سے سورتکل میں محمد فاضل کو قتل کرنے کا کھلے عام دعویٰ کرنے والے وی ایچ پی اور بجرنگ دل لیڈر شرن پمپ ویل کے خلاف کانگریس ، جے ڈی ایس اور ایس ڈی پی آئی جیسی اپوزیشن پارٹیوں نے اس قتل کیس کی ازسر نو جانچ کا مطالبہ کیا ...

ٹمکورو میں اشتعال انگیز بیان دینے والے شرن پمپ ویل سمیت دیگر ہندوتوا لیڈروں کے خلاف قانونی کارروائی کا مطالبہ لے کر اے پی سی آر نے ایس پی کو دیا میمورنڈم

حال ہی میں ریاست کرناٹک کے  ٹمکور میں  منعقدہ شوریہ یاترا کے دوران وی ایچ پی لیڈر شرن پمپ ویل نے جو متنازع اور اشتعال انگیز بیان دیا  تھا ، اس پر کٹھن کارروائی کرتے ہوئے اسے گرفتارکرنے کا مطالبہ لے کر  ایسوسی ایشن فار پروٹیکشن آف سوِل رائٹس (اے پی سی آر) کے  ایک وفد نے ٹمکورو ...