بارش کی تباہی: معاوضے کی فراہمی کے معاملے میں بومئی حکومت پوری طرح ناکام:سدارامیا

Source: S.O. News Service | Published on 6th September 2022, 12:11 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو، 6؍ستمبر(ایس او نیوز)تعلقہ کے گنڈسی ہوبلی گولراہلی میں ضلع پنچایت کے سابق رکن پٹیل شیوپا کے بیٹے کی شادی کی تقریب میں شرکت کیلئے آئے ہوئے سابق وزیراعلیٰ وریاستی اسمبلی کے اپوزیشن لیڈر سدارامیا نے یہاں اخباری کانفرنس سے خطاب کیا۔

انہوں نے کہاکہ پی ایس آئی تقررات،پی ڈبلیو ڈی ٹھیکہ اور کے پی ٹی سی ایل تقررات میں ہوئے گھپلوں سمیت کئی بدعنوانیوں کے معاملات ہمارے سامنے ہیں،عوام ہی اس معاملے میں آواز اٹھانے لگے ہیں اور گلی کوچوں میں بھی بحث جاری ہے۔بی جے پی کی طرف سے منایاجارہا جن اتسو،بدعنوانیوں کا اتسوہے،یہ جن اتسو ہرگز نہیں ہوسکتا۔بی جے پی کو جن اتسو منانے کا کوئی اخلاقی حق نہیں ہے۔

سدارامیانے کہا کہ ایتناہولے،کرشنا،کاویری سمیت دیگر کئی آبی منصوبو ں کا کام رکا پڑاہے،انتخابی منشور میں کئے گئے وعدوں اور بجٹ میں کئے گئے اعلان کے مطابق کام ہواہے یا نہیں،اس کا جواب خود بی جے پی ہی دے سکتی ہے۔آبپاشی کے منصوبوں کیلئے 1.40لاکھ کروڑ روپئے مختص کئے جانے کا اعلان کرنے والی حکومت نے اب تک 40ہزار کروڑ روپئے بھی خرچ نہیں کی ہے۔منصوبوں کیلئے خرچ کئے جانے کا حساب وکتاب صر ف کاغذی بن کر رہ گیاہے۔اس سلسلے میں ایوان میں ضرو ر آواز اٹھائی جائے گی۔

سدارامیانے کہاکہ بارش کی تباہی کیلئے معاوضے کی فراہم کے معاملے میں وزیراعلیٰ بسوراج بومئی قیادت والی بی جے پی حکومت پوری طرح ناکام ہوچکی ہے۔ سدارامیانے شدید برہمی ظاہر کرتے ہوئے کہاکہ آج تک قانون اور مذہبی روایات کے مطابق گنیش اتسو منایاجارہاتھا، امن میں خلل پید اکرنے کی کوشش کرنے والوں کے خلا ف پولیس کارروائی کرتی آرہی تھی،مگر اس مرتبہ ساورکر کے معاملے کو لے کر نیاتنازعہ کھڑاکر کے عوام کو گمراہ کیاجارہاہے۔گوتم بدھ، بسونا، کنگاداسا وار دیگر عظیم شخصیتوں کی تاریخ کو ہی توڑ مروڑ کر پیش کرنے کی کوشش کی جارہی ہے،ایسے فرقہ پرستوں اور مفاد پرستوں سے کیاامید اور توقع کی جاسکتی ہے۔

سدارامیانے مزید کہاکہ راج کالوے پر قبضے کے معاملے میں رکن اسمبلی اروند لمباولی کی طرف سے ایک خاتون کے خلاف استعمال کئے گئے الفاظ سے پوری خواتین برادری کو دھکہ پہنچاہے،ایسے افراد کو اسمبلی میں داخلہ تک نہیں دیاجاناچاہئے،بی جے پی کی تہذیب کو عوام دیکھ رہے ہیں،آئندہ دنوں ضرور سبق سکھائیں گے۔مقامی رکن اسمبلی کے ایم شیولنگے گوڈا کی کانگریس میں شمولیت کے تعلق سے پوچھے گئے سوال کا جواب دینے سے انکار کردیا۔

اس موقع پرسابق وزیر بی شیورام،پٹیل شیوپا،ڈسٹرکٹ کانگریس کمیٹی کے صدر جاوگل منجوناتھ، ڈسٹرکٹ وکلیگا سنگھا کے ڈائرکٹر رام چندرو،بی جی نرنجن اور دیگر موجود تھے۔

ایک نظر اس پر بھی

رائچور: طالبہ کی ہاسٹل میں مشتبہ موت، والدین کا جنسی ہراسانی کا الزام

لنگاساگر ٹاؤن میں واقع ہاسٹل کے کمرے میں ایک 17سالہ طالبہ پُراسرار حالات میں مردہ پائی گئی۔ جس کو لے کر والدین نے الزام لگایا ہے کہ پرنسپل کی مبینہ جنسی ہراسانی اس کے لئے ذمہ دار ہے۔ والدین کا کہنا ہے کہ جنسی ہراسانی کے بعد اس کا قتل کیا گیا ہے اور بعد میں اُسے خودکشی دکھانے کی ...

مئی میں اسمبلی انتخابات ہونے کی اطلاعات کے بعد کرناٹک میں شروع ہوگئی انتخابی گہماگہمی؛ 9 فروری کو کماراسوامی پہنچیں گے بھٹکل

کرناٹک میں مئی کے  تیسرے ہفتے میں اسمبلی انتخابات ہونے کی اطلاعات موصول ہونے کے ساتھ ہی  ریاست کی  سیاسی پارٹیوں میں میٹنگوں  کا آغاز ہوچکا ہے۔ اسی طرح کی ایک میٹنگ آج سنیچر کو بنگلور جے ڈی ایس پارٹی کی منعقد ہوئی جس میں بھٹکل کے  جے ڈی ایس قائد عنایت اللہ شاہ بندری بھی شریک ...

کرناٹک میں آنے والے اسمبلی انتخابات کو لے کرتیاریاں شروع؛ پرمود متالک کے خلاف کارکلا میں  بی جے پی اگرمخالفت کرتی ہے تو چکمگلورو میں سی ٹی روی کے خلاف کھڑا کیا جائے گا رام سینا کا اُمیدوار

کرناٹک میں اسمبلی انتخابات  مئی کے تیسرے ہفتہ میں ہونے کی توقع ظاہر کی جارہی ہے، لیکن ابھی سے انتخابات کی  گہماگہمی شروع ہوچکی ہے۔ ضلع اُڈپی کے کارکلا سے  شری رام سینا کے چیف پرمود متالک نے آئندہ اسمبلی الیکشن میں  میدان میں اترنے کا اعلان کیا ہے اور بی جے پی ایم ایل اے سنیل ...

کرناٹک اسمبلی انتخاب میں کانگریس 136 نشستوں پر کامیاب ہوگی، بی جے پی حکومت چند دنوں کی مہمان، ڈی کے شیوکمار کا دعویٰ

کرناٹک کانگریس نے جمعہ کے روز دعویٰ کیا کہ وہ ریاست میں آئندہ اسمبلی انتخاب میں بہ آسانی 136 سیٹیں جیت لے گی۔ اس درمیان ریاستی کانگریس صدر ڈی کے شیوکمار اور اپوزیشن لیڈر سدارمیا نے ریاست کے جنوبی اور شمالی علاقوں سے الگ الگ بس یاترا شروع کی۔

بجٹ 2023: ’کوئی امید نہیں، بجٹ ایک بار پھر ادھورے وعدوں سے بھرا ہوگا‘، سدارمیا کا اظہارِ خیال

یکم فروری کو مرکز کی مودی حکومت رواں مدت کار کا آخری مکمل بجٹ پیش کرنے والی ہے۔ مرکزی وزیر مالیات نرملا سیتارمن کے ذریعہ بجٹ پیش کیے جانے سے قبل بجٹ 2023 کو لے کر کانگریس کے کچھ لیڈران نے اپنے خیالات ظاہر کیے ہیں۔