’بھارت چھوڑو تحریک‘ میں آر ایس ایس نے کیا کیا ہوگا؟ جے رام رمیش نے پوچھا سوال

Source: S.O. News Service | Published on 9th August 2022, 10:30 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،9؍اگست (ایس او نیوز؍ایجنسی) انڈین نیشنل کانگریس 7 ستمبر 2022 سے کنیا کماری سے کشمیر تک ’بھارت جوڑو‘ یاترا شروع کرنے جا رہی ہے۔ ہی اطلاع پارٹی کے جنرل سیکریٹری انچارج شعبہ مواصلات رام رمیش نے فراہم کی۔ انہوں نے کہا، 80 سال قبل آج ہی کے دن مہاتما گاندھی کی قیادت میں انڈین نیشنل کانگریس نے ’بھارت چھوڑو‘ تحریک شروع کی تھی، جس نے پانچ سال بعد ہمارے ملک کو آزادی دلائی۔

دریں اثنا، جے رام رمیش نے آر ایس ایس کو ہدف تنقید بناتے ہوئے پوچھا ہے کہ جس وقت مہاتما گاندھی ’بھارت چھوڑو‘ تحریک چلا رہے تھے، آر ایس ایس نے اس وقت کیا کیا ہوگا؟ جے رام رمیش نے ٹوئٹ کیا، ’’آپ کو کیا لگتا ہے کہ 80 سال قبل اس تاریخ ساز دن آر ایس ایس نے کیا کیا ہوگا جب مہاتما گاندھی نے بھارت چھوڑو تحریک شروع کی تھی؟ اس نے اس تحریک سے خود کو علیحدہ کر لیا تھا۔ شیاما پرساد مکھرجی نے اس میں حص نہیں لیا تھا۔ جبکہ مہاتما گاندھی، جواہر لال نہرو، سردار پٹیل، راجندر پرساد، مولانا ابولکلام آزاد، گووند ولبھ پنت سمیت بہتوں کو جیل جانا پڑا تھا۔

کانگریس کی پیدل یاترا 12 ریاستوں اور مرکز کے زیر انتظام 2 علاقوں سے ہو کر گزرے گی۔ 3.5 ہزار کلومیٹر کا فاصلہ طے کرتے ہوئے یہ یاترا تقریباً 150 دنوں میں اختتام پذیر ہوگی۔ اس یاترا میں راہل گاندھی سمیت کانگریس کے لیڈران اور کارکنان شرکت کریں گے۔

کانگریس پارٹی اس یاترا کے ذریعے مودی حکومت کی ناکامیوں سے عوام کو آگاہ کرائے گی۔ جے رام رمیش نے اپنے جاری کردہ ایک بیان میں کہا ’’انڈین نیشنل کانگریس ان تمام سے ےاس بھارت جوڑو یاترا میں شامل ہونے کی اپیل کرتی ہے، جو خوف، بنیاد پرستی اور تعصب کی سیاست اور معاش کو تباہ کرنے والی معاشیات، بڑھتی ہوئی بے روزگاری اور پیر پسارتے غیر مسواوی حالات کو تبدیل کرنے کا اختیار فراہم کرنے کی اس وسیع قومی کاوش کا حصہ بننا چاہتے ہیں۔‘‘

ایک نظر اس پر بھی

کہاں غائب ہو گئے نوٹ بندی کے بعد چھاپے گئے 9.21 لاکھ کروڑ روپے، آر بی آئی کے پاس بھی تفصیل موجود نہیں!

مرکز کی مودی حکومت نے بلیک منی پر قدغن لگانے کے مقصد سے 2016 میں نوٹ بندی ضرور کی، لیکن اس مقصد میں کامیابی قطعاً ملتی ہوئی نظر نہیں آ رہی ہے۔ اپوزیشن پارٹیوں نے نوٹ بندی کے وقت بھی مرکز کے اس فیصلے پر سوالیہ نشان لگایا تھا،

ہندوستان میں 10 سالوں کے دوران شرح پیدائش میں 20 فیصد کی گراوٹ، رپورٹ میں انکشاف

 پچھلے 10 سالوں میں ہندوستان میں عام زرخیزی کی شرح (جی ایف آر) میں 20 فیصد کی کمی درج کی گئی ہے۔ اس کا انکشاف حال ہی میں جاری کردہ سیمپل رجسٹریشن سسٹم (ایس آر ایس) ڈیٹا 2020 میں ہوا ہے۔ جی ایف آر سے مراد 15-49 سال کی عمر کے گروپ میں ایک سال میں فی 1000 خواتین پر پیدا ہونے والے بچوں کی تعداد ...

الیکشن کمیشن نے تین برسوں میں جموں و کشمیر کی 7 سیاسی جماعتوں کو رجسٹر کیا

الیکشن کمیشن آف انڈیا (ای سی آئی) نے گزشتہ تین برسوں کے دوران جموں و کشمیر کی7 سیاسی جماعتوں کو رجسٹر کیا ہے جن میں کچھ غیر معروف جماعتیں بھی شامل ہیں۔ ای سی آئی ریکارڈس کے مطابق کمیشن نے سال 2019 سے تمام ضروری لوازمات کی ادائیگی کے بعد جموں و کشمیر کی 7 سیاسی جماعتوں کو رجسٹر ...

بامبے ہائی کورٹ سے گوشت کے اشتہارات پر پابندی کی درخواست خارج

بامبے ہائی کورٹ نے ٹی وی اور اخبارات میں نان ویجیٹیرین کھانے کے اشتہارات پر پابندی لگانے کی درخواست خارج کر دی ہے، چیف جسٹس دیپانکر دتہ اور جسٹس مادھو جمدار نے پیر کو جین چیریٹیبل ٹرسٹ کی عرضی کو یہ کہتے ہوئے خارج کر دیا کہ عدالت صرف اس صورت میں مداخلت کر سکتی ہے جب شہریوں کے ...

پی ایف آئی پر پھر چھاپے، شاہین باغ میں دبش، جامعہ میں دفعہ 144 نافذ

نیشنل انویسٹی گیشن ایجنسی (این آئی اے) سے ملی لیڈ کی بنیاد پر، 8 ریاستوں کی پولیس نے آج یعنی منگل کو ملک بھر میں پاپولر فرنٹ آف انڈیا (پی ایف آئی) کے کئی مقامات پر چھاپے مارے۔ نیوز پورٹل ’آج تک‘ پر شائع خبر کے مطابق اسے دوسرے راؤنڈ کا چھاپہ بتایا جا رہا ہے۔