بورویل سے 110 گھنٹے بعد باہر نکالے گئے فتح ویر زندگی کی جنگ ہار گیا  

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 11th June 2019, 10:37 PM | ملکی خبریں |

سنگ رور/لدھیانہ11 جون (ایس او نیوز/آئی  این ایس انڈیا) پنجاب کے سنگ رور میں 150 فٹ گہری بورویل میں گرے دو سالہ بچہ کو قریب 110 گھنٹے بعد منگل کی صبح باہر تو نکال لیا گیا لیکن اس کی جان نہیں بچائی جا سکی۔ متاثر بچہ نے اتنی مشقت کے بعد جان کی بازی گنوا بیٹھا۔ حکام نے بتایا کہ’نیشنل ڈیزاسٹر فورس‘ کے اہلکاروں نے صبح قریب ساڑھے پانچ بجے کے بچے کو بورویل سے باہر نکالا تھا۔ سنگ رورڈپٹی کمشنر نے بتایا کہ پولیس سیکورٹی کے درمیان بچے کو چندی گڑھ کے اسپتال لے جایا گیا۔ ہسپتال کے ڈاکٹروں نے بتایا کہ بچے کو مردہ حالت میں وہاں لایا گیا تھا۔طبی اہلکار نے کہا کہ لاش کو جلد ہی پوسٹ مارٹم کرایا جائے گا۔ انہوں نے بتایا کہ اس کے بعد ہسپتال بیان جاری کرے گا۔ گپتا نے بتایا کہ بچے کو صبح ہسپتال لائے جانے کے بعد اس کی لاش کو ’انت اطفال طبی مرکز منتقل کر دیا گیا۔ فتح ویر اسی پیر کو دو سال کا ہوا تھا. وہ سات انچ وسیع اور 125 فٹ گہری بورویل میں گر گیا تھا۔ وہ اپنے والدین کی اکلوتی اولاد تھا۔ فتح ویر سنگھ ضلع کے بھگوان پورہ گاؤں میں اپنے گھر کے قریب ایک سوکھے بورویل میں جمعرات کی شام قریب چار بجے گر گیا تھا۔ بورویل کپڑے سے ڈھکا ہوا تھا؛ اس لیے بچہ اتفاقاً اس میں گر گیا۔حکام نے بتایا کہ بچے کی ماں نے اسے بچانے کی کوشش کی تھی لیکن وہ اسے بچا نہیں پائی۔ بچے کو باہر نکالنے کے لئے وسیع سطح پر ایک ریسکیو آپریشن چلایا گیا تھا۔

ایک نظر اس پر بھی