صابیہ سیفی معاملہ پر شیموگہ میں پرزور احتجاج، مجرموں کو سخت سزا کا مطالبہ۔ شیموگہ پیس آرگنائزیشن کی پریس کانفرنس، ایس ڈی پی آئی کی جانب سے احتجاجی مظاہرہ

Source: S.O. News Service | Published on 11th September 2021, 2:43 PM | ریاستی خبریں |

شموگہ، 11؍ستمبر(ایس او نیوز؍پریس ریلیز) حال ہی میں دیش کا دل دلی میں صابیہ نامی لڑکی کی عصمت ریزی کے بعد بےرحمی سے اس کا قتل کیا گیا- اس معاملے کو لے کر کل شیموگہ میں ” شیموگہ پیس  آرگنائزیشن   کی جانب سے صحافتی کانفرنس کا اہتمام کیا گیا ۔ جس میں صحافیوں سے بات کرتے ہوئے  آرگنائزیشن   کے صدر جناب ریاض احمد نے کہا کہ صابیہ کے ساتھ جو حادثہ پیش آیا وہ انسانیت کو شرمسار کرنے والا ہے ۔ لیکن افسوس کے مرکزی حکومت اس پر خاموش ہے – اس کے علاوہ دلی کے وزیر اعلٰی اروند کیجریوال بھی کچھ نہیں بول رہے ہیں ۔  حاکموں کی بےحسی قابل افسوس ہے ۔ 

شعبہ خواتین کی ذمہ دار محترمہ یاسمین صاحبہ نے کہا کہ گاندھی نے کہا تھا جس دن رات میں ملک کی خواتین بےخوف گھومیں گی اُس دن صحیح معنوں میں ملل آزاد ہوگا ۔  لیکن آج دن کے اجالے میں راجدھانی میں اس طرح کے معاملے پیش آتے ہیں تو دیگر ریاستوں کا کیا ہوگا ۔ انہوں نے کہا کہ صرف قانون بنانے سے کچھ نہیں ہوتا بلکہ اس قانون پر سختی سے عمل بھی ہونا چاہئیے ۔  اس طرح کی وارداتوں سے دیش کی بیٹیاں خوفزدہ ہیں – اس وقت حکومت کو سنجیدہ ہونا ہوگا – دیش کی بیٹیوں کو بےخوف جینے کی آزادی دینی ہوگی – ایسے وحشی درندوں پر سخت کاروائی کی جانی چاہئیے – آرگانائزیشن نے صابیہ کے قاتلوں کو سخت سزا کا مطالبہ کیا ہے – اور اس معاملے کی کھُل کر مذمت کی ہے – اس کے بعد ڈپٹی کمشنر کے ذریعہ حکومت کو عرضداشت پیش کی گئی- اس موقعہ پر ہیس آرگانائزیشن کے صدر ریاض آحمد, آرگانائزیشن کے شعبہ خواتین سے یاسمین, وحیدہ فردوس, ممتاز, احساس نایاب کے علاوہ دیگر ذمہ داراں موجود تھے ۔

اسی کے ساتھ دوپہر میں شیموگہ ایس ڈی پی آئی کی جانب سے صابیہ سیفی معاملہ کی مخالفت میں پرزور احتجاجی مظاہرہ کیا گیا – شہر کے ڈی سی کمپاؤنڈ میں احتجاجی مظاہرہ کرتے ہوئے ایس ڈی پی آئی نے حکومت کے خلاف نعرے بازی کرتے ہوئے اپنے غم و غصہ کا اظہار کیا ہے – ایس ڈی پی آئی نے قاتلوں کو سخت سزا کا مطالبہ کیا ہے – اور حکومت کی خاموشی پر سوال کھڑے کئے ہیں – انہونے کہا کہ آئے دن دیش میں عصمت ریزی اور قتل کے معاملوں میں اضافہ حکومت کی ناکامی ثابت کرتا ہے – دیش میں خواتین کے تحفظ کو لے کر سخت قوانین بنائے جانے پر زور دیا ہے – احتجاج کے بعد ایس ڈی پی آئی کی جانب سے مرکزی و ریاستی حکومت کو ڈپٹی کمشنر کے ذریعہ عرضداشت پیش کی گئی – عرضداشت میں کہا گیا کہ اس معاملہ کی سی بی آئی کے ذریعہ سرے سے جانچ ہونی چاہئے اور مجرموں کو سخت سے سخت سزا ہونی چاہئے – اس موقعہ پر ایس ڈی پی آئی کے مقامی ذمہ داراں اور شہر کے دیگر نوجوان کثیر تعداد میں شریک تھے ۔

ایک نظر اس پر بھی

کرناٹک سے روزانہ 2100کلو بیف گوا کو سپلائی ہوتاہے : وزیر اعلیٰ پرمود ساونت

بی جے پی کی اقتدار والی ریاست کرناٹک سے روزانہ 2000کلوگرام سے زائد جانور اور بھینس کا گوشت (بیف)گوا کو رفت ہونےکی جانکاری بی جے پی اقتدار والی ریاست گوا کے وزیرا علیٰ پرمود ساونت نے دی۔ وہ گوا ودھان سبھا کو تحریری جواب دیتےہوئے اس بات کی جانکاری دی ۔

کرناٹک کے داونگیرے میں ایک لڑکی نے والدین سمیت 4 افرادکو سلایا موت کی نیند؛ کیا ہے پورا واقعہ

کرناٹک میں ایک لڑکی نے امتیازی سلوک سے تنگ آکر اپنے پورے خاندان کو زہر دے کر ہلاک کردیا۔ جب فارنسک رپورٹ منظر عام پر آئی تو انکشاف ہوا کہ اس خاندان کی موت رات کے کھانے میں پائے جانے والے زہر سے ہوئی۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق داونگیر میں ایک 17 سالہ لڑکی کو کچھ عرصے سے اپنے خاندان ...

ہبلی میں مبینہ تبدیلی مذہب کی مخالفت کرتے ہوئے شدت پسند ہندو تنظیموں کے کارکنوں نے چرچ کے اندر گھس کر گایا بھجن

ہبلی میں تبدیلی مذہب کی مخالفت کرتے ہوئے ہندو شدت پسند تنظیموں کے کارکنوں نے ایک چرچ کے اندر گھس کر بھجن گانا شروع کردیا جس کی وائرل ہونے والی ویڈیو میں درجنوں مرد و خواتین کو دیکھا گیا ہے کہ وہ کس طرح ہبلی کے بیری ڈیوارکوپا چرچ کے اندر بیٹھے ہاتھ جوڑ کر بھجن گارہے ہیں۔

ایڈی یورپاکی عوامی تحریکوں میں کروبا طبقے کاتعاون اہم رہاہے:راگھویندرا

تعلقہ میں بی ایس ایڈی یورپاکے تمام عوامی وفلاحی تحریکوں میں کروبا طبقہ کا تعاون اہم رہاہے،اس کے بدلے میں ایڈی یورپانے بھی اپنے دور اقتدار میں طبقے کی ترقی کیلئے جتنابھی ممکن ہوسکے کام کیا اور ہر طرح سے امداد فراہم کی۔یہ بات رکن پارلیمان بی وائی راگھویندرانے کہی۔