بھٹکل میں موگیر سماج کے طلبا کا احتجاج : ایس سی سہولیات جاری رکھنے کا مطالبہ

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 21st June 2022, 11:01 PM | ساحلی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

بھٹکل:21؍ جون   (ایس اؤ نیوز) جس طرح حکومت کی جانب سے پہلے پسماندہ ذات کی سہولیات دی جارہی تھیں اس کو دوبارہ جاری کرنےکا مطالبہ لےکر موگیر سماج کے اسکول اورکالج کے طلبا نے کلاسوں کا بائیکاٹ کرتے ہوئے احتجاج کیا۔ موسلا دھار بارش کے چلتے طلبا احتجاج کے ذریعے بی ای اؤ دفتر پہنچ کر  اپنے مطالبات کو پیش کرنے میں کامیاب ہوئے۔

شمس الدین سرکل پر جمع ہوئے طلبا بابا صاحب امبیڈکر کی حمایت  میں نعرے بازی کرتے ہوئے بی ای اؤ دفتر کا گھیراؤ کیا۔ طلبہ نے بلاک ایجوکیشن آفسر کو بتایا کہ موموگیر سماج  پچھلے 91دنوں سے جدوجہد کررہا ہے،  لیکن حکومت ہے کہ انصاف دینے کا کام نہیں کررہی ہے، جس سے طلبا کے ساتھ بھی ناانصافی ہورہی ہے۔ طلبا نے محکمہ تعلیمات عامہ سے انصاف کا پرزور مطالبہ کیا۔ اس موقع پر طلبا نے بی ای اؤ کے سامنے اپنے مطالبات پیش  کرتے ہوئے بتایا کہ  سال 1976سے اترکنڑا ضلع میں موگیر سماج کو دستوری طورپر پسماندہ ذات کی سہولیات دی جارہی تھیں مگر 2004سے حکومت نے ان سہولیات کو روک دیا ہے۔طلبہ نے زور دیا کہ  اسکول اور  کالج کی سرٹی فیکٹ میں ان کی ذات کے خانے میں ایس سی درج  کیا جائے

موگیر سماج کا کہنا ہے کہ حکومت پچھلے 14برسوں سے ان کے حق کو چھین رہی ہے۔ان کا مطالبہ ہے کہ  دوبارہ  ایس سی کی سہولیات فراہم کی جائیں۔ احتجاجیوں کا کہنا ہے کہ ان  کے  ماں باپ کی سرٹی فیکٹ میں ان کی ذات  ایس سی(شیڈول کاسٹ)  درج ہے لیکن اس کے باوجود  ہمیں سہولیات نہیں دی جارہی ہے۔

احتجاجیوں کا کہنا ہے کہ جب حکومت نے موگیر سماج کو ایس سی کی سہولیات دینا بند کردیا تو ہم نے ہائی کورٹ اورسپریم کورٹ کا دروازہ کھٹکھٹایا ۔ عدالت نے بھی موگیر سماج کو ایس سی قرار دیا  اس کے علاوہ قومی ایس سی ، ایس ٹی کمیشن نے بھی موگیر سماج کے تعلق سے بتایا کہ  ہم لوگ  ایس سی کی سہولیات حاصل کرنےکی اہل ہیں۔ احتجاجیوں نے مطالبہ کیا کہ  ان سب  حالات کو سامنے رکھتےہوئے ہمیں ایس سی سہولیات فراہم کی جائے۔ احتجاجی طلبہ نے بتایا کہ  ذات پات کے معاملےکولے کر ان کی تعلیم بھی متاثر ہورہی ہے۔

بھٹکل اسسٹنٹ کمشنر دفتر کے روبرو گذشتہ 91دنوں سے موگیر سماج کے شہری غیر معینہ مدت کا احتجاج جاری رکھے ہوئے ہیں۔ حکومت کےکانوں پر جوں تک نہیں رینگ رہی ہے ، سرکار بہانے کررہی ہے۔طلبہ نے متنبہ کرایا کہ  اگر حکومت ہمارے مطالبات کو منظور نہیں کرتی  تو   ہم آئندہ دنوں میں اسکول  جانا بند کردیں گے۔ طلبا کی نمائندگی کرتےہوئے تلک موگیر، سمردھی موگیر اور یشوسوی نے بتایا کہ ہم  اگلے تین دن تک انتظار کریں گے کہ  ہمارے مطالبات کو منظور کیا جائے۔ بی ای اؤ دفتر  سے نکل کر  اے سی دفتر کے سامنے جائے احتجاج پہنچ کر طلبا نے موسلا دھار بارش کے دوران بھی اپنے فلک شگاف نعروں کو بلند رکھتےہوئے اپنی برہمی کااظہارکیا۔

ایک نظر اس پر بھی

موڈ بیدری میں انجینئرنگ کالج کمپاونڈ کی دیوار گرنے سے 4 کاروں کو نقصان 

میجارو گرام پنچایت حدود میں واقع مینگلورو انسٹی ٹیوٹ آف ٹیکنالوجی اینڈ انجینئرنگ (مائٹ) کی کمپاونڈ وال بھاری برسات کی وجہ سے گر گئی جس کے نتیجہ میں حالانکہ کسی کا جانی نقصان نہیں ہوا مگر وہاں پارک کی گئی طلبہ اور والدین کی 4 کاروں کو نقصان پہنچا ۔ 

اتر کنڑا ضلع میں موسلادھار بارش جاری : یلاپور میں بجلی لائن درستی کے دوران ایک شخص فوت ،درخت اور بجلی کے کھمبے گرنےسے نقصانات

اترکنڑا ضلع میں منگل کو بھی موسلادھار بارش جاری رہی۔ کاروار، بھٹکل ، سرسی ، یلاپور سمیت کئی تعلقہ جات میں رک رک کر طوفانی ہواؤں کےساتھ تیز رفتار بارش برستی رہی ہے۔ سڑکیں، قومی شاہراہیں ، گلی محلوں میں بارش کا پانی جمع ہونےسے چھوٹے چھوٹے تالاب بن گئے ہیں ، بجلی کے کھمبے اور ...

بھٹکل سمیت اُترکنڑا میں موسلادھار بارش کا سلسلہ جاری؛ کل بدھ کو بھی اسکولوں اور کالجوں میں چھٹی کا اعلان

بھٹکل سمیت ضلع اُترکنڑا میں موسلادھار بارش کا سلسلہ جاری ہے جسے  دیکھتے ہوئے اُترکنڑا  ڈپٹی کمشنر ملئے مہیلن نے کل بدھ کو بھی پیشگی حفاظتی انتظامات کے تحت  اسکول اور کالجس سمیت تمام تعلیمی اداروں میں چھٹی کا اعلان کیا ہے۔ بھٹکل کی طرح ہوناور، کمٹہ ، انکولہ اور کاروار میں ...

گھریلو ایل پی جی سلنڈر کے داموں میں 50 روپے کا اضافہ

عوام کو اس وقت مہنگائی کا بڑا جھٹکا لگا جب ایل پی جی سلنڈر کے داموں میں اضافہ ہو گیا۔ گھریلو ایل پی جی سلنڈر کی قیمت میں بدھ کے روز 50 روپے فی سلنڈر اضافہ ہوا ہے۔ بڑھتی ہوئی قیمتوں کا اطلاق آج سے ہو گیا ہے۔ اس اضافے کے بعد دہلی میں ایل پی جی سلنڈر 1053 روپے فی سلنڈر کے حساب سے دستیاب ...

انڈونیشیا کے سمندر میں لاپتہ ہونے والے 15 ماہی گیروں کی تلاش جاری

 انڈونیشیا کے بحیرہ ارافورا میں ایک کشتی ڈوبنے سے لاپتہ ہونے والے 15 ماہی گیروں کی تلاش جاری ہے۔ انڈونیشیا کے صوبے پاپوا کے ضلع میروکے میں سرچ اور ریسکیو آفس کے ترجمان درماوان ویدی نے بتایا کہ کے ایم سیتیا مکمور 06 کشتی گزشتہ ہفتے خراب موسم کی وجہ سے سمندر کی تیز لہروں کی زد میں ...

کاروار: ضلع میں موسلادھار بارش ، انموڈگھاٹ سے گزرنے والی گوا۔ بیلگام قومی شاہراہ پر پہاڑ کھسکنےسے سواریوں کی آمد ورفت بند

تیز رفتار بھاری بارش ہونےکی وجہ سے انموڈ گھاٹ کے دودھ ساگر درگاہ کے قریب بیلگام۔ گوا قومی شاہراہ 4اے پر پہاڑ کھسکنے سے سواریوں کی آمد ورفت مکمل طورپر بند ہوگئی ہے۔