اقتصادی بحران: مودی حکومت پر پرینکا گاندھی کا حملہ جاری، کہا، گہری کھائی میں گری معیشت، کب جاگے گی حکومت؟

Source: S.O. News Service | Published on 10th September 2019, 9:52 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،10ستمبر(ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا) ملک میں اقتصادی بحران کے بعد سے کانگریس لیڈر پرینکا گاندھی مرکز کی نریندر مودی حکومت پر حملہ آور ہیں۔پرینکا گاندھی نے آج ٹویٹ کرکے ایک بار پھر مرکزی حکومت پر نشانہ لگایا ہے۔پرینکا گاندھی نے کہا ہے کہ معیشت کساد بازاری کی گہری کھائی میں گرتے ہی جا رہی ہے،آخر حکومت اپنی آنکھیں کب کھولے گی؟۔پرینکا گاندھی نے ٹویٹ کرکے لکھا ہے کہ معیشت کساد بازاری کی گہری کھائی میں گرتے ہی جا رہی ہے،لاکھوں ہندوستانیوں کی روزی روٹی پر تلوار لٹک رہی ہے، آٹو سیکٹر اور ٹرک سیکٹر میں کمی پروڈکشن-ٹرانسپورٹیشن میں منفی نمو اور مارکیٹ کے ٹوٹتے اعتماد کا نشان ہے۔حکومت کب اپنی آنکھیں کھولے گی؟۔ پرینکا گاندھی ٹویٹر کے ذریعے مودی حکومت پر حملہ کرتی رہی ہیں۔اس سے پہلے انہوں نے ٹویٹ کر کے کہا تھاکہ الٹی گنتی: ہر دن مندی کی خبر اور ہر دن بی جے پی حکومت کی اس پر خاموشی: دونوں بہت خطرناک ہیں،اس حکومت کے پاس نہ حل ہے نہ ہم وطنوں کو بھروسہ دلانے کی طاقت ہے،صرف بہانے بازی، بیان بازی اور افواہیں پھیلانے سے کام نہیں چلے گا۔دراصل پرینکا گاندھی نے آج اپنے ٹویٹس میں ایک ویب سائٹ کی خبرشیئر کی ہے جس میں آٹو سیکٹر کی خراب حالتوں کا ذکر ہے،خبر میں کہا گیا ہے کہ ماروتی کے بعد اب اشوک لمیٹڈ نے اپنا چنئی پلانٹ پانچ دن بند رکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔

بتا دیں کہ ملک کی اقتصادی ترقی کی شرح (جی ڈی پی نمو ریٹ) 2019-20 کی اپریل جون سہ ماہی میں گھٹ کر پانچ فیصد رہ گئی۔یہ گزشتہ چھ سال سے سب سے کم سطح پر ہے۔مینوفیکچرنگ سیکٹر میں کمی اور زرعی پیداوار کی سست روی سے جی ڈی پی میں اضافہ میں یہ کمی آئی ہے۔مرکزی شماریات کے دفتر (سی ایس او) کی طرف سے جاری سرکاری اعداد و شمار میں یہ معلومات دی گئی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

سی بی آئی نے اپنے کئی افسران کے خلاف بدعنوانی اور عہدے کے غلط استعمال پردرج کئے مقدمات

سی بی آئی نے اپنے متعدد عہدیداروں کے خلاف بینک سے دھوکہ دہی کی ملزم کمپنیوں کی مدد کرنے کے سلسلے میں سرکاری عہدے کے غلط استعمال اور بدعنوانی کے مقدمات درج کئے اور جمعرات کی صبح ایک سرچ آپریشن کیا۔