لائن آف کنٹرول اور بین الاقوامی سرحد پر ’اینٹی ڈرون‘ سسٹم نصب کرنے کی تیاری!

Source: S.O. News Service | Published on 3rd August 2021, 11:50 PM | ملکی خبریں |

جموں،3؍اگست (ایس او نیوز؍ایجنسی) جموں و کشمیر میں ڈرونز کے بڑھتے ہوئے خطرات کے پیش نظر حکومت اس یونین ٹریٹری میں لائن آف کنٹرول اور بین الاقوامی سرحد پر عنقریب 'اینٹی ڈرون' سسٹم نصب کرے گی۔ انٹیلی جنس رپورٹس کے مطابق ملی ٹنٹوں نے بین الاقوامی سرحد کے اُس پار شکر گڑھ علاقے میں مکمل کنٹرول روم قائم کئے ہیں۔ انٹیلی جنس ذرائع نے بتایا کہ لشکر طیبہ اور جیش محمد نامی ملی ٹنٹ تنظیموں نے آئی ایس آئی کی مدد سے شکر گڑھ میں ڈرون کنٹرول روم قائم کئے ہیں تاکہ ملی ٹنٹ کارروائیوں کو انجام دیا جا سکے۔ انہوں نے بتایا کہ شکر گڑھ نامی ایک بریگیڈ نے اس کے لئے تربیت یافتہ انجینئروں کو کام پر لگا دیا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ شکر گڑھ بریگیڈ ہی جموں خطے میں ڈرونز کو بھیج رہا ہے۔

دریں اثنا ذرائع نے یو این آئی کو بتایا کہ ڈرون حملوں کا مقابلہ کرنے کے لئے حکومت ایل او سی اور بین الاقوامی سرحد پر 'اینٹی ڈرون' سسٹم نصب کرنے والی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ اس سسٹم کو ملک کے دفاعی نظام کو مستحکم کرنے والے ادارے متعارف کر رہے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ بی ایس ایف ٹرائل بنیادوں پر یہ سسٹم نصب کرنے کے بارے میں بہت جلد فیصلہ لے گی۔

بی ایس ایف کے ایک سینئر افسر نے اپنا نام مخفی رکھنے کی خواہش ظاہر کرتے ہوئے تصدیق کی کہ سرحد پر بہت جلد 'اینٹی ڈرون سسٹم' نصب کیے جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ اس سسٹم کو نصب کرنے سے پہلے کچھ مخصوص جگہوں پر ٹیسٹ کیا جائے گا۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ یہ اینٹی ڈرون سسٹم چار کلو میٹر کے دائرے میں گردش کرنے والے ڈرونز کا پتہ لگانے کی صلاحیت رکھتا ہے۔ بتا دیں کہ جموں ایئر اسٹیشن پر 27 جون کو ہوئے ڈرون حملے کے بعد علاقے میں ڈرونز کی سرگرمیوں میں اضافہ درج ہو رہا ہے اور لگ بھگ آئے روز مشتبہ ڈرونز کو پرواز کرتے ہوئے دیکھا جا رہا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

ہریانہ: بی جے پی کے کئی رہنما اپنے حامیوں کے ساتھ کانگریس میں شامل

 ہریانہ بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے کئی رہنما اپنے حامیوں کے ساتھ آج کانگریس میں شامل ہو گئے۔ یہ لیڈر یہاں ریاستی کانگریس ہیڈ کوارٹر میں ریاستی کانگریس کی صدر کماری سیلجا کی موجودگی میں پارٹی میں شامل ہوئے۔