بی بی ایم پی انتخابات کے لئے ریاستی الیکشن کمیشن کی تیاری ، ووٹر لسٹوں پر نظر ثانی کیلئے وارڈوں کی بنیاد پر افسروں کا تقرر

Source: S.O. News Service | Published on 23rd July 2022, 12:35 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو، 23؍جولائی(ایس او  نیوز) برہت بنگلور و مہا نگر پالیکے (بی بی ایم پی) انتخابات کروانے کے لئے ریاستی الیکشن کمیشن کی طرف سے بڑے پیمانے پر تیاری شروع کر دی گئی ہے۔ ووٹر لسٹوں کی تیاری، نظرثانی اور ناموں کے اندراج اور تصحیح کے لئے الیکشن کمیشن کی طرف سے افسروں کے تقرر کا اعلان کیا گیا ہے۔ اس سلسلہ میں ایک گیزیٹ نوٹی فکیشن جمعہ کے روز جاری کیا گیا۔ریاستی الیکشن کمیشن کے انڈر سکریٹری کی طرف سے جاری خصوصی گیزیٹ میں واضح طور پر بتایا گیا ہے کہ کارپوریشن انتخابات کے لئے ہی ووٹر لسٹوں پر نظر ثانی کرنے کے مقصد سے یہ نوٹی فکیشن جاری کیا جا رہا ہے۔ اس کے لئے بنگلورو اربن ضلع اور بی بی ایم پی کے اسپیشل کمشنر اور جوائنٹ کمشنر ساؤتھ، جوائنٹ کمشنر مہادیو پورا کومختلف وارڈوں کے لئے ریجنل الیکشن آفیسر بنایا گیا ہے۔ ان کے علاوہ بی بی ایم پی کے جائنٹ کمشنرو ں کو اسمبلی حلقوں کی بنیاد پر آنے والے وارڈوں کے لئے انچارج مقرر کیا گیا ہے۔ ان افسروں کے ماتحت جو بھی وارڈ آئیں گے ان میں ووٹر لسٹوں کی تیاری ان کے ذمہ ہو گی۔

ایک نظر اس پر بھی

انکولہ - ہبلی ریلوے لائن منصوبہ : مرکزی حکومت کے وفد نے کیا مختلف مقامات کا معائنہ

ریاستی ہائی کورٹ کے حکم کے مطابق انکولہ - ہبلی ریلوے منصوبے پر عمل پیرائی کے سلسلے میں مثبت اور منفی پہلووں کا جائزہ لینے کے  مرکزی حکومت کے ایک وفد نے انکولہ اور یلاپور تعلقہ جات میں مختلف جنگلاتی علاقوں کا معائنہ کیا۔

صدر جمہوریہ دروپدی مرمو نے میسور و کے دس روزہ دسہرہ تقریبات کا افتتاح کیا

دوماہ کی تیاریوں کے بعد آج بروز پیر صدر جمہوریہ دروپدی مرمو نے میسور کے چامنڈی پہاڑ پر دس روزہ دسہرہ تقریبات کا چامنڈیشوری دیوی کی مورتی پر پھول نچھاور کرکے افتتاح کیا۔ پہلے صدر جمہوریہ نے چامنڈیشوری دیوی کے درشن کئے اور اس مندر کی تاریخ کے تعلق سے تفصیل سے جانکاری حاصل کی۔

ذہنی دباؤ بیسویں صدی کا ایک مہلک مرض؛ آئیٹا گلبرگہ کے ورک شاپ سے ڈاکٹر عرفان مہا گا وی کا خطاب

نئے دور کی شدید ترین بیماریوں میں ذہنی دباؤ اور اس سے پیدا ہونے والے اثرات کو مہلک امراض میں شمار کیا جاتا ہے ۔ روز مرہ کی مشینی زندگی میں ذہنی دباؤ  میں بہت زیادہ اضافہ ہوا ہے ۔ لیکن اس کو کیسے کم کیا جائے اس پر غور کر نے اور اس سلسلے میں کوشش کرنے کی ضرورت ہے ۔

پی ایف آئی پر ای ڈی اور این آئی اے کے کریک ڈاون کے بعد ایس ڈی پی آئی نے کہا؛ ایجنسیوں نے کبھی بھی آر ایس ایس اور اس سے منسلک تنظیموں پر چھاپہ نہیں مارا

 سوشیل ڈیموکریٹک پارٹی آف انڈیا (SDPI) کرناٹک یونٹ نے بنگلور میں اپنے ریاستی مرکزی دفتر میں ایک پریس کانفرنس کا انعقاد کرتے ہوئے الزام لگایا کہ ای ڈی اور این آئی اے نے کبھی بھی آر ایس ایس اور اس سے منسلک تنظیموں پر چھاپہ نہیں مارا بلکہ صرف پاپولرفرنٹ آف انڈیا کو ہی نشانہ بنایا ...