کرناٹک کے کندگول اور چنچولی حلقوں میں آج ہوگی پولنگ؛ 85 پولنگ بوتھوں کو قرار دیا گیا ہے حساس

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 19th May 2019, 4:13 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو۔19/مئی(ایس او  نیوز) ریاست کرناٹک  کے دو اسمبلی حلقوں کندگول اور چنچولی کے لئے آج اتوار کو  ووٹ ڈالے جائیں گے۔ دونوں حلقوں پر کامیابی درج  کرنے کے لئے کانگریس جے ڈی ایس اتحاد اور بی جے پی نے ایڑی چوٹی کا زور لگایا ہے۔

یاد رہے کہ کندگول اسمبلی حلقے کی نمائندگی کرنے والے ریاستی وزیر سی ایس شیولی کی موت واقع ہوگئی تھی جس کے سبب یہاں ضمنی انتخابات کئے جارہے ہیں، جبکہ چنچولی حلقے سے منتخب کانگریس رکن امیش جادھونے پارٹی کے خلاف بغاوت کرتے ہوئے اسمبلی رکنیت سے استعفیٰ دیا تھا اور بی جے پی میں شامل ہوگئے تھے  جس کے نتیجے میں یہاں ضمنی انتخاب کروایا جارہاہے۔

ان دونوں حلقوں کا انتخاب کانگریس اور بی جے پی دونوں کے لئے کانٹے کی ٹکر سمجھا جارہا ہے۔ بی جے پی کو امید ہے کہ ان دونوں حلقوں میں کامیابی کے بعد وہ ریاست کے اقتدار سے اور کچھ قریب پہنچ جائے گی تو دوسری طرف کانگریس اور جے ڈی ایس اتحاد کو یہ یقین ہے کہ ان حلقوں میں کامیابی کے ذریعے مخلوط حکومت کواور زیادہ مستحکم کیا جاسکے گا۔ سرکردہ کانگریس رہنما بشمول سابق وزیراعلیٰ سدرامیا نے دونوں حلقوں میں اپنے امیدواروں سشما شیولی اور سبھاش راتھوڑ کے لئے زور دار مہم چلائی ہے، کانگریس کا ساتھ دینے کے لئے وزیراعلیٰ کمار سوامی نے بھی دودن ان حلقوں میں انتخابی مہم میں حصہ لیا۔ کل شام دونوں حلقوں میں انتخابی مہم ختم ہوئی اور کل صبح سات سے شام چھ بجے تک دونوں حلقوں میں ووٹنگ ہوگی۔پولنگ کے لئے الیکشن کمیشن کی طرف سے سخت انتظامات کئے گئے ہیں۔ دونوں حلقوں میں حفاظتی انتظامات کے لئے ریاستی پولیس کے ساتھ مرکزی دستوں کو بھی متعین کیا گیا ہے۔ 

85 پولنگ بوتھوں کو قرار دیا گیا ہے حساس:   کندگول اور چنچولی اسمبلی حلقوں میں جملہ 85 پولنگ بوتھوں کو حساس قرار دیا گیاہے جس میں سب سے زیادہ یعنی 60 پولنگ بوتھ صرف چنچولی حلقہ میں ہیں۔ اخبارنویسوں کو معلومات فراہم کرتےہوئے چیف الیکٹرل آفسر سنجیو کمار نے بتایا کہ سبھی حساس پولنگ بوتھوں پر  زائد سیکوریٹی فراہم کی گئی ہے اور وہاں سخت نگرانی رکھنے کے اقدامات کئے گئے ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

کاسرگوڈ میں جانور لے جانے کے الزام میں دو لوگوں پر حملہ؛ بجرنگ دل کارکنوں کے خلاف معاملات درج کرنے پر مینگلور کے قریب وٹلا اور بنٹوال میں بسوں پر پتھراو

پڑوسی ریاست کیرالہ کے  کاسرگوڈ میں جانور لے جانے کے الزام میں دو لوگوں پر حملہ اور لوٹ مار کی وارداتوں کے بعد پولس نے جب  بجرنگ دل کارکنوں کے خلاف معاملات درج کئے  تو  مینگلور کے قریب  وٹلا اور بنٹوال  میں  بسوں پر پتھراو اور توڑ پھوڑ کی واردات پیش آئی ہے۔ پتھراو میں   نو ...