خواتین کے تئیں جنسی جرائم کی سیاسی ذمہ داری طے ہو: کانگریس

Source: S.O. News Service | Published on 10th September 2019, 10:23 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،10؍ستمبر(ایس او نیوز؍یو این آئی) کانگریس نے ملک، بالخصوص اترپردیش میں خواتین اور بچوں کے تئیں بڑھتے ہوئے جنسی استحصال کے لئے مرکزی حکومت اور ریاستی حکومت کی سخت تنقید کرتے ہوئے کہا کہ ایسے جرائم کے لئے سیاسی ذمہ داری طے کی جانی چاہئے اور قصورواروں کے خلاف کارروائی ہونی چاہئے۔

کانگریس کی ترجمان راگنی نائک نے یہاں پارٹی ہیڈکوارٹر میں ایک پریس کانفرنس میں کہا کہ بھارتیہ جنتا پارٹی کی حکومت کے دوران خواتین اور بچوں کے خلاف جنسی جرائم میں کافی اضافہ ہوا ہے۔انہوں نے اناؤ عصمت دری معاملہ، چنميانندمعاملہ اور اسکولوں میں بچوں کے ساتھ جنسی استحصال کے معاملات کا ذکر کرتے ہوئے اترپردیش میں جنسی جرائم کے اعداد و شمار بھی پیش کئے۔

نائک نے الزام لگایا کہ اناؤ عصمت دری معاملے کے ملزمین کو بی جے پی کے لیڈروں کا تحفظ حاصل ہے اور پارٹی کے رکن پارلیمنٹ ملزم سے ملنے جیل میں جاتے ہیں اور تسلی دیتے ہیں۔. چنمیانند معاملے میں متاثرہ سے پوچھ گچھ کی جا رہی ہے جبکہ ملزم سے کوئی پوچھ گچھ نہیں کی گئی ہے۔ اس معاملے کی متاثرہ کے والد کو پولیس، انتظامیہ اور بی جے پی کے لیڈر دھمکی دے رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ بی جے پی حکومت میں عصمت دری کے ملزم کو سیاسی تحفظ فراہم کیا جا رہا ہے لہذا ایسے جرائم کے لئے سیاسی ذمہ داری بھی طے کی جانی چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ چنميانند معاملے کی متاثرہ اور اس کے اہل خانہ کو تحفظ فراہم کیا جانا چاہیے۔

ریس کانفرنس میں متاثرہ کاایک ویڈیو بھی دکھایا گیا جس میں وہ اپنی اور اپنے اہل خانہ کی جان كا خطرہ بتا کر ملزم کے خلاف کارروائی کرنے کا مطالبہ کر رہی ہے۔ متاثرہ کا کہنا ہے کہ اس کے معاملے کی ایف آئی آر اترپردیش کے شاہجہاں پور میں درج کی جائے اور اس پر کارروائی ہونی چاہئے۔ واضح رہے کہ سوامی چنميانند بی جے پی کے سینئر لیڈر ہیں اور مرکز میں وزیر رہ چکے ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

متھرا : کرشن مندر کے لئے مسجد کے انہدام کا اعلان کرنے والے دیو مراری کے خلاف ایف آئی آر

 ایودھیا میں بابری مسجد کو شہید کرنے کے بعد فیصلہ مندر کے حق میں آنے کے بعد سے ایک طبقہ کے حوصلہ بلند نظر آ رہے ہیں اور اب ان کی نظریں ملک کی دیگر ان مساجد پر مرکوز ہیں جہاں تنازعہ کھڑا ہوتا رہا ہے۔

یوپی میں نظم و نسق کی حالت کافی خراب: مایاوتی

بہوجن سماج پارٹی (بی ایس پی) سپریمو مایاوتی نے اترپردیش میں نظم ونسق پر سوالیہ نشان کھڑے کرتے ہوئے کہا کہ ریاست میں جرائم پر کنٹرول اور نظم ونسق کے معاملے میں سابقہ سماج وادی پارٹی(ایس پی) اور برسراقتدار بی جے پی میں اب کوئی فرق نہیں رہ گیا ہے۔

دبئی میں ایک سواری نے ایک شخص کو رونڈ ڈالا؛ مہلوک ایشیائی شخص کی شناخت ہنوز نہیں ہوپائی؛ پولس نے عوام سے کی تعاون کی اپیل

یہاں ایک سواری کی ٹکر میں ایک شخص ہلاک ہوگیا مگر اُس شخص کی شناخت ابھی تک معمہ بنی ہوئی ہے اور یہ کون ہے، کس ملک یا کس  شہر سے ہے کچھ پتہ نہیں چل پایا ہے۔ پولس کا کہنا ہے کہ یہ ایشیاء کے  کسی ملک سے تعلق رکھتا ہے۔