مونگیر فائرنگ واقعہ میں بڑا انکشاف، مورتی وِسرجن کے دوران پولس نے چلائی تھی گولی!

Source: S.O. News Service | Published on 30th October 2020, 11:25 PM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

مونگیر،30؍اکتوبر(ایس او نیوز؍ایجنسی) بہا رکے مونگیر میں مورتی وِسرجن کے دوران ہوئی فائرنگ معاملہ میں سی آئی ایس ایف کی ایک رپورٹ سامنے آئی ہے جس میں کئی حقائق کا پتہ چلا ہے۔ سی آئی ایس ایف کی رپورٹ کے مطابق مونگیر فائرنگ واقعہ میں پولس سے بڑی غلطی ہوئی تھی۔ رپورٹ کے مطابق مورتی وِسرجن کےد وران 26 اکتوبر کو پولس نے ہی گولی چلائی تھی۔ خبروں کے مطابق اس رپورٹ کی بنیاد پر مونگیر کے سابق ایس پی لیپی سنگھ پر کارروائی کی تلوار لٹک رہی ہے۔ واقعہ کے بعد ایس پی لیپی سنگھ نے دعویٰ کیا تھا کہ ہنگامہ کر رہے لوگوں نے فائرنگ کی تھی جس سے ایک نوجوان کی موت ہوئی۔ لیکن سی آئی ایس ایف رپورٹ میں اس کے برعکس بات سامنے آئی ہے۔

سی آئی ایس ایف کی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ 26 اکتوبر کی رات 11 بج کر 20 منٹ پر سی آئی ایس ایف کے 20 جوانوں کی ٹکڑی کو مورتی وِسرجن کے دوران حفاظتی اقدامات کے تحت ڈیوٹی کے لیے ضلع اسکول کے کیمپ سے بھیجا گیا تھا۔ رپورٹ کے مطابق ریاستی پولس نے ان 20 جوانوں کو 10-10 کی دو ٹکڑی میں تقسیم کر دیا۔ ان میں سے ایک گروپ کو ایس ایس بی اور بہار پولس کے جوانوں کے ساتھ دین دیال اپادھیائے چوک پر تعینات کیا گیا تھا۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ 26 اکتوبر کی رات تقریباً 11 بج کر 45 منٹ پر وِسرجن یاترا کے دوران عقیدتمندوں اور مقامی پولس کے درمیان تنازعہ شروع ہوا۔ تنازعہ کے بعد کچھ عقیدتمندوں نے پولس اور سیکورٹی فورسز پر پتھراؤ شروع کر دیا۔ رپورٹ میں مزید کہا گیا ہے کہ معاملہ بڑھنے کے بعد پولس کی جانب سے حالات کو قابو میں کرنے کے لیے سب سے پہلے ہوائی فائرنگ کی گئی۔ ایسے ماحول میں عقیدتمند مزید مشتعل ہو گئے اور پتھراؤ کرنے لگے۔

میڈیا ذرائع سے موصول ہو رہی خبروں کے مطابق رپورٹ میں سی آئی ایس ایف کے ہیڈ کانسٹیبل ایم گنگیا پر انساس رائفل سے 5.56 ایم ایم کی 13 گولیاں ہوا میں فائر کرنے کا الزام لگایا گیا ہے۔ بتایا جا رہا ہے کہ اس فائرنگ کی وجہ سے ہی بھیڑ بے قابو ہو گئی اور معاملہ بگڑ گیا۔

ایک نظر اس پر بھی

’ماہرین کی رائے کو نظر انداز کر کے صنعت کاروں کو بینک کھولنے کی اجازت دی گئی‘

 ریزرو بینک آف انڈیا (آر بی آئی) کے سابق گورنر رگھورام راجن اور سابق ڈپٹی گورنر ویرل آچاریہ کا کہنا ہے کہ حکومت اور مرکزی بینک نے بڑے صنعت کاروں کو بینک کھولنے کا لائسنس دیتے وقت ماہرین کی صلاح کو نظر انداز کر دیا۔

بھٹکل گُڈلک روڈ میں پائپ لائن بچھانے کے کاموں میں عوام کی طرف سے شکایات کے بعد بھٹکل میونسپل چیف نے واٹربورڈ کے آفسران کے ساتھ رکھی میٹنگ

بھٹکل کے کارگیدے اور گُڈلک روڈ میں  کل اتوار کو عوام الناس کی طرف سے انڈر گراونڈ ڈرینج (یو جی ڈی) کے پائپ لائن بچھانے اور چمبرس تعمیر کرنے کے دوران  کام کو غیر سائنٹیفک اور غیر معیاری قرار دینے کے بعد آج پیر کو بھٹکل میونسپل چیف پرویز قاسمجی نے کاروار سے  واٹر بورڈاور یوجی ڈی ...

بھٹکل قومی شاہراہ سے متصل جگہ پر امیوزمنٹ پارک کو منظوری دینے پر میونسپل کونسلروں کو اعتراض؛ اے سی کو دیا گیا میمورنڈم

قومی شاہراہ 66سے متصل زین لاڈج کے پڑوس میں کھلونوں کی  ایگزبیشن’’امیوز منٹ پارک‘‘ کو منظوری دینے سے نہ صرف شاہراہ پر ٹرافک کا مسئلہ ہوگا بلکہ شاہراہ کے فورلین کاکام بھی جاری ہےاور کووڈ-19کے چلتے عوام کے لئے مناسب نہیں ہے۔  منظوری کو رد کرنے کی مانگ لے کر  سماجی کارکن فیاض ملا ...

کرناٹک میں کورونامعاملات میں اضافہ ہواتو کالجوں کودوبارہ بندکرناناگزیرہوجائے گا: ڈاکٹرکے سدھاکر

دنیابھرمیں کوروناوائرس کی دوسری لہرکاآغازہوگیاہے۔ دہلی اوراحمدآبادمیں بھی دوسری لہرشروع ہوگئی ہے۔ ریاست میں کوروناوائرس کے معاملات میں اضافہ ہوتاہے توپھرکالجوں کوبند کرنا ناگزیرہوجائے گا۔

بی جے پی اپنے مرکزی وزیر کے لو جہاد کا کیا کرےگی: شیوپال سنگھ یادو

ملک میں ’لو جہاد‘ کا مدا اس وقت کافی سرخیوں میں ہے اور اترپردیش میں یوگی آدتیہ ناتھ کی حکومت اس کے لئے قانون بنانے والی ہے۔ بی جے پی کو چھوڑ کر تمام سیاسی پارٹیاں اس کی مخالفت کر رہی ہیں لیکن اتر پردیش حکومت اس کو مدا بنائے ہوئے ہے۔ پرگتی شیل سماج وادی پارٹی (لوہیا) کے صدر ...