اتر پردیش میں پولیس جابرانہ کارروائی کر رہی ہے: پرینکا گاندھی

Source: S.O. News Service | Published on 30th June 2020, 10:21 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،30؍جون(ایس او نیوز؍یو این آئی) کانگریس جنرل سکریٹری پرینکا گاندھی نے اترپردیش پولیس پر جابرانہ کارروائی کرنے کا الزام لگاتے ہوئے کہا کہ ریاست میں کانگریس کارکنان کو فرضی معاملوں میں پھنسایا جارہا ہے۔ پرینکا گاندھی نے منگل کے روز ٹوئٹ کرکے کہا کانگریس کے لیڈر اور کارکنان عوام کے امور پر آواز بلند کرنے کے پابند عہد ہیں۔ بی جے پی حکومت اترپردیش پولیس کو ظلم کا اوزار بناکر دوسری پارٹیوں کو آواز اٹھانے سے روک سکتی ہے، ہماری پارٹی کو نہیں۔ دیکھیے کس طرح یو پی نے ہمارے اقلیتی شعبے کے صدر کو رات کے اندھیرے میں اٹھایا۔ پہلے فرضی الزامات پر ہمارے ریاستی صدر کو چار ہفتوں کے لئے جیل میں رکھا‘‘۔

پرینکا گاندھی نے کہا کہ چاہے پولیس جابرانہ کارروائی کرے یا فرضی مقدموں میں پھنسائے لیکن کانگریس کارکنان ڈرنے والے نہیں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ’’یہ پولیسیا کارروائی جابرانہ اور غیر جمہوری ہے۔ کانگریس کے سپاہی پولیس کی لاٹھیوں اور فرضی مقدمات سے نہیں ڈرنے والے‘‘۔ اس کے ساتھ ہی انہوں نے ایک ویڈیو بھی پوسٹ کیا ہے جس میں اتر پردیش پولیس کانگریس کے اقلیتی سیل کے صدر شاہنواز عالم کو ان کے گھر سے گرفتار کرکے لے جا رہی ہے۔ پولیس نے ان پر گزشتہ برس 19 دسمبر کو لکھنٔو میں سی اے اے کی مخالفت میں ہوئے تشدد اور آگ زنی ہونے کا الزام لگایا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

ملک میں کورونا انفیکشن نے پھر بنایا ریکارڈ، 24 گھنٹوں میں ملے 22,771 نئے کیس، 442 لوگوں کی موت

ملک میں کورونا وائرس روز بروز شدید شکل اختیار کرتا جارہا ہے اور گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک میں کورونا وائرس کے ریکارڈ 22،771 نئے کیسز سامنے آئے ہیں ، جس سے متاثرین کی مجموعی تعداد بڑھ کر 6.48 لاکھ ہوچکی ہے۔

ممبئی میں موسلا دھار بارش، 38 مقامات پر پانی بھرگیا، ٹریفک جام سے عوام کو پریشانی

گزشتہ روز صبح ممبئی میں تین گھنٹوں تک جاری رہنے والی شدید بارش کے بعد کم سے کم 38 مقامات پر پانی بھرگیا، جس سے اندھیری اور سائن میں تین مقامات پر بڑے پیمانے پر ٹریفک جام ہوگیا اور ٹریفک کا رخ موڑنا پڑا۔

دہلی میں کورونا کے معاملات 94000سے زیادہ، 2900سے زیادہ لوگو ں کی موت

کورونا وائرس (کووڈ۔19) کا قہر رکنے کا نام نہیں لے رہا ہے اور راجدھانی میں کل 2520نئے معاملے سامنے آنے کے بعد متاثرین کی تعداد جمعہ کو بڑھ کر 94000سے زیادہ ہوگئی ہے اور 59مزید لوگوں کی موت کے ساتھ مرنے والوں کی تعداد 2923ہوگئی ہے۔