سوشانت سنگھ کیس: ایف آئی آر کے بعد سے ریا چکروتی غائب! لُک آؤٹ نوٹس ہو سکتا ہے جاری

Source: S.O. News Service | Published on 1st August 2020, 10:13 PM | ملکی خبریں |

پٹنہ،یکم اگست (ایس او نیوز؍ایجنسی) بالی ووڈ اداکار سوشانت سنگھ راجپوت کی موت معاملہ میں ان کی گرل فرینڈ ریا چکرورتی کی مشکلیں بڑھتی ہوئی نظر آ رہی ہیں۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق ایف آئی آر درج ہونے کے بعد سے ہی ریا چکرورتی اپنے گھر سے غائب ہیں۔ بہار پولس لگاتار ان سے رابطہ کرنے کی کوشش کر رہی ہے لیکن ریا کا موبائل بھی کئی دنوں سے بند پڑا ہے۔ اب خبر یہ سامنے آ رہی ہے کہ اس تعلق سے بہار پولس ریا چکرورتی کے خلاف لُک آؤٹ نوٹس جاری کر سکتی ہے۔ بتایا جا رہا ہے کہ پولس پہلے ریا کو تعزیرات ہند کی دفعہ 161 کے تحت نوٹس دے گی اور اس کے ساتھ انھیں کچھ سوال بھی بھیجے جائیں گے۔ پولس نے پوچھ تاچھ کے لیے سوالوں کی فہرست تیار کر لی ہے۔

اُدھر ایک نجی چینل سے بات کرتے ہوئے بہار کے وزیر اعلیٰ نتیش کمار نے کہا ہے کہ اگر سوشانت سنگھ کے والد کے کے سنگھ کہیں گے تو سی بی آئی جانچ ممکن ہے۔ انھوں نے کہا کہ سینئر ایڈووکیٹ کو اس کام میں لگایا گیا ہے اور پولس جانچ کر رہی ہے۔ اگر وہ کہیں گے تو ریاستی حکومت آگے ایکشن لے گی۔ اس میں دو ریاستوں کےد رمیان جھگڑے کی کوئی بات نہیں ہے۔ اس کے علاوہ خبر رساں ادارہ اے این آئی اے نے اپنے ذرائع کے حوالے سے بتایا کہ پٹنہ پولس اب سوشانت کی آخری فلم 'دل بے چارہ' تک سے جڑے سبھی لوگوں سے پوچھ تاچھ کرنے جا رہی ہے۔ پٹنہ پولس کی ٹیم فلم کے ان لوگوں سے بات کرے گی جو اس کو بنانے کے دوران سوشانت کے آس پاس رہے تھے۔ قابل ذکر ہے کہ پولس اس فلم کے ڈائریکٹر مکیش چھابڑا سے پوچھ تاچھ کر چکی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

”دہلی کا فساد بدلے کی کارروائی تھی۔ پولیس نے ہمیں کھلی چھوٹ دے رکھی تھی“۔فسادات میں شامل ایک ہندوتوا وادی نوجوان کے تاثرات

دہلی فسادات کے بعد پولیس کی طرف سے ایک طرف صرف مسلمانوں کے خلاف کارروائی جاری ہے۔ سی اے اے مخالف احتجاج میں شامل مسلم نوجوانوں اور مسلم قیادت کے اہم ستونوں پر قانون کا شکنجہ کسا جارہا ہے، جس پر خود عدالت کی جانب سے منفی تبصرہ بھی سامنے آ چکا ہے۔

کورونا کے خلاف لڑائی میں بہار حکومت سب سے پیچھے: یشونت سنہا

سابق مرکزی وزیر خزانہ یشونت سنہا نے کورونا وبا کے خلاف لڑائی میں حکومت بہار کو پھسڈی قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ مناسب وقت ملنے کے باوجود بھی حکومت اس سنگین صورت حال میں لوگوں کے لئے معقول انتظام کرنے میں ناکام رہی ہے۔

مدھیہ پردیش: کورونا سے کل 886 افراد ہلاک، 921 نئے معاملے

مدھیہ پردیش میں کورونا وائرس کووڈ۔19 کے انفیکشن میں مسلسل اضافہ ہو رہا ہے اور 921 نئے معاملے سامنے آنے کے بعد ان کی مجموعی تعداد بڑھ کر 33535 ہوگئی ہے۔ ان میں سے 23550 صحتیاب ہوچکے ہیں۔ سرگرم معاملوں کی تعداد 9099 ہے۔

ملک کے وزیرداخلہ کے بعد اب کرناٹک کے وزیراعلیٰ کی کورونا رپورٹ بھی نکلی پوزیٹیو؛ کرناٹک میں آج بھی کورونا کے معاملات پانچ ہزار سے زائد

کرناٹک کے وزیراعلیٰ بی ایس یڈی یورپا نے ٹویٹ کرتے ہوئے خبر دی ہے کہ اُن کی کوویڈ۔19 رپورٹ آج اتوار کو  پوزیٹیو پائی گئی ہے۔ رات قریب 11:30 بجے ٹویٹ کرتے ہوئے انہوں نے بتایا کہ ویسے تو وہ بالکل ٹھیک ٹھاک ہیں لیکن ڈاکٹروں کی ہدایت پر   احتیاطاً   اسپتال میں  ایڈمٹ ہوگئے ہیں۔