’کورونا سے شفایاب ہونے کے بعد بھی کئی لوگوں کو مہینوں تک آرام نہیں!‘ 40 فیصد افراد کو کسی نہ کسی مسئلہ کا سامنا

Source: S.O. News Service | Published on 19th January 2022, 5:33 PM | ملکی خبریں | عالمی خبریں |

نئی دہلی،19؍ جنوری (ایس او نیوز؍ایجنسی)  دنیا بھر میں کورونا سے شفایاب ہونے والے افراد پر کی گئی ایک تحقیق میں ان باتوں کا انکشاف ہوا ہے کہ کورونا وائرس سے شفایاب ہونے کے بعد بھی مہینوں تک لوگوں کو آرام نہیں ملتا اور وہ کووڈ کے بعد کی پریشانیوں میں مبتلا رہتے ہیں۔

میڈیا رپورٹ کے مطابق نومبر 2021 میں کی گئی تحقیق کے بعد پتہ چلا ہے کہ دنیا بھر میں کورونا سے شفایاب ہونے والے افراد میں سے 40 فیصد ایسے تھے جو کسی نہ کسی مسئلہ سے دوچار تھے۔

کورونا سے شفایاب ہونے کے بعد بھی کئی لوگوں کو جن مسائل کا سامنا کرنا پڑا ان میں تھوڑا کام کرنے کے بعد تھکان اور سانس لینے میں دشواری شامل ہیں۔ اس کے علاوہ کچھ لوگ دل کے عارضہ میں مبتلا ہو گئے ہیں جن میں کئی کی حالت اتنی خراب ہو گئی کہ موت تک واقع ہو گئی۔ ہندوستان میں بھی ایسے کئی کیسز سامنے آئے جن میں بعض لوگ کورونا سے صحت یاب ہو کر گھر پہنچنے کے  کچھ دن بعد ہی دل کا دورہ پڑنے سے انتقال کرگئے۔

ستمبر 2021 میں وزارت صحت نے کورونا سے شفایاب ہونے کے بعد مسائل سے نمٹنے کے لیے رہنما اصول جاری کیے تھے۔ یہ پہلا موقع تھا جب حکومت نے کووڈ کے بعد کی پیچیدگیوں کو باضابطہ طور پر تسلیم کیا تھا۔ وزارت صحت کے مطابق کووڈ-19 کے اسپتال میں داخل ہونے والے 20 سے 30 فیصد سنگین مریضوں میں دل کے پٹھوں میں مسائل دیکھے گئے۔ کورونا کو شکست دینے کے 60 دن بعد بھی 20 فیصد مریضوں کو سینے میں درد محسوس ہوا اور 10 فیصد مریضوں میں سینے میں سنسناہٹ جیسی علامات ظاہر ہوئیں۔

عالمی ادارہ صحت (ڈبلیو ایچ او) کے مطابق انفیکشن سے شفایاب ہونے کے بعد بھی کچھ علامات ہفتوں یا مہینوں تک برقرار رہ سکتی ہیں اور اسے 'لانگ کوویڈ' کہا جاتا ہے۔ تاہم، زیادہ تر لوگوں میں صرف ہلکی یا درمیانی علامات ظاہر ہوتی ہیں۔ علامات 10 سے 15 فیصد معاملات میں شدید ہوتی ہیں اور 5 فیصد معاملات میں بہت زیادہ شدید ہو سکتی ہیں۔

ڈبلیو ایچ او کا کہنا ہے کہ لوگ عام طور پر 2 سے 6 ہفتوں میں کووڈ سے صحت یاب ہو جاتے ہیں۔ کچھ معاملات میں مہینوں لگ سکتے ہیں۔ کورونا سے صحت یاب ہونے کے بعد بھی اگر علامات برقرار رہیں تو ایسے لوگ دوسروں کو متاثر نہیں کر سکتے۔ تاہم، بہت سے معاملات میں علامات شدید ہو سکتے ہیں اور اثر مستقل ہو سکتا ہے۔

کورونا سے شفایاب ہونے کے بعد کیا کرنا چاہیے؟

ستمبر 2021 میں وزارت صحت کی طرف سے رہنما خطوط جاری کئے گئے تھے۔ اس میں بتایا گیا تھا کہ کورونا سے شفایاب ہونے کے بعد کیا احتیاطی تدابیر اختیار کرنے کی ضرورت ہے۔

کورونا کے پیش نظر مناسب رویہ اختیار کریں، ماسک پہنیں اور فاصلہ رکھیں۔

مناسب مقدار میں گرم پانی کا استعمال کریں۔

ڈاکٹر کے مشورے پر یوگا، ورزش کریں۔

معالج کے مشورے سے سانس کی مشقیں کریں۔

ہر صبح اور شام چہل قدمی کریں۔

غذائیت سے بھرپور خوراک لیں، ایسی غذا کھائیں جو آسانی سے ہضم ہو۔

بہتر نیند لیں، آرام کریں۔ شراب اور سگریٹ سے دور رہیں۔

اگر آپ کو پہلے سے کوئی بیماری ہے تو اس کی دوا ڈاکٹر کے مشورے سے لیں۔

اپنی صحت پر خود نظر رکھیں۔ نبض، آکسیجن، بلڈ پریشر، شوگر لیول چیک کرتے رہیں۔

اگر گلے میں خراش ہو تو غرارے کریں یا بھاپ لیں۔

ایک نظر اس پر بھی

حجاب کیس: ججوں کو دھمکیاں دینے والے شخص کی درخواست ضمانت مسترد

بنگلورو کی ایک سیشن عدالت نے تمل ناڈو کے ترونیل ویلی سے تعلق رکھنے والے رحمت اللہ کی ضمانت کی درخواست مسترد کر دی ہے، جو حال ہی میں کلاس رومز میں حجاب پہننے پر فیصلہ سنانے والے کرناٹک ہائی کورٹ کے ججوں کی جان کو مبینہ طور پر خطرے میں ڈالنے کے الزام میں عدالتی حراست میں ہے۔ سٹی ...

اب کارڈ کے بغیر بھی اے ٹی ایم سے رقم نکالنا ہوا ممکن

آر بی آئی نے نیا اصول نافذ کر دیا ہے۔ اگر آپ کے پاس بینک کارڈ نہیں ہے اور آپ اے ٹی ایم سے رقم نکالنا چاہتے ہیں، تب بھی نکال سکتے ہیں۔ آر بی آئی نے تمام بینکوں سے کہا ہے کہ وہ کارڈ استعمال کیے بغیر رقم نکالنے کی سہولت فراہم کریں۔ تاہم،ایس بی آئی سمیت کچھ منتخب بینک پہلے ہی یہ سہولت ...

روس-یوکرین جنگ کے سبب عالمی غذائی بحران کا اندیشہ، لاکھوں لوگ نقص تغذیہ کے ہو سکتے ہیں شکار!

بی بی سی کی ایک رپورٹ کے مطابق اقوام متحدہ نے متنبہ کیا ہے کہ یوکرین پر روس کے حملہ سے جلد ہی عالمی غذائی بحران پیدا ہو سکتا ہے جو سالوں تک بنا رہ سکتا ہے۔ جنرل سکریٹری انٹونیو گٹیرس نے کہا کہ بڑھتی قیمتوں کے سبب غریب ممالک میں جنگ نے غذائی بحران کو بڑھا دیا ہے۔

سری لنکا: سمندر کے ساحل پر دو مہینے سے کھڑا ہے پٹرول سے لدا جہاز، حکومت کے پاس خریدنے کے لئے نہیں ہے پیسے !

سری لنکا  نے بدھ کے روز کہا کہ پٹرول سے لدا جہاز تقریباً دو ماہ سے اس کے ساحل پر کھڑا ہے لیکن اس کے پاس ادائیگی کے لیے غیر ملکی کرنسی نہیں ہے۔ سری لنکا نے اپنے شہریوں سے اپیل کی ہے کہ وہ اس ایندھن کے لیے قطار میں کھڑے ہو کر انتظار نہ کریں۔ تاہم سری لنکا کی حکومت نے کہا کہ ملک کے پاس ...

مہندا راج پکشے اور ان کے 15 ساتھی ملک چھوڑ کر نہیں جا سکتے: عدالت

سری لنکا اب تک کے بدترین معاشی بحران سے گزر رہا ہے۔ اس سے نمٹنے میں حکومت کی ناکامی پر ملک گیر مظاہروں کے درمیان صدر گوٹابایا راج پکشے نے کل قوم سے خطاب میں کہا تھا کہ وہ جلد نئی حکومت اور وزیراعظم کا اعلان کریں گے۔

سری لنکا: صدر گوٹابایا کا قوم سے خطاب، راج پکشے خاندان سے کابینہ میں کوئی نہیں ہوگا

  سری لنکا میں پرتشدد مظاہروں کے درمیان کرفیو نافذ کر دیا گیا ہے اور تشدد کے مرتکب افراد کو گولی مارنے کی اجازت دے دی گئی ہے۔ اس دوران سری لنکا کے صدر گوٹابایا راج پکشے نے قوم سے دوسرے مرتبہ خطاب کیا، جس میں انہوں نے کہا ہے کہ ایک ہفتے کے اندر نئی حکومت تشکیل دی جائے گی اور نئے ...

بحران میں مبتلا سری لنکائی باشندوں کی ہندوستان میں دراندازی کا اندیشہ، تمل ناڈو پولیس الرٹ

سیاسی اور معاشی بحران میں مبتلا سری لنکا میں ہر طرف تشدد کا ماحول ہے۔ وہاں کے کئی شہریوں کے ذریعہ ہندوستان میں دراندازی کے اندیشے ظاہر کیے جا رہے ہیں۔ اسے روکنے کے لیے تمل ناڈو کی ساحلی پولیس ہائی الرٹ پر ہے۔