بھٹکل:مٹھلی میں شراب دکان کے خلاف خواتین سمیت سیکڑوں دیہی عوام کا احتجاج: بند نہیں کیا گیا تو سخت احتجاج کی دھمکی

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 23rd August 2017, 9:37 PM | ساحلی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

بھٹکل:23اگست (ایس اؤنیوز)تعلقہ کے مٹھلی گرام پنچایت حدود کے ریلوے اسٹیشن کے قریب شروع کی گئی نئی شراب کی دکان بند کرنے کی مانگ لے کر دیہات کے سیکڑوں مرد وخواتین بدھ کی شام دکان کا گھیراؤ کرتے ہوئے احتجاج کیا۔

احتجاجیوں میں سے خاص کر خواتین سخت اعتراض جتاتے ہوئے کہاکہ روزانہ دکان کے سامنے سیکڑوں لوگ گزرتے ہیں، ریلوے اسٹیشن کو بھی اسی راستے سے مختلف مذاہب کے لوگوں کا جانا ہوتاہے ، گاؤں کی خواتین ، طلبا آتے جاتے رہتے ہیں، پڑوس میں مندر بھی ہے ، ایسی جگہ پر شراب کی دکان کھولنے سے عوام کوشرابیوں سے ہراسانی اور پریشانی ہوتی ہے اور آئندہ یہی فرقہ وارانہ فساد ات کو بھی راہ دینے کا خدشہ جتاتے ہوئے ہرحال میں شراب دکان بند کرنے کی مانگ رکھی ۔

مٹھلی دیہات کے دوسرے علاقے میں عوامی احتجاج کے باعث شراب دکان بند کردی گئی ہے اور اب دوسری دکان شروع کرنےکی اجازت دینا ناقابل قبول ہے اور یہ نااہلیت کی طرف صاف اشارہ کرتاہےہم کسی حال میں بھی اس کو منظوری نہیں دینے کی بات کہتے ہوئے سخت برہمی کا اظہار کیا۔ اسی دوران معائنہ کے لئے پہنچے ایکسائز افسران کو احتجاجیوں نے آڑے ہاتھوں لیا، حالات کشیدہ ہوتے دیکھ کر سی پی آئی سریش نایک، ایس آئی کوڈگونٹی اپنے عملے کے ساتھ جائے وقوع پہنچ کر احتجاجیوں کو مطمئن کرنے کی کوشش کی۔ لیکن احتجاجی پہلے شراب دکان کا پروانہ رد کرنے کے بعد ہی وہاں سے نکلنے کی ضد پر اڑے رہے۔

حالات کو دیکھتے ہوئے سی پی آئی سریش نایک نے موبائیل کے ذریعے اعلیٰ افسران سے بات چیت کی اور مسئلہ کی جانکاری دی اور عوام کو ضروری اقدامات کرنے کا تیقن دیا۔ اس کے بعدبھی عوام کا غصہ ٹھنڈا نہیں ہوا،مشتعل احتجاجی وہیں کچھ دیر تک خاموش احتجاج میں رہے، پھر تھوڑی دیر بعد دوبارہ شراب کی دکان شروع ہوئی تو سخت احتجاج کی دھمکی دیتے ہوئے وہاں سے نکل گئے۔ پنچایت ممبران جٹپا نائک، بے بی نائک، گاؤں کے ذمہ دار وینکٹیش نائک، کٹے ویرا اسپورٹس کلب کے شری دھرنائک، شیش گری اور سنگھ کے ممبران سمیت سیکڑوں لوگ احتجاج میں شریک تھے۔

ایک نظر اس پر بھی

اُڈپی میں کوویڈ کے بڑھتے معاملات پر بھٹکل کے عوام میں تشویش؛ پڑوسی علاقہ سے بھٹکل داخل ہونے والوں پر سخت نگرانی رکھنے ضلعی انتظامیہ سے مطالبہ

بھٹکل کورونا فری ہونے کے بعد اب پڑوسی ضلع اُڈپی میں روزانہ پچاس اور سو کورونا معاملات کے ساتھ  پوری ریاست میں اُڈپی میں سب سے  زیادہ کورونا کے معاملات سامنے آنے پر بھٹکل میں بھی تشویش کی لہر دوڑ گئی ہے۔ عوام اس بات کو لے کر پریشان ہیں کہ اُڈپی سے کوئی بھی شخص آسانی کے ساتھ ...

نیسرگا‘طوفان کے دوران طوفانی ہوا اور بارش سے ہیسکام کو کاروار میں ایک ہی دن 8لاکھ اور بھٹکل میں 1 لاکھ سے زائد کا نقصان

مہاراشٹرامیں تباہی مچانے والا ’نیسرگا‘ طوفان ویسے تو کرناٹکا کے ساحلی علاقے کو چھوتا ہوانکل گیا، مگر جاتے جاتے بھٹکل سمیت  کاروار شہر اوراطراف میں اپنے اثرات ضرور چھوڑ گیا۔

مینگلور: آئندہ صرف کورونا سے متاثر افراد کے گھروں کو ’سیل ڈاؤن‘ کیا جائے گا۔ علاقے کو’کٹینمنٹ زون‘ نہیں بنایا جائے گا؛ میڈیکل ایجوکیشن منسٹر کا بیان

سرکاری سطح پرکووِڈ 19کی وباء پر قابو پانے کے لئے ابتدا میں جوسخت اقدامات کیے جارہے تھے، اب بدلتے ہوئے حالات کے ساتھ ان میں نرمی لانے کا کام مسلسل ہورہا ہے۔

کرناٹکا میں آج پھر 257 کی رپورٹ کورونا پوزیٹو؛ اُڈپی میں پھر ایک بار سب سے زیادہ 92 معاملات؛ تقریباً سبھی لوگ مہاراشٹرا سے لوٹے تھے

سرکاری ہیلتھ بلٹین میں پھر ایک بار  کرناٹک میں آج 257 لوگوں میں کورونا  کی تصدیق ہوئی ہے جس میں سب سے زیادہ معاملات پھر ایک بار ساحلی کرناٹک کے ضلع اُڈپی سے سامنے آئے ہیں۔ بلٹین کے مطابق آج  اُڈپی سے 92 معاملات سامنے آئے ہیں اور یہ تمام لوگ مہاراشٹرا سے لوٹ کر اُڈپی پہنچے تھے۔

مینگلور: آئندہ صرف کورونا سے متاثر افراد کے گھروں کو ’سیل ڈاؤن‘ کیا جائے گا۔ علاقے کو’کٹینمنٹ زون‘ نہیں بنایا جائے گا؛ میڈیکل ایجوکیشن منسٹر کا بیان

سرکاری سطح پرکووِڈ 19کی وباء پر قابو پانے کے لئے ابتدا میں جوسخت اقدامات کیے جارہے تھے، اب بدلتے ہوئے حالات کے ساتھ ان میں نرمی لانے کا کام مسلسل ہورہا ہے۔

اُڈپی میں کورونا وائرس کے معاملات کو لے کر ریاستی وزیر اور محکمہ صحت کے اعداد و شمار میں نمایاں فرق؛ کہیں رپورٹ کو چھپایا تو نہیں جارہا ہے ؟

اُڈپی ضلع میں کورونا وائرس کے معاملات کی تعداد کو لے کر ریاستی وزیر برائے محصولات آر اشوک اور محکمہ صحت کی جانب سے جاری اطلاع میں فرق کی وجہ سے اُڈپی ضلع کے عوام تذبذب کا شکار ہوگئے ہیں۔

کرناٹک میں کورونا کے 24 گھنٹوں میں 267 نئے معاملات ، داونگیرے میں مریض کی موت سے مرنے والوں کی تعداد 53

گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران منگل کی شام 5 بجے تک ریاست میں 267 نئے کو رونا مریض پائے جانے سے ریاست میں کووڈ۔19 سے متاثر مریضوں کی تعداد بڑھ کر 2494 تک پہنچ گئی اور داونگیرے میں مزید ایک مریض کے ریاست میں فوت ہونے سے ریاست میں اس وبائ سے مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر 53 ہوگئی۔

یکم جولائی سے کرناٹک میں اسکول کھل جائیں گے۔کلاسس شروع کرنے کے لئے مرحلہ وار تاریخوں کا اعلان

کرناٹک حکومت نے ریاست بھر میں یکم جولائی سے مرحلہ وار پرائمری اور سکینڈری اسکول کھول دینے کے احکامات جاری کر دئیے ہیں - وزیر برائے بنیادی و ثانوی تعلیم سریش کمار کی صدارت میں محکمہ تعلیمات عامہ کے اعلیٰ عہدیداروں کی میٹنگ کے بعد کمشنر برائے تعلیمات عامہ کی جانب سے اسکولس ...

ہوناور: لاری میں بے ہوش پڑے ہوئے ڈرائیور کو پولیس نے عوام کے تعاون سے پہنچایا اسپتال، کورونا کا شبہ

ہوناور کے شراوتی سرکل پر کھڑی ایک لاری  میں ڈرائیور بے  ہوش پائے جانے کےبعد پولس نے اسے مقامی لوگوں کی مدد سے اسپتال پہنچادیا ہے۔ عوام کو شبہ ہے کہ اس پر کورونا وائرس کا حملہ ہوا ہے۔

لاک ڈاؤن کے دوران جان گنوا نے والے مہاجر مزدوروں کے اہل خانہ کو 25لاکھ روپئے معاوضہ دینے ایس ڈی پی آئی کا مطالبہ

   سوشیل ڈیموکریٹک پارٹی آف انڈیا  کے قومی صدر ایم کے فیضی نے اخباری بیان جاری کرتے ہوئے   مرکزی حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ بغیر تیاری کے اعلان کردہ لاک ڈاؤن کی وجہ سے کام کرنے کی جگہ اور اپنے گھروں کو پیدل سفر کرنے والے جو مہاجر مزدور بھوک اور تھکن سے جان گنو ا چکے ہیں،  ان کے ...