گوگل کے بعد امیزون پر بھی کرناٹک کےعوام کے جذبات کو مجروح کرنے کا الزام

Source: S.O. News Service | Published on 7th June 2021, 1:47 PM | ریاستی خبریں | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

بنگلورو، 7؍جون (ایس او نیوز؍ایجنسی) گوگل نے  دو روز  پہلے ہی کرناٹک کے لوگوں سےان کے جذبات مجرح کرنے  پر معافی مانگی تھی۔ گوگل نے ایک سوال کے جواب میں لکھ دیا تھا کہ کرناٹک کی زبان ’کنڑا‘ غلیظ ترین زبان ہے جس کے بعد کرناٹک کے عوام میں زبردست غصہ دیکھنے کو ملا تھا اور گوگل نےاس کو دیکھتےہوئے کرناٹک کے لوگوں سے معافی مانگ لی تھی۔ گوگل کی اس حرکت کے دو روز  بعد اب امیزون کی ایک حرکت کی وجہ سے کرناٹک کےعوام میں زبردست غصہ  پایا جارہا ہے۔

واضح رہے  کہ امیزون کی کنڑا  کی  ویب سائٹ پر بکری کے لئے ایک بکنی  دکھائی  گئی ہے جو  کرناٹک کے جھنڈے جیسی ہے اور اس پر ریاست کا امبلیم بھی ہے اور اس کا رنگ لال اور پیلا ہے۔ کرناٹک کےجھنڈے جیسی بکنی کی تصویر کو لے کر کرناٹک کے لوگوں میں زبردست غصہ ہے۔ واضح رہے کہ  اس غصہ کے بعد ویب سائٹ نے اس بکنی کو   ہٹا لیا ہے۔ لیکن خبر ہے کہ یہ بکنی برطانیہ، جاپان اور میکسیکو کی سائٹ پر بھی دستیاب تھی۔

اس معاملہ کے سامنےآنے کے فورا ً  بعد کنڑا حامی تنطیموں نے اپنےغصہ کا اظہار کیا جس کے بعد کرناٹک کے وزیر ثقافت اروند لمباولی نے کہا ہے کہ ان کی حکومت امیزون کے خلاف قانونی کارروائی کرے گی۔ اسی بیچ کرناٹک کے سابق وزیراعلیٰ ایچ ڈی کمار سوامی نے اتوار کے روز ریاست کے جھنڈے اور عوام کو بدنام کرنے اور ہتک آمیز تبصرہ کے لیے ای کامرس کمپنی ایمزون سے عوامی طور پر معافی مانگنے کا مطالبہ کیا۔

کمارسوامی نے سلسلہ وار ٹوئٹ میں ملٹی نیشنل کمپنی کے خلاف غصے کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اس نے حکومت کی بے عزتی کرکے سب سے بڑی غلطی کی ہے کیونکہ حکومت آئین کا حصہ ہوتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ ریاستی حکومت کو ایمزون کمپنی کے خلاف قانونی کارروائی پرغور و خوض کرنا چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ حالیہ ملٹی نیشنل کمپنیاں کرناٹک کے خلاف تبصرہ کر رہی ہیں، بہت لاپرواہی اور نامناسب ڈھنگ سے کام کر رہی ہیں۔

حال ہی میں سرچ انجن گوگل نے بھی کنڑا زبان کے خلاف ہتک آمیز تبصرہ کیا ہے اور بعد میں اسے معافی کے ساتھ ٹھیک کیا۔ انہوں نے خبردار کیا کہ اس طرح کا تبصرہ کنڑ عوام کے جذبات کا امتحان لینے اور کنڑ پرچم اور کرناٹک کی بے عزتی کرنے کی کوشش برداشت  نہیں  کی جائے گی۔

ایک نظر اس پر بھی

میسورو میں ’ڈیلٹا پلس‘ فارم کا پہلا کیس سامنے آیا

میسورو میں کورونا وائرس سے متعلق ’ڈیلٹا پلس‘ شکل کا پہلا کیس سامنےآیا ہے۔ تاہم متاثرہ شخص کو اس مرض کی کوئی علامت نہیں ہے اور جو بھی اس کے ساتھ رابطہ میں آیا ہے وہ انفکیشن میں نہیں ہے۔ ریاستی وزیر صحت ڈاکٹر کے سدھاکر نے یہ جانکاری دی۔ 

سابق وزیر اعظم دیو ےگوڑا پر 2 کروڑ روپے جرمانہ عائد

ریاست کرناٹک کی بنگلورو کی ایک عدالت نے 10 سال قبل ٹیلی ویژن انٹرویو میں نندی انفراسٹرکچر کوریڈور انٹرپرائزز (نائس لمیٹڈ) کے خلاف توہین آمیز بیانات دینے پر سابق وزیر اعظم ایچ ڈی دیوے گوڑا کو کمپنی کو 2 کروڑ روپے ہرجانے کے طور پر ادا کرنے کی ہدایت کی ہے۔

کرناٹک میں مزید 4 اضلاع اَن لاک کی رعایتیں، دوپہر تک دکانیں کھولنے کی اجازت

کووڈ۔19 کا پھیلاؤ کم ہونے کے  سبب  مزید 4 اضلاع میں حکومت نے اَن لاک کی رعایتیں دی ہیں، یہاں کووڈ پازیٹیو معاملات کی شرح 5 فیصد سے کم ہوگئی ہے۔ دکشن کنڑا، ہاسن، داونگیرے اور چامراج نگر میں صبح 6 بجے تا دوپہر 1 بجے تک ضروری اشیا کی خریداری کے لئے دکانیں کھلی رکھنے کی اجازت دی گئی ...

بنگلور کے جے ہلّی اور ڈی جے ہلّی تشدد معاملے میں اے پی سی آر کی کوششوں سے چار لوگوں کو ملی ضمانت

گذشتہ سال اگست میں  بنگلور کے ڈی جے ہلّی اور کے جے ہلّی میں ہوئے تشدد کے واقعات    اور رکن اسمبلی  اکھنڈ شری نواس مورتی کے مکان  کو آگ لگانے کے معاملے  میں گرفتار  رحمان خان اور محمد عدنان سمیت چار لوگوں  کو کرناٹک ہائی کورٹ  نے ضمانت پر رہا کرنے کا حکم دیا ہے۔

 جموں و کشمیر کے راجوری میں گئو رکشکوں کے ذریعے 20 سالہ نوجوان کا پیٹ پیٹ کر قتل! محبوبہ مفتی نے متاثرہ کنبہ کے حق میں اٹھائی آواز

جموں و کشمیر کے راجوری ضلع میں ایک 20 سالہ نوجوان اعجاز ڈار کو کچھ نامعلوم افراد نے اس وقت قتل کر دیا جب وہ اپنی بھینس لے کر جا رہے تھے۔ یہ واقعہ مراد نگر گاؤں کے نزیک پیر کے روز پیش آیا۔

وجے مالیا، نیرو مودی اور میہل چوکسی کے ضبط شدہ 9371 کروڑ روپے سرکاری بینکوں کو منتقل

سرکاری بنیکوں سے اربوں روپے کے قرض لیکر فرار کاروباریوں وجے مالیا، نیرو مودی اور میہول چوکسی کے ملک و بیرون ملک میں ضبط 18170.02 کروڑ روپے اور املاک میں 9317.17 کرور روپے بینکوں اور حکومت کو منتقل کر دیئے گئے ہیں۔

بھٹکل میں پیر سے سڑک پر اتریں 18سرکاری بسیں :دیہی علاقوں میں بسوں کی آمدورفت فی الحال نہیں

کورونا لاک ڈاؤن میں ڈھیل دئیے جانے کے بعد آخر کار بھٹکل بس اسٹانڈ سے سرکاری بسیں باہر نکلیں ۔بھٹکل سے کاروار، کمٹہ ، سرسی کےلئے بسیں شروع کی گئی ہیں۔  چونکہ پڑوس اضلاع اُڈپی ، دکشن کنڑا، دھارواڑ وغیرہ میں کورونا کی ہراسانی جاری رہنے سے بین الاضلاع بسوں کی شروعات نہیں ہوئی ہے۔

بھٹکل میں موسلادھار بارش کا سلسلہ جاری؛ چھ مکانوں کو نقصان؛ بعض راستوں کی حالت بد سے بدترہونے پر عوام سخت پریشان

بھٹکل سمیت ساحلی علاقوں اور ملناڈ وغیرہ  میں گذشتہ ایک ہفتہ سے  موسلادھار بارش کا سلسلہ جاری ہے، بھٹکل میں ویسے تو  تھوڑے تھوڑے وقفے کے بعد  زوردار بارش ہورہی ہے تو وہیں  ملناڈ اور پڑوسی   علاقوں میں زبردست بارش ہونے کی اطلاعات موصول ہورہی ہیں جس کے نتیجے میں ہوناور  کے ...

کیا اکتوبر تک کورونا کی مزید ایک لہر ملک کو دہلائے گی ؟ کیا کہتے ہیں ماہرین

کورونا وائرس کی دوسری لہر نے جس طرح سے ملک میں تباہی مچائی ہے ، اس کے بعد مسلسل تیسری لہر کو لے کر اندیشہ ظاہر کیا جارہا ہے ۔ سرکار کے چیف سائنٹفک ایڈوائزر واضح طور پر کہہ چکے ہیں کہ تیسری لہر ضرور آئے گی ، لیکن اس بات پر ابھی ریسرچ جاری ہے کہ تیسری لہر کتنی خطرناک ہوگی ۔ اب نیوز ...

آصف، دیوانگنا، نتاشا ضمانت معاملہ: دہلی پولیس کی اپیل پر سپریم کورٹ میں سماعت، تینوں سماجی کارکنان کو نوٹس جاری

 شمال مشرقی دہلی فسادات کے تین ملزمان آصف اقبال تنہا، دیوانگنا کالیتا اور نتاشا نارووال کی ضمانت پر رہائی کے خلاف آج دہلی پولیس کی عرضی پر سپریم کورت میں سماعت ہوئی۔ سپریم کورٹ نے ہائی کورٹ کے فیصلے کے خلاف پولیس کی اپیل پر رہا ہونے والے تینوں کارکنان کو نوٹس جاری کئے ہیں۔

عوام اپنا پیٹ کاٹ رہی ہے اور مودی حکومت عوام کی جیب: پرینکا گاندھی

ہندوستان کی عوام پر مہنگائی کی مار جاری ہے۔ کانگریس جنرل سکریٹری پرینکا گاندھی نے مہنگائی کو لے کر مودی حکومت کو ایک بار پھر تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔ انھوں نے کہا کہ عوام اپنا پیٹ کاٹ رہی ہے اور مودی حکومت عوام کی جیب کاٹ رہی ہے۔