عوام نے نئے بھارت کی تعمیر کے لئے مضبوط مینڈیٹ دیا ہے: وزیر اعظم مودی

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 24th August 2019, 12:30 PM | ملکی خبریں | عالمی خبریں |

پیرس،24؍اگست(ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا) وزیر اعظم نریندر مودی نے جمعہ کو کہا کہ 2019 کے لوک سبھا انتخابات میں واضح مینڈیٹ صرف ایک حکومت کو نہیں، بلکہ ایک ایسے ’نیو انڈیا‘ کی تعمیر کے لئے دیا ہے جو کاروبار کے بہتر انتظامات کے ساتھ بہتر زندگی بسر پر مرتکز ہو۔ وزیر اعظم مودی نے فرانس میں 1950 اور 1960 کی دہائی میں ایئر انڈیا کے دو طیارے حادثوں میں مارے گئے لوگوں کے اعزاز میں ایک یادگار کا افتتاح کرنے کے بعد یہاں یونیسکو ہیڈکوارٹر میں بھارتی کمیونٹی سے خطاب کرتے ہوئے یہ بات کہی۔ انہوں نے کہا کہ نیو انڈیا میں کرپشن، کنبہ پروری، عوام کے پیسے کی لوٹ، دہشت گردی کیخلاف کارروائی کی جا رہی ہے۔ جموں و کشمیر کے خصوصی درجے کو ختم کرنے کے بارے میں واضح اشارہ کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ بھارت میں عارضی چیزوں کے لئے کوئی جگہ نہیں ہے۔ آپ نے دیکھا ہوگا کہ 1.25 ارب لوگوں کے ملک، مہاتما گاندھی، گوتم بدھ، رام، کرشن کی زمین میں، اس ہٹانے میں 70 سال لگ گئے، جو عارضی تھا۔ تین ممالک کے اپنے دورے کے پہلے مرحلے میں فرانس پہنچے مودی نے کہا کہ لوگوں نے نیو انڈیا کی تعمیر کے لئے بی جے پی حکومت کو واضح مینڈیٹ دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بھارت کی ترقی کی راہ پر تیزی سے آگے بڑھ رہا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

دہلی میں جماعت اسلامی ہند کا یک روزہ ورکشاپ۔ امیر جماعت نے کہا؛ ہر زمانے میں سخت اور چیلنجنگ حالات میں ہی دعوت دین کا کام انجام دیا گیا ہے

 جماعت اسلامی ہند حلقہ دہلی کا یک روزہ ورکشاپ برائے ذمہ دران حلقہ،انڈین انسٹی ٹیوٹ آف اسلامی اسٹڈیز ابو الفضل انکلیو، اوکھلا میں منعقد ہوا۔ ورکشاپ میں نئی میقات 2019تا2023کی پالیسی پروگرام کی تفہیم کرائی گئی۔ صبح 10  بجے  سے شام تک چلے اس ورکشاپ میں جماعت اسلامی ہند دہلی کے ...

ایک قوم‘ایک زبان معاملہ: سیاسی قائدین کی جانب سے شدید رد عمل کا اظہار

اداکار سے سیاست داں بنے جنوبی ہند چینائی کے کمل ہاسن نے ایک قوم ایک زبان کے معاملہ میں بی جے پی قومی صدر امیت شاہ پر سخت تنقید کرتے ہوئے کہا کہ ہندوستان 1950ء میں کثرت وحدت کے وعدے کے ساتھ جمہوریہ بناتھا اور اب کوئی شاہ یا سلطان اس سے انکار نہیں کرسکتا ہے۔

بی جے پی حکومت کی اُلٹی گنتی شروع: کماری شیلجہ

ہریانہ کانگریس کی ریاستی صدر اور رکن پارلیمنٹ کماری شیلجہ نے آج دعوی کیا کہ ریاست کی بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جےپی) حکومت کی الٹی گنتی شروع ہوگئی ہے کیونکہ عوام اس حکومت کی بدنظمی سے تنگ آچکے ہیں۔

جموں و کشمیر کے سابق سی ایم فاروق عبداللہ کو پی ایس اے کے تحت حراست میں لیا گیا

جموں و کشمیر کے سابق وزیر اعلیٰ فاروق عبداللہ کی حراست لیا گیا ہے۔ان کے حراست کو لے کر سپریم کورٹ میں داخل عرضی پر سماعت کے دوران عدالت نے مرکزی حکومت کو ایک ہفتے کا نوٹس دے کر جواب دینے کے لئے کہا گیا ہے۔