کابینہ میں شمولیت کا فیصلہ ہائی کمان کا ہے: کے ایس ایشورپا

Source: S.O. News Service | Published on 1st August 2021, 11:06 AM | ریاستی خبریں |

میسورو، یکم اگست  (ایس او نیوز) سابق ریاستی وزیر برائے دیہی ترقیات وپنچایت راج کے ایس ایشورپا نے بتایا کہ انہیں ریاستی کابینہ میں شامل کرنے یا نہ کرنے کا فیصلہ ہائی کمان کا ہے۔

یہاں اخباری نمائندوں سے بات کرتے ہوئے ایشورپا نے اس خیال کا اظہار کیا اور کہا کہ بسواراج بومئی کی نئی کابینہ میں شمولیت کے تعلق سے وہ کوئی فیصلہ نہیں لے سکتے۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی میں ایک نظام ہے،وزیر اعلیٰ،پارٹی صدر اور پارٹی رہنما اس سلسلہ میں فیصلہ کریں گے۔

انہو ں نے کہا کہ انہیں وزارت میں شامل کرنے،نائب وزیر اعلیٰ بنانے مختلف سوامیوں اور دیگر رہنماؤں نے مطالبہ کیا ہے جس کیلئے وہ ان کے شکرگزار ہیں، لیکن ہائی کمان کا جو بھی فیصلہ ہوگا اسے وہ قبول کریں گے۔

ایک نظر اس پر بھی

کرناٹک میں پی یو سی دوم کے نتائج کا اعلان ؛ 18،414 طلبا میں سے 5،507 طلبا کا میاب

پی یو سی دوم کا چیلنجنگ امتحان لکھنے والے طلبا کے نتائج ظاہر کردئے گئے  ہیں۔ جملہ 18،414 طلبا نے امتحان کے لئے اپنا اندراج کرویا تھا۔ ان میں سے 17،470 پرائیویٹ طلبا ، 351 رپیٹرس ، 592 فریشریس  طلبا نے امتحان میں شرکت کی ۔

بنگلورو: 5سالہ بچی کی عصمت پر حملہ، مقامی لوگوں کا پولیس تھانہ پر احتجاج

کل رات یہاں سنجے نگر پولیس تھانے کے سامنے ایک سو سے زیادہ افراد اکٹھا ہوگئے اور احتجاج کرنے لگے۔ وہ اس 25سالہ فرد کو ان کے حوالے کرنے کا مطالبہ کر رہے تھے جس نے ایک 5 سالہ معصوم بچی پر جنسی حملہ کیا تھا۔

سدانند گوڈا کی جانب سے ’جعلی ویڈیو‘ کے خلاف سائبر پولیس میں شکایت، اشاعت پر پابندی اور خاطیوں کو گرفتار کرکے سخت سے سخت سزا دینے کا مطالبہ

سابق وزیر اعلیٰ اور حال تک مرکزی وزیر رہ چکے ڈی وی سدانند گوڈا نے کل یہاں پولیس میں ایک شکایت درج کروائی ہے جو ایک ویڈیو کلپنگ کے بارے میں ہے جس میں انہیں دیکھا جا سکتا ہے۔

کرناٹک میں نظم و ضبط کی صورتحال انتہائی خراب، وزیر اعلیٰ کو جان سے مارنے کی کھلے عام دھمکی حالات کی عکاس:کانگریس

کرناٹک میں دن بدن بگڑتی ہوئی نظم و ضبط کی صورتحال پر کانگریس نے ریاستی حکومت کو نشانہ بنایا ہے اور کہا ہے کہ وزیر اعلیٰ بسوراج بومئی کو کھلے عام جان سے مارنے کی دھمکی دی جا رہی ہے اور حکومت اس طرح کی دھمکی دینے والے عناصر کے خلاف فوری کارروائی کرنے میں ٹال مٹول سے کام لے رہی ہے۔