پی آئی اے کی یورپ جانے والی تمام پروازیں چھ ماہ کیلئے منسوخ

Source: S.O. News Service | Published on 1st July 2020, 8:57 PM | عالمی خبریں |

اسلام آباد،یکم جولائی(آئی این ایس انڈیا)وفاقی وزیرِ ہوا بازی غلام سرور خان کی جانب سے پاکستان میں پائلٹس کے لائسنس مشکوک قرار دینے کے بعد ایک اور آفٹر شاک میں یورپین یونین کی ایئر سیفٹی ایجنسی (ایاسا) نے پاکستان انٹرنیشنل ایئر لائنز کا یورپی ممالک کے لیے فضائی آپریشن کا اجازت نامہ 6معطل کر دیا ہے۔ پی آئی اے کا اجازت نامہ چھ ماہ کے لیے معطل کیا گیا ہے جس کا اطلاق یکم جولائی سے ہونا تھا۔ تاہم پاکستان کی درخواست پر پی آئی اے کو تین جولائی تک آپریشن کی اجازت دے دی گئی ہے اس کے بعد پابندی پر عمل درآمد شروع ہو جائے گا۔ یورپی یونین کی ایئر سیفٹی ایجنسی (ایاسا) کے بھجوائے گئے مراسلے کے مطابق پی ا?ئی اے اور ایاسا کے درمیان گزشتہ سال جون اور پھر ستمبر میں اجلاس منعقد ہوئے جن میں پی آئی اے سے متعلق مختلف تکنیکی امور پر بات کی گئی۔ پی آئی اے نے سیفٹی کے پانچ مختلف امور پر انہیں جلد حل کروانے کی یقین دہانی کروائی، لیکن پی آئی اے ایسا کرنے میں ناکام رہی ہے۔ ایاسا کا کہنا ہے کہ لیول ون کے مطابق، سیفٹی منجمنٹ سسٹم کو لاگو نہیں کیا گیا۔ مراسلے میں کہا گیا کہ 24 جون کو پاکستان کے ہوا بازی کے وزیر غلام سرور خان نے پاکستانی پارلیمان کو آگاہ کیا کہ پاکستان کے 860 پائلٹس میں سے260 پائلٹس کے لائسنس جعلی ہیں اور پائلٹس نے دھوکہ دہی سے پاکستانی حکام سے یہ لائسنس حاصل کیے ہیں۔ یورپی یونین کی ایئر سیفٹی ایجنسی کے پابندی کے اعلان کے بعد پاکستان کی حکومت کی کوشش سے پی آئی اے کو تین جولائی تک آپریٹ کرنے کی اجازت ملی تھی۔ پاکستان کی وزارتِ خارجہ کے سیکریٹری نے اس حوالے سے یورپ کے تمام ممالک میں پاکستانی سفیروں سے رابطہ کیا تھا۔

ایک نظر اس پر بھی

’خفیہ ملاقات‘ کے لیے تاریخ میں پہلی مرتبہ اسرائیلی وزیر اعظم اور موساد کے سربراہ سعودی سرزمین پر

اسرائیلی ذرائع ابلاغ اور نیوز ایجنسیوں نے رپورٹ کیا ہے کہ اتوار کو سعودی عرب میں اسرائیلی وزیر اعظم بینجمن نیتن یاہو، سعودی ولی عہد محمد بن سلمان اور امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو کی ایک خفیہ ملاقات ہوئی۔