جھارکھنڈ میں پولنگ ختم، 63 فیصد ووٹروں نے کیا 260 امیدواروں کی قسمت کا فیصلہ

Source: S.O. News Service | Published on 7th December 2019, 8:47 PM | ملکی خبریں |

رانچی،7/دسمبر(ایس او نیوز/یو این آئی) جھارکھنڈ میں دوسرے مرحلہ میں ہفتہ کے روز بیس اسمبلی سیٹوں پر پولنگ اکا دکا واقعات کو چھوڑ کر پرامن طریقہ سے ختم ہوگئی اور اس دوران تقریبا 63 فیصد ووٹروں نے ووٹ دیکر وزیراعلی رگھوور داس اور سابق وزیر سریو رائے سمیت 260 امیدواروں کی قسمت کا فیصلہ الیکٹرانک ووٹنگ مشین (ای وی ایم )میں بندکردیا۔

ریاستی انتخابی دفتر کے ذرائع نے یہاں بتایاکہ ریاست کی 20اسمبلی سیٹوں میں سے بہراگوڑا ،گھاٹ شلا(ریزرو)،پوٹکا (ریزرو)، جگسلائی (ریزرو) ، سرائے کیلا (ریزرو) ، چائی باسا (ریزرو) ،مجھگاؤں ،جگناتھ پور (ریزرو)، منوہرپور (ریزرو) ، چکردھرپور (ریزرو)، کھرساواں (ریزرو)، تماڑ (ریزرو)، تورپا(ریزرو)، کھونٹی (ریزرو)، مانڈر (ریزرو)، سمڈیگا (ریزرو) اور کولیبیرا میں اکا دکا واقعات کو چھوڑ کر سخت حفاظتی بندوبست کے بیچ پرامن طریقہ سے پولنگ سہ پہر تین بجے ختم ہوگئی جبکہ جمشید پور مشرق اور جمشیدپورمغرب میں شام پانچ بجے پولنگ ختم ہوئی۔

اس دوران تقریبا 62 اعشاریہ 40 فیصد لوگوں نے اپنے حق رائے دہی کا استعمال کیا۔ پولنگ ختم ہونے پر سب سے زیادہ پولنگ بہرگوڑا سیٹ پر 74 اعشاریہ 44 فیصد ہوئی وہیں سب سے کم 46 اعشاریہ 55 فیصد پولنگ جمشید پور مغرب میں ہوئی ۔

اس کے بعد گھاٹ شلا (ریزرو) میں 64 اعشاریہ 49 فیصد، پوٹکا (ریزرو) میں 64 اعشاریہ 3 فیصد، جگسلائی (ریزرو) میں 63 اعشاریہ 27 فیصد ، جمشید پور مشرق 49 اعشاریہ 12 فیصد،سرائے کیلا (ریزرو) میں 56 اعشاریہ 77 فیصد، چائی باسا (ریزرو) میں 47 اعشاریہ 38 فیصد ،مجھگاؤں میں 66 اعشاریہ 67 فیصد، جگناتھ پور (ریزرو) میں 60 اعشاریہ 99 فیصد، منوہرپور (ریزرو) میں 60 اعشاریہ 03 فیصد، چکردھرپور (ریزرو) میں 65 اعشاریہ 61 فیصد، کھرساواں (ریزرو) میں 60 اعشاریہ 12 فیصد

اس کے علاوہ تماڑ (ریزرو) میں 67 اعشاریہ 83 فیصد، تورپا (ریزرو) میں 64 اعشاریہ 24 فیصد، کھونٹی (ریزرو) میں 59 اعشاریہ 2 فیصد، مانڈر (ریزرو) میں 61 اعشاریہ 14 فیصد، سسئی (ریزرو) میں 68 اعشاریہ 6، سمڈیگا (ریزرو) میں 59 اعشاریہ 07 فیصداور کولیبیرا میں 64 اعشاریہ 74 فیصد پولنگ ہوئی۔

اس دوران گملا ضلع کے سسئی اسمبلی حلقہ میں کدرا پنچایت کے بگھنی گاؤں میں پولنگ سنٹر نمبر 36 پر سلامتی دستہ کے جوانوں اور گاؤں والوں کے درمیان ہوئی جھڑپ میں ایک شخص کی موت ہو گئی اور کئی جوانوں کے زخمی ہونے کی اطلاع ہے ۔

ایک نظر اس پر بھی

باپ کی املاک پر بیٹی کا بیٹے کی طرح یکساں حق: سپریم کورٹ

سپریم کورٹ نے منگل کو ایک دور رس نتائج والے اپنے فیصلہ میں کہا ہے کہ ہندو غیر منقسم خاندان کی آبائی املاک میں بیٹی کو بیٹے کی طرح ہی حقوق حاصل ہوں گے، یہاں تک کہ اگر ہندو جانشینی (ترمیمی) ایکٹ 2005 کے نفاذ سے قبل ہی اس کے والد کی موت کیوں نہ ہوگئی ہو۔

راجستھان میں سیاسی صلح، بی جے پی کے منھ پر زور کا طمانچہ: کانگریس

کانگریس نے راجستھان یونٹ میں کئی دنوں سے جاری تنازعہ کے سلجھنے پر ریاست کے عوام کو مبارکباد دیتے ہوئے اسے پارٹی اعلیٰ کمان کے ’سب کو ساتھ لے کر چلنے‘ کی پالیسی کا نتیجہ بتایا کہ اور کہا کہ یہی بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کو کرارا جواب ہے۔

یو جی سی امتحانات معاملے میں سماعت جمعہ تک ملتوی

سپریم کورٹ نے پیر کے روز حکومت سے یہ جاننے کی کوشش کی کہ کیا اسٹیٹ ڈیزاسٹر مینجمنٹ ایکٹ یونیورسٹی گرانٹس کمیشن (یو جی سی) کی ہدایت کو متاثر کر سکتا ہے؟ ۔ اس کے ساتھ ہی عدالت نے معاملے کی سماعت 14 اگست تک ملتوی کردی ۔