زچگی سے اموات پر کنٹرول کیا جائے گا: ڈاکٹر ہرش وردھن

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 13th June 2019, 12:26 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی  13/جون (ایس او نیوز/ آئی این ایس انڈیا) ہمیں اس بات کو یقینی بنانا ہوگا کہ ملک میں زچگی اموات کا کوئی  واقع رونما نہ ہو۔ محفوظ زچگی کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے   صحت اور کنبہ بہبود کے مرکزی وزیر ڈاکٹر ہرش وردھن نے ملک میں تولیدگی، زچگی، نوزائیدہ بچوں، سن بلوغیت میں داخل ہونے والے بچے اور تغذیا تی مداخلت کی صورتحال سے متعلق اعلیٰ سطحی جائزہ میٹنگ میں یہ باتیں کہی ہیں۔ ڈاکٹر ہرش وردھن  نے کہا کہ ہمارے وزیراعظم نریندر مودی کا ایک خواب  ہے کہ بچے اور حاملہ خواتین کی قابل تدارک اسباب کی وجہ سے موت نہ ہو اور عوام   ’سووچھ بھارت‘ سودرڈھ بھارت (صحت  مند بھارت، مضبوط بھارت  یعنی سووستھ بھارت، سورڈھ بھارت) کے لئے اپنی تمام  تر صلاحیتوں کو بروئے کار لاسکیں۔ انہوں نے کہا کہ اس خواب کا شرمندہ تعبیر کرنے کی غرض سے اپنی تمام توانائیوں کو ملا کر کام کرنا ہوگا۔ ڈاکٹر ہرش وردھن نے کہا کہ خواتین ہمارے فعال سماج کی مستحکم ستون ہیں۔ خواتین اور بچوں کا  مل کر ہماری آبادی کا بڑا حصہ بنتاہے۔ ملک کی پائیدار ترقی کا حصول صرف اسی صورت میں ممکن ہے جب ان خواتین اور بچوں کی دیکھ بھال اور پرورش و   پرداخت کریں گے۔ ہمیں اپنی پالیسیوں اور پروگراموں  سے اس بات کو یقینی بنانا ہوگا کہ ملک میں زچگی سے متعلق اموات نہ  ہوں۔وقت آگیا ہے کہ ہم سب ایک عوامی تحریک‘جن آندولن’ شروع کریں تاکہ ایسی زچگی اموات کو روکا جاسکے۔ انہوں نے کہا کہ‘ملک میں تمام ماہرین امراض خواتین اور صحت کارکنان سے وزارت صحت کے ساتھ ہاتھ ملانے اور اس سلسلہ میں ہمارے ذریعہ کی جانی والی کوششوں کو مستحکم کرنے کی اپیل کرتا ہوں۔ انہوں نے اجتماعی طریقہ کار اپنانے کا مشورہ دیا جس میں جارحانہ  بیداری مہم کے ذریعہ تیز رفتار نتائج کے اخذ کے لئے تمام وسائل کو متحد کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ اس بات کو یقینی بنانے کے لئے  کہ مطلوبہ نتائج حاصل کرنے میں ہماری کارروائیاں مؤثر ہوں، نئی حکمت عملی اپنائی جائے جس میں باریکی سے مونیٹرینگ اور نگرانی   کی ضرورت ہو۔ ڈاکٹر ہرش وردھن نے افسران کو ماہرین امراض خواتین، تغذیاتی ماہرین، انتظامی ماہرین، ماہرین امراض  اطفال اور مختلف سرکاری محکموں  پرائیوٹ سیکٹر اور سماجی اداروں کے ساتھ مجوزہ حکمت عملیوں پر غور وخوض کا مشورہ دیا ہے۔  

ایک نظر اس پر بھی

روی داس مندر گرائے جانے کے خلاف دلت کمیونٹی کے ہزاروں لوگوں نے کیامظاہرہ

شہر میں حال ہی میں ایک روی داس مندر کو گرائے جانے کی مخالفت میں ملک کے مختلف حصوں سے آئے دلت کمیونٹی کے لوگوں نے ہاتھوں میں نیلے رنگ کے جھنڈے لے کر جھنڈے والان سے رام لیلا میدان تک بدھ کو احتجاجی مظاہرہ کیا۔

خواتین اور نابالغ لڑکیوں کے ساتھ جنسی استحصال کے الزام میں ایک اور بابا گرفتار

ہندوستان کے کئی مشہور و معروف بابا خواتین کے ساتھ جنسی استحصال اور نابالغوں کے ساتھ مبینہ طور پر عصمت دری کے الزام میں یا تو گرفتار کر لیے گئے ہیں یا پھر انھیں گرفتار کرنے کا حکم جاری ہو چکا ہے۔

این ڈی ٹی وی کے بانیان کے خلاف سی بی ائی نے نیا مقدمہ درج کیا‘ چیانل نے کاروائی کو ”مضحکہ خیز“ قراردیا

ایف ائی آر میں دعوی کیاگیا ہے کہ ٹی وی چیانل نے 2004اور2010کے درمیان جورقم اکٹھا کی ہے وہ ”وہ ایک بدنام لین دین کی ایک جال کے ذریعہ نامعلوم سرکاری عہدیدیروں کے پیسے کو لانے میں اعتراض ہے“