مایاوتی کا حزب اختلاف پر نشانہ! راجیہ سبھا میں ممبران کے رویہ کو بتایا شرمناک: مایاوتی

Source: S.O. News Service | Published on 23rd September 2020, 8:49 PM | ملکی خبریں |

لکھنؤ،23؍ستمبر(ایس او نیوز؍ایجنسی) زرعی بلوں پر بہوج سماج پارٹی (بی ایس پی) نے پارلیمنٹ کے موجودہ اجلاس کے دوران اپوزیشن کے ہنگامے کو ناموزوں قرار دیتے ہوئے اسے جمہوریت کے لئے شرمناک بتایا ہے۔ مایاوتی نے بدھ کو اپنے ٹوئٹ میں لکھا 'ویسے تو پارلیمنٹ جمہوریت کا مندر ہی کہلاتا ہے پھر بھی اس کی عزت متعدد بار تار تار ہوئی ہے۔ رواں پارلیمنٹ اجلاس کے دوران بھی ایوان میں حکومت کے طرز امور و اپوزیشن کا جو رویہ دیکھنے کو ملا ہے وہ پارلیمنٹ کے احترام، آئینی وقار و جمہوریت کو شرمسار کرنے والا ہے۔ کافی تکلیف دہ۔

واضح رہے کہ جن بلوں پر کسان اور اپوزیشن جماعتیں سراپا احتجاج ہیں ان پر بی ایس پی اور مایاوتی کی طرف سے کوئی جارحانہ رُخ نظر نہیں آیا ہے۔ بی ایس پی کے ارکان بھی حزب اختلاف کے ساتھ نظر نہیں آتے اور کوئی حکومت مخالف بیان بھی نہیں دے رہی ہیں۔ حالانکہ انہوں نے بلوں پر اعتراض ضرور ظاہر کیا تھا۔ انہوں نے کہا تھا، ’’پارلیمنٹ میں کسانوں سے جڑے بل ان کے خدشات کو دور کیے بغیر منظور کر دیئے گئے۔ بی ایس پی اس سے قطعی متفق نہیں ہے؟ اس طرف مرکزی حکومت توجہ دے تو بہتر ہوگا۔‘‘

قابل ذکر ہے کہ گزشتہ اتوار کو راجیہ سبھا میں زراعت سے متعلق بل پاس کرنے کے دوران اپوزیشن اراکین پارلیمنٹ نے کافی شور شرابہ اور ہنگامہ کیا تھا۔ اپنے مطالبات ڈپٹی چئیرمین کے ذریعہ نہ مانے جانے پر ترنمول کانگریس کے ڈیرک وبرائن نے رول بک کو پھاڑ دیا تھا، وہیں عام آدمی پارٹی کے سنجے سنگھ نے ڈپٹی چیئرمین کی کرسی کے پاس پہنچ کر حکومت مخالف نعرے بازی کی تھی۔ جس کے پاداش میں چئیر مین نے 8 اراکین کو معطل کردیا تھا۔

ایک نظر اس پر بھی

مودی حکومت سے ناراض محبوبہ مفتی نے کہا "ہم خاموش بیٹھنے والے نہیں، طاقت ہے تو چین کو نکالو"

 پی ڈی پی صدر و سابق وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی نے کہا ہے کہ مرکزی حکومت جموں و کشمیر کے لوگوں پر طاقت آمائی کرتی ہے جبکہ چین کا نام لینے سے بھی تھرتھراتی ہے جس نے لداخ میں ہماری زمین ہڑپ لی ہے

مونگیر تشدد: بی جے پی-جے ڈی یو حکومت سے کانگریس نالاں، پی ایم مودی سے مانگا جواب

بہار میں اسمبلی انتخاب کے درمیان مونگیر شہر میں دو دن پہلے پولس فائرنگ میں ایک نوجوان کی موت کے بعد آج ایک بار پھر شہر میں ہنگامہ ہونے پر کانگریس نے نتیش حکومت کے ساتھ ساتھ پی ایم مودی کو بھی تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔

آن لائن جوے، گیمنگ، سٹہ کی ویب سائٹوں اور ایپس پر روک لگائی جائے: جگن موہن ریڈی

اے پی کے وزیراعلی وائی ایس جگن موہن ریڈی نے مرکزی وزیر الکٹرانکس و انفارمیشن ٹیکنالوجی روی شنکر پرساد سے اپیل کی ہے کہ وہ انٹرنیٹ سروس خدمات فراہم کرنے والوں کو ہدایت دیں کہ وہ تمام آن لائن جوے، گیمنگ، سٹہ کی ویب سائٹس اور ایپس کو ریاست میں بلاک کر دیں۔