کرناٹک میں بھی کروناوائرس کی دستک ہبلی میں ایک شخص متاثر،ریاست میں دہشت، محکمہ صحت چوکنا

Source: S.O. News Service | Published on 4th February 2020, 10:59 AM | ریاستی خبریں |

ہبلی،4/فروری(ایس او  نیوز) دنیا بھر میں دہشت کا سبب بنے کرونا وائرس نے اب ریاست کرناٹک میں بھی دستک دے دی ہے۔ پڑوسی ریاست کیرلا میں تین لوگوں میں کرونا وائرس کی علامتوں کی تصدیق کے بعد اب کرناٹک کے شمالی شہر ہبلی میں چین سے پہنچے ایک مقامی شخص میں ان وائرس کے ہونے کی نشاندہی کے ساتھ ریاست میں اس مرض کا خطرہ بڑھ گیا ہے۔

اس مریض کی شاخت ہبلی کے کیشو پور کے ساکن سندیپ (39)کی حیثیت سے کی گئی ہے اور اس میں کرونا وائرس کی نشاندہی کے بعد وہاں کے کمس اسپتال کے ائسولیشن وارڈ میں رکھا گیا ہے اور مسلسل نگرانی کی جا رہی ہے۔ سندیپ کے خون کے نمونے جانچ کے لئے بنگلور و کے نیشنل انسٹی ٹیوٹ آف وائرالوجی لیاب روانہ کئے گئے ہیں۔کرونا وائرس سے بری طرح متاثر چین کے ووہان شہر میں سندیپ ایک سافٹ ویر کمپنی میں ملاز م ہے اور وہاں اس وائرس کے وبائی شکل اختیار کرلینے کے بعد وہ ہندوستان واپس آگیا۔ 18جنوری کو وہ ممبئی پہنچا اور وہاں سے ہبلی لوٹا۔ تقریباً دو ہفتے بعد اس میں ان خطر ناک وائرس کے ہونے کی علامتیں ظاہر ہوئی ہیں۔ تاہم کمس انتظامیہ اس سلسلہ میں بنگلور و سے ملنے والی لیاب رپورٹ کا انتظار کر رہا ہے۔سندیپ نے شدید سردرد، سردی اورتیز بخار کی شکایت کرتے ہوئے اسپتال سے رجوع کیاتھا۔ اس کی ابتدائی جانچ کے بعد جب معاملہ سمجھ میں نہیں آیا تو خون کے نمونے بنگلورو کے لیاب روانہ کئے گئے۔

اس سے قبل ر یاست میں اب تک کرونا وائرس کا کوئی معاملہ سامنے نہیں آیا ہے- اس کے باوجود بھی ریاست میں سخت احتیاط برتنے کے لئے احکامات صادر کئے جا چکے ہیں۔ یہ بات ریاستی وزیر صحت بی سری راملو نے کہی۔ اخباری نمائندوں سے انہوں نے کہا کہ ریاست میں داخل ہوئے 44ایسے افراد کی طبی جانچ کی گئی ہے جو بیرون ممالک سے بنگلورو پہنچے اور ان میں ایسی علامتیں دیکھی گئیں اس لئے ان لوگوں کی طبی جانچ کے بعد یہ پایا گیا کہ 29افراد میں کرونا وائرس کی علامتیں موجود نہیں ہیں۔ باقی تمام کو مزید جانچ کے لئے روک لیا گیا ہے۔

انہوں نے بتایا کہ اس مرض کے پھیلاؤ کو روکنے کے لئے ریاست بھر میں سخت حفاظتی اقدامات کئے گئے ہیں۔ تما م ضلع اسپتالوں میں مخصوص وارڈ قائم کئے گئے ہیں جو 10 بستروں پر مشتمل ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ریاست میں اگر کرونا وائر س کا کوئی معاملہ سامنے آتا ہے تو متاثرہ مریض کے علاج کے لئے حکومت ضرورت پڑنے پر بیرون ممالک سے دوا منگوانے کے لئے بھی تیار ہے - انہوں نے کہا کہ ایرپورٹ پر چین سے آنے والے مسافروں پر دوا چھڑک کر ان کو داخل ہونے دیا جا رہا ہے۔ ریاست کے سرحدی اضلاع میں اس طرح کے مشتوہ مریضوں کی نقل و حمل پر نظر رکھنے کے لئے ناکہ بندی کی جارہی ہے-

ایک نظر اس پر بھی

اُڈپی میں کورونا نے ڈھایا قہر، ایک ہی دن 210 معاملات سامنے آنے پر ریاست بھر میں تشویش؛ کرناٹک میں کورونا معاملات میں اول نمبر پر پہنچ گیا اُڈپی

 کرناٹک کے ساحلی ضلع اُڈپی میں  آج منگل کو ایک ہی دن 210 کورونا پوزیٹو کے معاملات سامنے آنے کے بعد نہ  صرف ساحلی علاقوں بلکہ پوری ریاست میں تشویش کی لہر دوڑ گئی ہے۔ ایک  ماہ قبل تک اُڈپی میں کورونا کے کوئی معاملات نہیں تھے مگر مہاراشٹرا کی سرحد کھلتے ہی یہاں  کورونا نے سر ...

کرناٹک میں 8؍جون سے کھلیں گی مساجد، کرناٹک ریاستی اقلیتی کمیشن نے جاری کیں گائیڈ لائن

کرناٹک میں 8؍ جون سے مساجد کے دروازے عوام کیلئے کھلیں گے۔ 2 ماہ سے زائد عرصہ کے بعد مصلیوں کو مسجد میں داخل ہوکر عبادت کرنے کا موقع ملے گا۔ کورونا وائرس کی خطرناک بیماری نے زندگی کے ہر شعبہ کو متاثر کرتے ہوئے عبادتوں میں بھی خلل پیدا کیا ہے۔

کرناٹک ہائی کورٹ کا عجیب و غریب فیصلہ، نفرت آمیز تقاریر پر روک لگانا ممکن نہیں

کرناٹک ہائی کورٹ نے اشتعال انگیز اور نفرت کوہوا دینے والی تقاریر کرنے والوں اور اس کو نشر کرنے والے میڈیا گھرانوں کے خلاف کارروائی کے لئے متعلقہ سرکاری اداروں کو ہدایت دینے کی درخواست کرتے ہوئے دائر کی گئی ایک مفاد عامہ عرضی خارج کردی ہے۔

کرناٹک میں ایک ہی دن 187 افراد کورونا پوزیٹیو، تین ہزار سے پار ہوا اکڑہ

ریاست کرناٹک میں پیر کے دن 187 افراد کورونا پوزیٹیو پائے گئے ، جس سے کل تعداد 3408 ہوگئی ۔ 2026 افراد زیر علاج ہیں۔ 110 مریض شفایاب ہو کر رخصت ہوئے ۔ اب تک رخصت ہونے والوں کی تعداد 1328 ہوگئی ہے، 52 ؍ افراد ہلاک ہوئے ہیں۔

کرناٹک کے مختلف شہروں میں یا دوسری ریاست میں پھنسے بھٹکلی افراد اب آسکتے ہیں واپس بھٹکل؛ تنظیم کی طرف سےجاری کی گئیں ہدایات

بھٹکل میں اب چونکہ لاک ڈاون میں ڈھیل دی گئی ہے اور یکم جون سے بھٹکل میں تمام دکانوں اور کاروباری اداروں کو صبح آٹھ سے دوپہر دو بجئے تک کھولنے کی اجازت دی گئی ہے، اس بنا پر ریاست کرناٹک کے مختلف شہروں یا ملک کی دیگر ریاستوں میں پھنسے ہوئے بھٹکلی افراد کے لئے اب بھٹکل واپس آنے کی ...

کیا کرناٹک کے وزیراعلیٰ یڈی یورپا کے خلاف بغاوت کے پیچھے ایک مرکزی وزیر کا ہاتھ ہے؟ کیا ریاست کی کمان کسی اور کو سونپنے کے لئے ہورہی ہیں کوششیں ؟

کرناٹک بی جے پی میں وزیر اعلیٰ یڈی یورپا کے خلاف 27 اراکین اسمبلی کی طرف سے شروع کی گئی بغاوت کو ایک مرکزی وزیر کی طرف سے ہوا دیئے جانے کی اطلاعات سامنے آئی ہیں۔