کرناٹک کے رائچور ضلع میں بھی کورونا وائرس نے دی دستک

Source: S.O. News Service | Published on 19th May 2020, 5:42 PM | ریاستی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

رائچور،19؍مئی (ایس او نیوز)  گرین زون میں اطمینان اور خوشی کے ساتھ زندگی گذار رہے کرناٹک کے رائچور ضلع کے عوام کو مایوسی کا سامنا کرنا پڑا ہے۔ مہلک کورونا وائرس نے رائچور ضلع میں بھی دستک دے دی ہے۔ واضح رہے کہ رائچور ضلع میں اب تک کووڈ۔19کا ایک بھی معاملہ سامنے نہیں آیا تھا۔ ہزاروں لوگوں کو اب تک گھروں اور سرکاری طور پر قرنطینہ کیاگیا تھا۔ لیکن اچانک ضلع میں کوروناوائرس کے 6معاملے سامنے آئے ہیں۔

سرکاری حکام کے مطابق متاثرہ افراد مائگرنٹ مزدور ہیں اور یہ لوگ حال ہی میں ممبئی سے رائچور واپس لوٹے ہیں۔ بتایاجارہا ہے کہ دو افراد کا تعلق ضلع کے مسرکل گاوں سے ہے اور چار کا تعلق شہر کے آٹونگر علاقے سے ہے اور انہیں ممبئی سے واپس لوٹنے کے بعد قرنطینہ میں رکھا گیا ہے۔ کووڈ۔19کے چھ معاملے سامنے آنے کے بعد ضلع انتظامیہ اور طبی محکمہ کے عہدیدار چوکس ہو چکے ہیں۔ قرنطینہ مراکز پر پولیس کی جانب سے سخت سیکوریٹی انتظامات کئے گئے ہیں۔

واضح رہے کہ رائچور ضلع میں ملک کی دیگر ریاستوں اور اضلاع سے مائگرنٹ مزدوروں کی آمد کا سلسلہ جاری ہے۔ بتایا جارہا ہے کہ ضلع میں تقریبا دس ہزار سے زائد مزدوروں کی آمد متوقع ہے اور ضلع میں مسلسل مزدوروں کی آمد کا سلسلہ جاری ہے۔ ضلع انتظامیہ کے مطابق ضلع سے تاحال روانہ کئے گئے نمونوں کی رپورٹ میں 2853رپورٹ منفی آئی ہے۔ باقی 395رپورٹس کاا نتظار ہے۔ فیور کلینک میں 550افراد کی تھرمل اسکرینگ کی گئی ہے۔ جبکہ رائچور تعلقہ جات میں کل 9ہزار 8سو 53افرا کوقرنطینہ مراکز میں رکھا گیا ہے اور 915افراد صحت یاب ہوچکے ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

کرناٹک میں تھمنے کا نام نہیں لے رہا ہے کورونا؛ 122 نئے کیسس، صرف گلبرگہ میں ہی 29 پوزیٹو کی تصدیق، دکشن کنڑا اور اُڈپی میں بھی بڑھ رہے ہیں معاملات

ریاست کرناٹک میں  کورونا کیسس تھمنے کا نام نہیں رہے ہیں اور ہرروز سو سے زائد معاملات درج کئے جارہےہیں ۔ آج بدھ کو ریاست میں 122 کورونا پوزیٹو کیسس کی تصدیق کی گئی ہے جس میں سب سے زیادہ گلبرگہ سے 28 معاملات سامنے آئے ہیں، یادگیر سے16، ہاسن سے 15جبکہ ضلع اُترکنڑا میں چھ،  پڑوسی ضلع ...

گجرات کے سورت سے نکلی ٹرین ، بہار کے چھپرا کے بجائے پہنچی کرناٹک کے بنگلورو: مزدورں کا حال بے حال

لاک ڈاؤن کی مدت میں مزدوروں کو ان کے وطن لوٹانے گجرات سے نکلی ایک مزدور ٹرین (شریمک ریل ) بہار پہنچنے کے بجائے کرناٹکا کے بنگلورو پہنچ کر سب کو حیرت میں ڈال دیا ہے۔ گرچہ یہ ایک مذاق لگتا ہے مگر ہے حقیقت۔ اسی طرح اور ایک خصوصی مزدور ریل گجرات کے سورت سے 1200مزدوروں کو لے کر بہار کے ...

ہائی کورٹ فیصلے کے بعد ہی ایس ایس ایل سی امتحانات

ایس ایس ایل سی امتحانات منسوخ کئے جانے کی اپیل کرتے ہوئے ہائی کورٹ میں ایک مفاد عامہ عرضی داخل کی گئی ہے۔ اس عرضی پر سماعت اور تصفیہ کے بعد ہی امتحان کے تعلق سے مزید تفصیلات پیش کی جاسکیں گی۔

کیا کرناٹکا میں یکم جون سے مسجد، گرجا گھر اور مندروں کو کھولنے کی دی جائے گی اجازت ؟

کورونا وائرس کے انفیکشن کو پھیلنے سے روکنے کے لئے ملک میں لاک ڈاؤن لاگو ہے۔لاک ڈاؤن 4.0 میں حکومت کی جانب سے بہت سی مراعات دی گئی ہیں، تاہم مندر، مسجد کو لے کر پابندیاں جاری ہیں لیکن حکومت نے لاک ڈاؤن میں رعایت کو لے کر ریاستوں کو بھی فیصلہ لینے کا حق دیا تھا۔دریں اثنا کرناٹک ...

انکولہ ۔ہبلی ریلوے منصوبہ : ماہرین ماحولیات کے خلاف اسنوٹیکر گرم

انکولہ۔ ہبلی ریلوے لائن منصوبے کو لے کر ماہرین ماحولیات کے خلاف  جے ڈی ایس لیڈر آنند اسنوٹیکر نے سخت اعتراض جتاتے ہوئے کہا ہے کہ اس منصوبے کے تعلق سے مداخلت یا مخالفت نہ کریں تو بہتر ہے ورنہ ماہرین ماحولیات کی طرف سے فاریسٹ کی جتنی زمین ہتھیائی گئی ہے ثبوت کے ساتھ پیش کرنے کی ...

مزدور پیدل نہ جائیں، سب کے لئے مفت ریل سفر کے انتظامات: منیش سسودیا

  دہلی کے نائب وزیر اعلی منیش سسودیا نے تارکین وطن مزدوروں سے پیدل سفر نہ کرنے کی اپیل کی ہے۔ انہوں نے کہا ہے کہ دہلی حکومت نے تمام مفت ریل سفروں کا انتظام کیا ہے۔ 7 مئی سے 25 مئی تک ، 2،41،169 افراد کو 196 ٹرینوں کے ذریعے ان کے گھر بھیج دیا گیا ہے۔ بہار میں سب سے زیادہ 1،25،711 افراد ہیں ...

بھٹکل میں خدمات انجام دینے والے کورونا کے خصوصی آفسر ڈاکٹر شرتھ نائیک اب ہوں گے ضلع ہیلتھ آفسر

بھٹکل میں کورونا وباء پر قابو پانے کے لئے کاروار سے ڈاکٹر شرتھ نائیک کو بھٹکل روانہ کرکے انہیں نوڈل آفسر کی ذمہ داری سونپی گئی تھی، اُنہیں اب ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفسر کے طور پر نامزد کیا گیا ہے۔ ذرائع سے ملی اطلاع کے مطابق  ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفسر کے طور پرخدمات انجام دینے والے  ڈاکٹر ...