کٹھوعہ سانحہ:  عدالتی  فیصلے کا عمرعبداللہ، محبوبہ نے کیا خیر مقدم 

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 10th June 2019, 10:26 PM | ملکی خبریں |

سرینگر10جون (ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا) جموں و کشمیر کے سابق وزرائے اعلی عمر عبداللہ اور محبوبہ مفتی نے کٹھوعہ سانحہ کے ضمن میں آئے عدالتی فیصلہ کا پیر کو خیر مقدم کیا۔ عبداللہ نے ٹویٹ کیا کہ شکریہ! مجرم قانون کے تحت سب سے سخت سزا کے مستحق ہیں۔ اور ان سیاسی رہنماؤں جنہوں نے ملزمان کا دفاع کیا،  متاثرہ کی توہین کی اور قانونی نظام کو خطرہ پہنچایا، ان کے لیے مذمت کے لفظ کافی نہیں ہے۔ محبوبہ مفتی نے ٹوئٹ کیا کہ فیصلے کا خیر مقدم کرتی ہوں۔ گھناؤنے جرائم پر سیاست بند کرنے کا وقت آ گیا ہے، جہاں آٹھ سالہ بچی کو منشیات دے کر اس کے ساتھ بار بار عصمت دری کی گئی ور پھر اسے موت کے گھاٹ اتار دیا گیا، یقینا ہم عدلیہ سے اسی طرح کے انصاف کے منتظر تھے۔ ہمیں امید ہے کہ عدالتی نظام میں خامیوں کا فائدہ نہیں اٹھایا جائے گا اور قصورواروں کو سخت سزا ملے گی۔لیڈر بنے شاہ فیصل نے بھی فیصلے کا خیر مقدم کرتے ہوئے جموں و کشمیر پولیس کی جانب سے کی گئی کارروائی کی تعریف کی۔ غور طلب ہے کہ جموں و کشمیر کے کٹھوعہ ضلع کے رسانا علاقے میں خانہ بدوش برادری کی آٹھ سال کی ایک بچی کی عصمت دری کے بعد قتل کر دیا گیا تھا۔ پٹھان کوٹ عدالت نے آج کیس کے سات ملزمان میں سے چھ کو مورد الزام ٹھہرایا اور ایک کو بری کر دیا۔

ایک نظر اس پر بھی

غیر ملکی تبلیغی جماعتیوں کی عرضی پر سماعت 10 جولائی تک ملتوی

سپریم کورٹ نے تبلیغی جماعت کے پروگرام میں حصہ لینے والے 34غیر ملکی جماعتیوں کی عرضیوں پر سماعت 10 جولائی تک کے لئے ملتوی کردی اور کہا کہ انہیں اپنے ملک بھیجنے کے معاملے میں وہ مداخلت نہیں کرے گا، بلکہ بلیک لسٹ میں ڈالے جانے کے معاملے پر سماعت کرے گا۔

شیوراج کابینہ میں توسیع، 28 وزیروں کی حلف برداری

 بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جےپی) کی نائب صدر اور سابق مرکزی وزیر اوما بھارتی نے مدھیہ پردیش میں شیوراج سنگھ چوہان کی کابینہ توسیع کے بالکل پہلے ذات بات تال میل کے سلسلے میں پارٹی قیادت کے سامنے ’اصولی عدم اتفاق‘کا اظہار کیا ہے