کیرالہ کی این آر آئی خاتون نے منگلورو ایئرپورٹ اسٹاف پر لگایا ،جان بوجھ کر پاسپورٹ پھاڑنے کا الزام؛ ائرپورٹ ڈائرکٹر نے الزام کو کیا خارج

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 14th February 2019, 11:30 PM | ساحلی خبریں | خلیجی خبریں |

بھٹکل 14؍فروری (ایس او نیوز)  پڑوسی ریاست کیرالہ کے کاسرکوڈ کے  ایک این آر آئی نے   الزام لگایا ہے کہ منگلورو انٹرنیشنل ایئر پورٹ پر سیکیوریٹی اسٹاف نے جان بوجھ کر اس کی بیوی کا پاسپورٹ اُس وقت   پھاڑ دیا جب وہ اپنے دو چھوٹے بچوں کے ساتھ دبئی روانہ ہونے کے لئے پہنچی تھی۔پاسپورٹ پھاڑنے کے بعد  ائرپورٹ پر  خاتون اور دو بچوں کو بلاوجہ ہراساں بھی کیا گیا۔خبر پھیلتے ہی  مینگلور ائرپورٹ سے بالخصوص گلف کا سفر کرنے والوں میں تشویش کی لہر دوڑ گئی، اس تعلق سے ساحل آن لائن نے جب مینگلور ائرپورٹ ڈائرکٹر سے رابطہ کیا تو انہوں نے الزام کو سرے سے ہی مسترد کردیا اور کہا کہ ان باتوں میں کوئی سچائی نہیں ہے اور مینگلور ائرپورٹ کو خواہ مخواہ بدنام کیا جارہا ہے۔

مُبینہ پاسپورٹ پھاڑنے کی خبر اُس وقت منظر عام پر آئی جب دبئی میں رہنے والے  کیرالہ کے ایک این آر آئی نے ابوظبی میں انڈین ایمباسی سے مینگلور ائرپورٹ کے سیکوریٹی آفسر پر  ان کی اہلیہ کا پاسپورٹ پھاڑنے کی شکایت درج کی جس کے فوری بعد دبئی کے  معروف انگریزی اخبار گلف نیوز نے اس خبر کو شائع کیا۔

رپورٹ کے تعلق سے جانکاری حاصل کرنے کے لئے  ساحل آن لائن نے  متعلقہ شخص  محمد ہاشم (۳۳سال) سے فون پر رابطہ کیا تو انہوں نے بتایا کہ  ان کی اہلیہ  روبینہ ہاشم (۲۸سال) اپنے دوبچوں فاطمہ (۴سال) اور نورا (۸ ماہ) کے ساتھ دبئی  جانے کے لئے کاسرگوڈ سے مورخہ 3/فروری کو منگلورو انٹرنیشنل ایئر پورٹ پہنچی تھی۔ ایئر پورٹ کے داخلہ گیٹ پرسیکوریٹی اہلکار کو   پاسپورٹ اور ٹکٹ چیک کروایا، جس کے بعد  وہ چیک اِن کاؤنٹر پر پہنچی تو اسے بتایا گیا کہ اس کا پاسپورٹ پھٹا ہوا ہے اور وہ جہاز پر سفر نہیں کرسکتی۔

چیک اِن کاونٹر پر پاسپورٹ پھٹے ہونے کے انکشاف پر روبینہ  سخت حیران ہوگئی کہ گھر سے نکلتے وقت اس کا پاسپورٹ ٹھیک  تھا اور گیٹ پر سیکیوریٹی چیک سے گزر کر وہ اندر آئی ہے تو اچانک پاسپورٹ کیسے پھٹ گیا۔

ہاشم کے بیان کے مطابق جب گیٹ پر سیکیوریٹی گارڈ کو پاسپورٹ اور ٹکٹ دئے گئے تو سیکوریٹی کے اہلکار نے روبینہ کو    بچوں کے لئے گاڑی لینے کو کہا۔ جب وہ بچوں کے لئے گاڑی لے کر واپس پہنچی تو سیکیوریٹی آفیسر نے اسے ٹکٹ اور پاسپورٹ لوٹا دیا۔ہاشم کا کہنا ہے کہ جب اس کی اہلیہ بچوں کے لئے گاڑی لینے گئی تھی، اسی وقت اس کی اہلیہ کا دھیان ہٹا کر  پاسپورٹ کو نقصان پہنچایا گیا ہے۔چیک اِن کاؤنٹر پر جب گراونڈ اسٹاف نے پھٹے ہوئے پاسپورٹ کے ساتھ سفر کے لئے بورڈنگ پاس دینے سے انکار کیا تو روبینہ کا استدلال یہ تھا کہ اس کا پاسپورٹ صحیح سالم تھا۔ اگر وہ پھٹا ہوا ہوتا تو پھر گیٹ پر سیکیوریٹی اسٹاف نے اسے اندر جانے کی اجازت کیسے دی۔

ہاشم کا کہنا ہے کہ روبینہ کی طرف سے کافی منت و سماجت کے بعد ایئر پورٹ اسٹاف نے اس شرط پر اسے بورڈنگ پاس دینے کی بات کہی کہ وہ ایک تحریر ی وعدہ دے کہ اگر دبئی ایئر پورٹ پر کسی قسم کی دقت ہوتی ہے تو پھر منگلورو انٹرنیشنل ایئر پورٹ والے اس کے لئے ذمہ دار نہیں ہونگے۔جب روبینہ نے کاغذ پر لکھ کر دیا تب بھی ایئر پورٹ اسٹاف نے اڑنگا پید اکیا کہ تحریر صحیح اور واضح ڈھنگ سے ڈرافٹ نہیں کی گئی۔ پھر ایک دوسرے مسافر نے مداخلت کرتے ہوئے تحریر میں ردو بدل کرکے دیا تو روبینہ کو طیارے میں سفر کرنے کی اجازت دی گئی۔

جب روبینہ منگلورو ایئر پورٹ پرغیر انسانی سلوک اور ہراسانی سے گزرکر مزید خدشات کے ساتھ دبئی ایئر پورٹ پہنچی تو وہاں پر اس کے ساتھ نہایت ہمدردانہ سلوک کیاگیا اور صرف اتنا کہا کہ جتنی جلد ممکن ہواپنا پاسپورٹ تبدیل کروالیں۔

روبینہ اور محمد ہاشم نے ابوظہبی میں واقع ہندوستانی سفارت خانے میں تحریری شکایت درج کروائی  اور سفارت خانے کی طرف سے یہ شکایت منگلورو انٹرنیشنل ایئر پورٹ کے اعلیٰ افسران کو بھیج دی گئی ۔ محمد ہاشم کاکہنا ہے کہ ہمارے اپنے ملک میں ایک خاتون کے ساتھ انسانی ہمدردی کا رویہ اپنانا چاہیے تھا جبکہ وہ خاتون دوچھوٹے چھوٹے بچوں کے ساتھ تنہا سفر کررہی تھی۔ ہاشم نے بتایا کہ اب کم ازکم ایئرپورٹ افسران کو میری بیوی کے ساتھ کیے گئے سلوک کے بارے میں ضرور وضاحت دینی چاہیے۔

دوسری طرف ابو ظہبی میں ہندوستانی سفارت خانے کے ذمہ داران کا کہنا ہے کہ اس قسم کا یہ پہلا معاملہ سامنے آیا ہے۔ اس سے قبل ایسی کوئی شکایت سفارت خانے کو کبھی موصول نہیں ہوئی ہے۔یہ شکایت متعلقہ افسران کو بھیج دی گئی ہے۔ اور شکایت کنندگان سے بھی رابطہ رکھا گیا ہے۔

ساحل آن لائن نے جب مینگلور انٹرنیشنل ائرپورٹ کے ڈائرکٹر مسٹر وی وی راو سے فون پر رابطہ کیا تو انہوں نے الزام کو سرے سے خارج کردیا، وی وی راو کے مطابق  متعلقہ واقعے پر سی سی ٹی وی فوٹیج سے پتہ چلا ہے کہ ائرپورٹ کے داخلی گیٹ پر  سیکوریٹی اہلکار نے خاتون کا پاسپورٹ  دیکھنے کے بعد اُسے  ایک منٹ میں  ہی   واپس دیا ہے اور اُس کا رویہ بھی متعلقہ خاتون کے ساتھ بے حد  شریفانہ رہا ہے۔ جب وی وی راو سے پوچھا گیا کہ جب اندر جانے کے دوران پاسپورٹ صحیح سالم تھا تو کیا ائرپورٹ کے اندر پہنچنے کےبعد اُس کا پاسپورٹ پھٹا ہے تو انہوں نے بتایا کہ سیکوریٹی اہلکار کا کام صرف پاسپورٹ ہاتھ میں لے کر ٹکٹ اور  پاسپورٹ کی شناخت کی جانچ کرنا ہوتا ہے،  اُس وقت اس کا پاسپورٹ پھٹا تھا یا نہیں تھا، یہ دیکھنا اُس کا کام نہیں ہے۔ اس لئے یہ نہیں کہا جاسکتا کہ جب پاسپورٹ اُس کے ہاتھ میں دیا گیا تو اُس وقت پاسپورٹ صحیح تھا  یا نہیں۔

مینگلور ائرپورٹ سے شام ہونے تک پریس ریلیز بھی جاری کی گئی جس میں بتایا گیا ہے کہ  انڈین ایمباسی ابوظبی سے  پاسپورٹ پھاڑنے کی شکایت موصول ہوتے ہی جانچ کے احکامات دئے گئے تھے، جس کے بعد ائرپورٹ سیکوریٹی، ڈپٹی کمشنر اور ائیرلائن کی جانب سے رپورٹ ملی ہے اور سی سی ٹی وی کی بنیاد پر پایا گیا ہے  کہ خاتون  جب سیکوریٹی آٖفسر کو پاسپورٹ دکھا رہی تھی تو پاسپورٹ اور ٹکٹ دیکھ کر  اُسے اُسی وقت لوٹا دیا گیا تھا۔ سی سی ٹی وی میں دیکھا گیا ہے کہ اس دوران خاتون ٹرالی لانے کے لئے بھی کہیں نہیں گئی ہے اس لئے خاتون کا یہ کہنا کہ اُس دوران وہ ٹرالی لانے کے لئے گئی یہ بات غلط ہے۔ ریلیز کے مطابق  خاتون سیکوریٹی آفسر کے سامنے ہی تھی اور اُس کا دھیان ہٹانے کا سوال ہی پیدا نہٰیں ہوتا۔

ایک نظر اس پر بھی

علاج کے لئے منگلور جانے والے توجہ دیں: منگلورو اور اڈپی کے اسپتالوں میں کل 17جون کو او پی ڈی خدمات رہیں گی بند

 بھٹکل اور اطراف سے کافی لوگ  علاج معالجہ کے لئے پڑوسی ضلع اُڈپی اور مینگلور کے اسپتالوں کا رُخ کرتے ہیں،  ان کے لئے  بری  خبر یہ ہے کہ کل  ڈاکٹروں کے احتجاج کے پیش نظر  مینگلور اور اُڈپی کے اسپتالوں میں باہری  مریضوں  کا علاج  نہیں ہوگا۔

آئی ایم اے میں سرمایہ کاری کرکے دھوکہ کھانے والے متاثرین کی قانونی مدد کے لئے اے پی سی آر کی خدمات دستیاب

آئی ایم اے میں سرمایہ کاری کرکے دھوکہ کھانے والے متاثرین کی قانونی رہنمائی اور اُن کی  مدد کے لئے  اسوسی ایشن فور پروٹیکشن آف سیول رائٹس  (اے پی سی آر)  کی خدمات حاصل کی جاسکتی ہے۔جن  لوگوں نے  اپنی چھوٹی چھوٹی سرمایہ  کاری  اس کمپنی میں کی تھی اور اب وہ کنگال ہوچکے ہیں، اے پی ...

بحرین میں بھٹکل مسلم جماعت بحرین کی خوبصورت عید ملن تقریب ؛ اناس افریقہ کو بیسٹ اسٹوڈینٹ کا ایوارڈ؛ قران حفظ کرنے پر اسعدمصباح کو بھی ملا خصوصی اعزاز

بھٹکل مسلم جماعت بحرین کا عید ملن پروگرام بروز جمعرات  13جون کو منعقد ہوا، جس میں  بچوں کے پروگرام بالخصوص نظمیں، کوئیز، کھیل مقابلے نہایت دلچسپ رہے، عید ملن تقریب میں تعلیمی ایوارڈ سمیت بچوں کی ہمت آفزائی  کے لئے  بعض خصوصی انعامات  سے بھی نواز گیا جبکہ   آخر میں ریفل ...

جون 13 کو ہوگا بھٹکل مسلم جماعت بحرین کا عید ملن پروگرام؛ ممبران سے شرکت کی درخواست

بھٹکل مسلم جماعت بحرین کی عید ملن تقریب انشاء اللہ 13 جون کو مناما کے    ویندھم گرینڈ ہوٹل (Wyndham Grand Hotel, Manama)  میں  منعقد کی گئی ہے جس میں  دلچسپ اور تفریحی پروگرام پیش کئے جائیں گے۔ اس بات کی اطلاع جماعت کے جنرل سکریٹری مولوی اظہرالدین آرمار نے دی ہے۔

بھٹکل مسلم ایسوسی ایشن ریاض کی عید ملن تقریب؛ نوائطی ڈرامے، کوئیز، فینسی ڈریس سمیت کئی دلچسپ پروگرام سے حاضرین نے اُٹھایا لطف

بھٹکل مسلم ایسوسی ایشن ریاض کی طرف سے عید کی رات ٹھیک 10بجے کراون پلازہ ہوٹل میں ایک شاندار عید ملن تقریب کا اہتمام کیا گیا جس میں  تفریحی پروگرام، بچوں کا فینسی ڈریس ، نوائطے ڈرامے، کوئز اور ریفل ڈراء  وغیرہ جیسے مختلف پروگراموں سے  حاضرین نے خوب لطف اُٹھایا۔

دوبئی میں بھیانک سڑک حادثہ 12 ہندوستانی شہری سمیت17افراد ہلاک

دوبئی میں جمعرات کی شام کو ہوئے ایک بھیانک سڑک حادثے میں 12 ہندوستانی شہریوں سمیت 17 افراد ہلاک ہوگئے جبکہ پانچ دیگر کی حالت نازک بتائی گئی ہے۔ ذرائع سے ملی اطلاع کے مطابق بس پر  مختلف ممالک کے کل 31مسافر سوار تھے۔