کرناٹک میں خاموشی سے این آر سی کے نفاذ کا کام شروع

Source: S.O. News Service | Published on 11th December 2019, 11:47 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،11/دسمبر(ایس او نیوز) کرناٹک کی بی جے پی حکومت نے ریاست میں خاموشی سے نیشنل رجسٹر آف سٹی زن شپ (این آر سی) کے نفاذ کا کام شروع کردیا ہے۔ ریاست کے وزیر داخلہ ایس آر بومئی نے ریاستی حکومت کی طرف سے این آر سی کے نفاذ کے عمل کی شروعات کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہر پولیس تھانے کی حدود میں مقیم غیر ملکی باشندوں کی نشاندہی کا عمل شروع کرنے کے لئے پولیس حکام کو ہدایت دی گئی ہے اور اس پر کارروائی بھی شروع کی جا چکی ہے۔ انہوں نے کہا کہ پولیس حکام سے کہا گیا ہے کہ ہر تھانے کی حدود میں غیر ملکی باشندوں کا سروے کر کے یہ تفصیلات حکومت کو روانہ کی جائیں۔ انہوں نے کہا کہ این آر سی کا بنیادی مقصد ہی یہی ہے کہ غیر ملکی باشندوں کی نشاندہی کرکے انہیں ہندوستان بدر کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ اس ملک میں جو ہندو، سکھ، بدھسٹ، پارسی اور جین غیر قانونی طور پر مقیم ہیں ان کوسکونت اختیار کرنے کے لئے ہندوستان کے علاوہ کوئی اور ملک نہیں ہے اس لئے ان لوگوں کے پاس دستاویزات نہ بھی ہوں تو مرکزی حکومت کی طرف سے لائے جا رہے شہریت ترمیمی بل کے مطابق ان کو ہندوستان کی شہریت دے دی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ ریاست کے سبھی اضلاع کے پولیس سپرنٹنڈنٹوں اور پولیس کمشنروں سے کہا گیا ہے کہ ان کی حدود میں آنے والے ہر تھانے کی حدود میں غیر ملکیوں کا سروے فوراً شروع کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ بنگلورو میں پہلے ہی 63بنگلہ دیشی اور 16نائجیریائی باشندوں کو ملک بدر کرنے کی کارروائی کی جا چکی ہے۔ بسوارج بومئی نے کہا کہ این آر سی ایک قومی پالیسی معاملہ ہے۔مرکزی حکومت یہ چاہتی ہے کہ ملک بھر میں غیر ملکی در اندازوں کی نشاندہی کرتے ہوئے ان کو ملک سے نکالا جائے۔ وزیر داخلہ نے کہا کہ ریاستی حکومت مرکزی حکومت کی ہدایت کے مطابق کرناٹک میں بھی این آر سی کے عمل کو نافذ کرے گی۔ اس سوال پر کہ ریاست میں غیر ملکی دراندازوں کی تعداد کیا ہوسکتی ہے جواب دیا کہ اب تک ریاست میں غیر قانونی طور پر مقیم بیرون ملکی باشندوں کی نشاندہی کے لئے باضابطہ کوئی سروے نہیں ہوا ہے اس لئے ان کی تعداد کے بارے میں اندازہ لگانا مشکل ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

کرناٹک میں ایک ہی دن 6257 کورونا پوزیٹیو معاملات ، 86 اموات

کرناٹک میں کورونا وائرس کا خوفناک پھیلاؤ رکنے اور تھمنے کا نام نہیں لے رہا ہے، ہر گزرتے لمحے اور دن کے ساتھ کورونا وائرس کے نئے معاملات میں اضافہ ہی ہوتاجار ہا ہے۔ ریاست میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کورونا متاثرین کی تعداد تشویشناک حد تک اضافہ یکھا جارہا ہے۔ ریاست میں ایک ہی دن ...

کرناٹک: ایس ایس ایل سی سپلیمنٹری امتحانات ستمبر میں منعقد کئے جائینگے

ایس ایس ایل سی سپلیمنٹری امتحان آئندہ ماہ ستمبر میں منعقد کئے جانے کا فیصلہ کیا گیا ہے اور دو ایک دن میں امتحان کی تاریخ اور ٹائم ٹیبل کا اعلان کردیا جائے گا۔ یہ بات کرناٹک سکینڈری ایگزامنیشن بورڈ کی ڈائرکٹر وی سو منگلا نے کہی۔

بنگلور میں احتجاجیوں اور پولس کے درمیان زبردست جھڑپ؛ پولس فائرنگ میں دو کی موت؛ فیس بُک پر توہین آمیز پوسٹ پرعوام نے کیا تھا پولس تھانہ کا گھیراو

 فیس بُک پر مبینہ طور پر  پیغمبر اسلام حضرت محمد ﷺ کے خلاف توہین آمیز مسیج پوسٹ کرنے پر سخت برہمی ظاہر کرتے ہوئے بنگلور کے جی ہلی پولس تھانہ کے باہر  جمع ہوکرایک فرقہ کے لوگوں نے جب احتجاج کیا تو یہی احتجاج بعد میں تشدد میں تبدیل ہوگیا جس کے نتیجے میں بتایا جارہا ہے کہ ...

اننت کمار ہیگڈے نے لگایابی ایس این ایل میں دیش دروہی افسران موجود ہونے کا الزام

اپنے متنازعہ بیانات کے لئے پہچانے جانے والے رکن پارلیمان اننت کمار ہیگڈے نے الزام لگایا کہ بھارت سنچار نگم لمیٹڈ کے اندر دیش دروہی افسران بیٹھے ہوئے جس کی وجہ سے اس کے کام کاج میں کوئی ترقی نہیں ہورہی ہے۔ اس لئے آئندہ دنوں میں اس کی نج کاری (پرائیویٹائزیشن) کیا جائے گا۔

بنگلور: ٹرانسفرس کے احکامات ملتوی کرانے میں مبینہ طور پر با رسوخ اساتذہ کی لابی شامل، چار سال سے ڈگری کالجوں کے لکچررس کے تبادلے نہیں ہوسکے

ریاست کرناٹک کے سرکاری فرسٹ گریڈ کالجوں میں خدمات انجام دے رہے لکچررس کے تبادلے نہیں ہوسکے ہیں، جس کے سبب انہیں کافی مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے اس تعلق سے الزامات لگائے جارہے ہیں کہ  چند با رسوخ لکچررس کی طرف سے سیاسی اثر و رسوخ کا استعمال کرکے تبادلوں کی کاروائی ملتوی ...