ہماچل پردیش: اب زلزلہ پیشگی اطلاع حاصل کی جا سکے گی، آئی آئی ٹی رورکی نے تجویز پیش کی

Source: S.O. News Service | Published on 6th August 2020, 10:52 PM | ملکی خبریں |

شملہ،6؍اگست (ایس او نیوز؍ایجنسی) انڈین انسٹی ٹیوٹ آف ٹکنالوجی (آئی آئی ٹی) رورکی کی مدد سے ہماچل میں زلزلے سے قبل اطلاع ملنے کے لئے ایک نیا نظام قائم کیا جائے گا۔ اس سلسلے میں ، رورکی کے محکمہ ارضیات میں ایک اسسٹنٹ پروفیسر نے ریاستی حکومت کو ایک تجویز پیش کی ہے۔ ڈیزاسٹر مینجمنٹ ایکٹ کے تحت ریاستی ایکزیکیٹو کمیٹی (ایس ای سی) کے اجلاس میں اس تجویز پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ پرنسپل سکریٹری اونکار شرما نے عہدیداروں کو اس تجویز سے آگاہ کیا۔ اجلاس میں کہا گیا کہ ہماچل میں زلزلے کا سب سے زیادہ خطرہ ہے۔

حال ہی میں ، ریاست میں ریکٹر اسکیل پر 4.0 اور اس سے اوپر کی گنجائش کے ساتھ 80 بار زلزلے کے جھٹکے محسوس کیے گئے ہیں۔ چیف سکریٹری انیل کھاچی کی زیرصدارت اجلاس ہوا۔ چیف سکریٹری نے ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعے ڈپٹی کمشنرز ، آئی آئی ٹی رورکی اور منڈی کے پروفیسرز سے بھی بات چیت کی۔ انہوں نے کہا کہ کووڈ 19 کے خطرہ کو کم کرنے کے بعد ماک ڈرل اور مشقوں پر کام کیا جانا چاہئے۔ ڈی سی رانا ، ڈائریکٹر اور خصوصی سیکرٹری ، محکمہ محصول اور ڈیزاسٹر مینجمنٹ نے ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی کی مختلف سرگرمیوں کے بارے میں آگاہ کیا۔اجلاس میں بہت سارے اعلیٰ عہدیدار موجود تھے۔

ریاستی حکومت نے اس سال جنوری میں ہماچل پردیش ریاستی ڈیزاسٹر رسپانس فورس کے قیام کی اطلاع دی تھی۔ ریاستی کابینہ نے فیصلہ کیا ہے کہ اس فورس کی تشکیل تک شملہ ، منڈی اور دھرم شالا میں ریاستی پولیس کی ایک ٹیم قائم کی جائے گی۔ محکمہ پولیس نے ریاستی آفت رسپانس فورس کے لئے پانچ کروڑ روپئے کی منظوری دی ہے۔

پرنسپل سیکرٹری ، ریونیو اور ڈیزاسٹر مینجمنٹ ، اونکار چندر شرما نے بتایا کہ محکمہ پولیس کو دور دراز کے علاقوں اور پولیس فورس کے لئے وی سیٹ کی خریداری کے لئے فنڈز مہیا کیے گئے ہیں۔ محکمہ پولیس کو 75 سائٹوں پر 37 آئی سیٹ اور وی سیٹ خریدنے کے لئے فنڈز بھی فراہم کیے گئے ہیں۔ ڈپٹی کمشنر کھنور نے قبائلی ترقیاتی فنڈ کے تحت آئی آئی ایس اے ٹی خریدا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

اپوزیشن کے 8ممبران پارلیمنٹ کی معطلی مرکزی حکومت کا اختلاف رائے سے عدم راوداری کا نمونہ۔ ایس ڈی پی آئی

 سوشیل ڈیموکریٹک پارٹی آف انڈیا (ایس ڈی پی آئی) کے قومی صدر ایم کے فیضی نے اپنے جاری کردہ اخباری بیان میں زرعی بل منطور کئے جانے کی مخالفت کرنے پر اپوزیشن کے 8اراکین پارلیمنٹ کو ایک ہفتہ کیلئے پارلیمنٹ کے مانسون اجلاس میں شرکت سے معطل کرنے کے اقدام کو جمہوریت مخالف قرار دیتے ...

بینکنگ ریگولیشن بل پر پارلیمنٹ کی مہر

 کوآپریٹو بینکوں کی بحالی اور نگرانی کے لئے ریزرو بینک آف انڈیا (آر بی آئی) کو زیادہ اختیارات دینے والے بینکنگ ریگولیشنز (ترمیمی) بل 2020 کو منگل کو راجیہ سبھا میں صوتی ووٹوں سے منظور کر لیا گیا۔