دہلی میں ماسک نہ لگایا تو خیر نہیں! بھرنا ہوگا دو ہزار روپے کا جرمانہ

Source: S.O. News Service | Published on 19th November 2020, 8:04 PM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

نئی دہلی،19؍نومبر(ایس او نیوز؍ایجنسی) قومی راجدھانی دہلی پر کورونا وائرس کے بڑھتے اثر کے درمیان کیجریوال حکومت نے سخت اقدامات اٹھانے شروع کر دیئے ہیں۔ اسی ضمن میں جمعرات کے روز ماسک نہ پہننے والوں پر عائد کیے جانے والے جرمانہ کی رقم میں اضافہ کر دیا گیا ہے۔ اب اگر دہلی میں کوئی شخص بغیر ماسک لگائے گھومتا ہوا نظر آئے گا تو اس سے 2000 روپے کا جرمانہ وصول کیا جائے گا۔

دہلی کے وزیر اعلیٰ اروند کیجریوال نے ایل جی انل بیجل سے مل کر یہ فیصلہ لیا ہے۔ خیال رہے کہ پہلے ماسک نہ لگانے پر 500 روپے کا جرمانہ عائد ہوتا تھا، جسے اب بڑھا کر 2000 روپے کیا گیا ہے۔ قبل ازیں، دہلی کے وزیر اعلیٰ کیجریوال نے کورونا کی تشویش ناک صورت حال پر تبادلہ خیال کے لئے ایک کل جماعتی اجلاس بھی طلب کیا تھا، جس میں عام آدمی پارٹی کے علاوہ، بی جے پی اور کانگریس کے رہنماؤں نے بھی شرکت کی۔

کورونا کے پیش نظر طلب کیے گئے کل جماعتی اجلاس کے دوران دہلی کانگریس کے صدر انل چودھری نے بازاروں کو بند کرنے کے فیصلے کی مخالفت کی۔ کانگریس کی طرف سے عوامی طور پر چھٹ پوجا پر پابندی عائد نہیں کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے ایک خط بھی سونپا۔ جبکہ بی جے پی نے محکمہ صحت کی بند انتظامی کا مسئلہ اٹھایا۔

دہلی کے وزیر اعلیٰ اروند کیجریوال نے کہا کہ یہ وقت سیاست کرنے کا نہیں ہے۔ یہ وقت خدمت کرنے کا ہے، ہم لوگوں کی جتنی بھی خدمت کریں گے، اتنا ہی لوگ ہمیں یاد رکھیں گے۔ تمام جماعتوں نے اس بات پر اتفاق کیا ہے کہ ہم سب مل کر کورونا کی لڑائی لڑیں گے۔ عوامی مقامات پر چھٹ پوجا کے اہتمام پر وزیر اعلیٰ کیجریوال نے کہا کہ ہم چاہتے ہیں، بھائی بہن چھٹ پوجا بہت دھوم دھام سے منائیں لیکن احتیاط برتیں۔ انہوں نے لوگوں سے اپیل کی کہ سبھی اپنے اپنے گھروں پر چھٹ منائیں۔

خیال رہے کہ دہلی میں کورونا کی وبا تشویش ناک صورت حال اختیار کر چی ہے اور حالات ہنوز ابتر ہوتے جا رہے ہیں۔ راجدھانی میں 24 گھنٹوں کے دوران اموات کا بھی نیا ریکارڈ قائم ہوا ہے۔ گزشتہ رات جاری اعداد و شمار کے مطابق کل سب سے زیادہ 131 افراد کی جان کورونا کی وجہ سے چلی گئی۔ اسی کے ساتھ دہلی میں 24 گھنٹوں کے دوران 7486 نئے کیسز درج کیے گئے، جبکہ 6901 مریضوں نے شفایابی حاصل کی۔ خیال رہے کہ دہلی میں اموات کی مجموعی تعداد 5 لاکھ سے تجاوز کر گئی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

لو جہاد: یوگی حکومت کے ذریعہ منظور آرڈیننس کو سی پی آئی-ایم ایل نے آئین پر حملہ ٹھہرایا

 کمیونسٹی پارٹی آف انڈیا (ایم ایل) کی اترپردیش اکائی نے یوگی کابینہ کے ذریعہ مبینہ لوجہاد پر منظور کیے گئے آرڈیننس کو ملک کے آئین پر حملہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ یہ ملکی آئین میں حاصل ایک شہری کو انتخاب، مذہب اور شہری آزادی کے حقوق پر کھلا حملہ ہے۔

شاہین باغ کی دادی ’ٹائم میگزین‘ کے بعد ’بی بی سی‘ کی 100 بااثر خواتین کی فہرست میں بھی شامل

ٹائم میگزین کی 2020 میں 100 سب سے بااثر شخصیات کی فہرست میں جگہ بنانے کے بعد اب شاہین باغ کی بلقیس دادی نے ایک اور کامیابی حاصل کرتے ہوئے ’بی بی سی- 100 ویمن آف دی ایئر‘ میں بھی مقام حاصل کیا ہے۔

بھٹکل گُڈلک روڈ میں پائپ لائن بچھانے کے کاموں میں عوام کی طرف سے شکایات کے بعد بھٹکل میونسپل چیف نے واٹربورڈ کے آفسران کے ساتھ رکھی میٹنگ

بھٹکل کے کارگیدے اور گُڈلک روڈ میں  کل اتوار کو عوام الناس کی طرف سے انڈر گراونڈ ڈرینج (یو جی ڈی) کے پائپ لائن بچھانے اور چمبرس تعمیر کرنے کے دوران  کام کو غیر سائنٹیفک اور غیر معیاری قرار دینے کے بعد آج پیر کو بھٹکل میونسپل چیف پرویز قاسمجی نے کاروار سے  واٹر بورڈاور یوجی ڈی ...

بھٹکل قومی شاہراہ سے متصل جگہ پر امیوزمنٹ پارک کو منظوری دینے پر میونسپل کونسلروں کو اعتراض؛ اے سی کو دیا گیا میمورنڈم

قومی شاہراہ 66سے متصل زین لاڈج کے پڑوس میں کھلونوں کی  ایگزبیشن’’امیوز منٹ پارک‘‘ کو منظوری دینے سے نہ صرف شاہراہ پر ٹرافک کا مسئلہ ہوگا بلکہ شاہراہ کے فورلین کاکام بھی جاری ہےاور کووڈ-19کے چلتے عوام کے لئے مناسب نہیں ہے۔  منظوری کو رد کرنے کی مانگ لے کر  سماجی کارکن فیاض ملا ...

کرناٹک میں کورونامعاملات میں اضافہ ہواتو کالجوں کودوبارہ بندکرناناگزیرہوجائے گا: ڈاکٹرکے سدھاکر

دنیابھرمیں کوروناوائرس کی دوسری لہرکاآغازہوگیاہے۔ دہلی اوراحمدآبادمیں بھی دوسری لہرشروع ہوگئی ہے۔ ریاست میں کوروناوائرس کے معاملات میں اضافہ ہوتاہے توپھرکالجوں کوبند کرنا ناگزیرہوجائے گا۔

بی جے پی اپنے مرکزی وزیر کے لو جہاد کا کیا کرےگی: شیوپال سنگھ یادو

ملک میں ’لو جہاد‘ کا مدا اس وقت کافی سرخیوں میں ہے اور اترپردیش میں یوگی آدتیہ ناتھ کی حکومت اس کے لئے قانون بنانے والی ہے۔ بی جے پی کو چھوڑ کر تمام سیاسی پارٹیاں اس کی مخالفت کر رہی ہیں لیکن اتر پردیش حکومت اس کو مدا بنائے ہوئے ہے۔ پرگتی شیل سماج وادی پارٹی (لوہیا) کے صدر ...