دانشوروں پر غداری کے مقدمے میں مرکزی اور بی جے پی کا کوئی کردار نہیں:پرکاش جاوڈیکر

Source: S.O. News Service | Published on 9th October 2019, 7:38 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،9اکتوبر(ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا) بی جے پی نے49 دانشوروں اور فنکاروں کے خلاف غداری کا مقدمہ درج ہونے کو لے کر مودی حکومت پر نشانہ لگانے والوں کو جواب دیا ہے۔پارٹی کے سینئر لیڈر پرکاش جاوڈیکر نے کہا کہ مفاد کی وجہ سے سفید جھوٹ پھیلایا جا رہا ہے۔مرکزی ماحول اور معلومات نشریات کے وزیر نے کہا کہ غداری کا کیس درج کئے جانے کا بی جے پی یا مرکزی حکومت سے کوئی لینا دینا نہیں ہے۔جاوڈیکر نے کہاکہ اس سے بی جے پی اور حکومت کا کوئی لینا دینا نہیں ہے،یہ ایک افواہ جس کا سہارا مودی حکومت کو بدنام کرنے کے لئے ہمیشہ لیا جاتا ہے،اس طرح کے افواہ سے یہ تاثر پیدا کرنے کی کوشش کی جاتی ہے کہ مودی حکومت کی آمرانہ حکومت میں اظہار رائے کی آزادی پر پابندی لگی ہوئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ کچھ موجود خودغرض عناصر اور ٹکڑے ٹکڑے گینگ کی جانب سے پھیلایا جا رہا بالکل سفید جھوٹ ہے۔جاوڈیکر نے کہاکہ اس کیس میں یہی ہو رہا ہے۔اس گینگ کا پوری دنیا میں نیٹ ورک ہے،تاہم، لوگوں کو معلوم ہے کہ کون، کیا کرتا ہے۔یاد رہے کہ بہار کے مظفر پور کی عدالت میں جن 49 جانی مانی شخصیات کے خلاف غداری کا مقدمہ درج کیا گیا ہے، ان میں مؤرخ رام چندر گہا، فلمی ہستیاں ارپنا سین، ادور گوپالکرشن، شیام بینیگل وغیرہ شامل ہیں۔ان تمام نے ملک میں ہجومی تشدد کے واقعات بڑھنے کا دعوی کرتے ہوئے وزیر اعظم نریندر مودی کو ایک خط لکھا تھا جس کے بعد ان کے خلاف غداری کا مقدمہ درج کروایا گیا۔

ایک نظر اس پر بھی